ہاشمی ٹھیک کہتا تھا

جمہور پسند

Minister (2k+ posts)
آج تحریک انصاف کے نظریہ پرست کارکنان کو جاوید ہاشمی کی یاد تو آتی ہو گی ، جو بروقت یہ سازش جان گئے تھے اور خان صاحب کو خبردار کر دیا تھا کہ خان صاحب یہ بازی ہمارے لیے نہیں سجائی گئی - ہم فقط اس کا ایندھن ہے اور نقصان آخر میں ہمارا ہی ہو گا

یہ اسٹیبلشمنٹ کے طاقت اور غرور اور لولی لنگڑی جمہوریت کی جنگ تھی - ہاشمی اس سے خوب واقف تھے بلآخر اس جنگ میں خان صاحب ایک گمنام شہید بن گیا اور جمہوریت جیت گئی .عمران خان اصغر خان کا رنگین ورژن بن گئے اور نواز شریف ملکی تاریخ کا ٹیسٹڈ ، سرٹیفائیڈ اور ویریفائد وزیر اغظم



بادشاہ تو ننگا ہے ابا


ہر خاص و عام کو مطلع کیا جاتا ہے کہ جاوید ہاشمی اور از قسمِ ہاشمی دیگر لوگوں سے آئندہ نہایت ہوشیار رہا جاوے۔ان کا بھرپور احترام ضرور کیا جاوے ۔ان کی قربانیوں کا بھی کھل کے اعتراف ہونا چاہیے۔ان کی ضمیر پرستی کی بھی پوری پوری داد دی واجب ہے۔ وہ جلسوں کی گرمائش کے لیے بھی خاصے موزوں ہیں۔ان کی عوام دوست باغیانہ طبیعت کو بھی مشعلِ راہ بنانے کا عہد کیا جاسکتا ہے۔ پر بنامِ خدا کوئی بھی قومی جماعت ( بشمول عوامی نیشنل پارٹی و جمیعت علمائے اسلام ) کہ جسے اپنی دنیا و دین نیز جان و دل عزیز ہو ، جاوید ہاشمی کو بقائمی ہوش و حواس یا بلا ہوش و حواس اپنا مرکزی عہدیدار بنانے سے پرہیز کرے۔ ایسے لوگ چلتے میچ میں عین جب فالو آن قریب ہو وکٹ اکھاڑ کے بھاگ جاتے ہیں یا پچ کھود ڈالتے ہیں۔


( منجانب ۔ہمدردانِ تحریکِ انصاف پاکستان )
اقبال نے شاید یہ مقطع جاوید ہاشمی جیسوں کے لیے ہی کہا ہے۔
چپ رہ نہ سکا حضرتِ یزداں میں بھی اقبال
کرتا کوئی اس بندہِ گستاخ کا منہ بند۔

کپتان خان ہاشمی کی اسکیننگ رپورٹ میں وہ طفلِ آزاد منش نہیں دیکھ پائے جو کہیں بھی موقع محل کی پرواہ کیے بغیر کسی بھی خلافِ طبیعت بات پر پسر جاتا ہے۔ وہ بچہ جو جھوٹ بولنا بھی چاہے تو فوراً پکڑا جاتا ہے۔ وہ بچہ جو غیر سیاسی ہوتا ہے۔ وہ بچہ جو بادشاہ کے لباس کی تعریف میں ایک دوسرے پر بازی لے جانے والے جی حضوری ہجوم کا حصہ ہوتے ہوئے بھی نتائج و مصلحت سے آزاد یکدم چیخ پڑتا ہے، بادشاہ کے تن پر تو کپڑے ہی نہیں۔ بادشاہ تو ننگا ہے ابا۔۔۔


حالانکہ گرگانِ باراں دیدہ نے لاکھ سمجھایا کہ جاوید ہاشمی کو مت لو۔ وہ یس سر الیون میں نہیں چل پائیں گے۔انھیں نہ تو گیم ڈالنے کی تمیز ہے، نہ کرکٹ کا پتہ، نہ میچ فکسنگ کی شد بد اور نہ ہی ڈریسنگ روم کلچر سے واقفیت۔زود رنج آدمی ہیں۔کہیں کبھی کسی بھی میچ میں بات بے بات غضب ناک ہوگئے تو اپنی ہی وکٹ پر بلا نہ دے ماریں۔کہیں جان بوجھ کر آخری اور فیصلہ کن کیچ ہی نہ چھوڑ دیں۔ کسی خفگی کی بنا پر وکٹ چھوڑ کے ہی کھڑے نہ ہوجائیں۔ سامنے والے کو رن آؤٹ ہی نہ کروادیں۔ مانا کہ جاوید ہاشمی ذات کے سید ہیں پر طبیعت میں خانصاحبی دھرمٹ سے کوٹی گئی ہے۔ایک پارٹی میں ایک وقت میں ایک ہی خان صاحب بہت ہیں۔


مگر کپتان خان کا ایک ہی جواب تھا کہ جو میں جانتا ہوں وہ تم نہیں جانتے۔ میں نے میاں داد جیسے لا ابالیے کی ایک نہیں چلنے دی۔ قاسم عمر کے ٹیسٹ کیرئر پر اس کی لمبی زبان کے سبب بریک لگوا دی۔ یونس احمد کے لیے وکٹ تنگ کردی۔گرم مرطوب جسٹس وجیہہ الدین کو معتدل مزاج بنا دیا۔ حامد خان جیسے آتش گیر مادے پر ٹھنڈی بالٹی ڈال دی تو جاوید ہاشمی بھی کانِ نمک میں نمک ہو ہی جائیں گے۔ میں بھی باغی وہ بھی باغی۔ خوب گزرے گی دونوں کی۔ ویسے بھی ن لیگ میں وہ ہرگز جانا پسند نہیں کریں گے۔ پیپلز پارٹی سے ان کا ہمیشہ نظریاتی مسئلہ رہا ہے۔ جماعتِ اسلامی کا ڈھانچہ، رینج اور ڈسپلن ایسا ہے کہ ہاشمی جیسوں کا دم گھٹ جاتا ہے۔


اب ہاشمی صاحب 23 برس کے شعلہ بیاں طالبِ علم رہنما بھی نہیں بلکہ 66 برس کے میچور سیاستداں ہیں۔ عمر کے اپنے تقاضے ہوتے ہیں۔ صحت بھی مزید مہم جوئی کی اجازت نہیں دیتی۔ان سب عوامل کی بنا پر ہاشمی آخری دم تک تحریکِ انصاف میں ہی باعزت زندگی گزارنا پسند کریں گے۔ان میں اچھی بات یہ بھی ہے کہ ایک سیدھے کھرے شخص کی طرح جتنی جلد ناراض ہوتے ہیں اتنی جلدی من بھی جاتے ہیں۔اس لیے فکر نہ کرو میں سنبھال لوں گا۔اپنے کپتان پر پہلے کی طرح بھروسہ رکھو۔


جاوید ہاشمی کے بارے میں کپتان کی ریڈنگ بہت صحیع تھی۔ پر ایک چوک ہوگئی، جیسا کہ روایتی کہانیوں میں ہیرو سے اکثر ہو ہی جاتی ہے۔ کپتان خان ہاشمی کی اسکیننگ رپورٹ میں وہ طفلِ آزاد منش نہیں دیکھ پائے جو کہیں بھی موقع محل کی پرواہ کیے بغیر کسی بھی خلافِ طبیعت بات پر پسر جاتا ہے۔ وہ بچہ جو جھوٹ بولنا بھی چاہے تو فوراً پکڑا جاتا ہے۔ وہ بچہ جو غیر سیاسی ہوتا ہے۔ وہ بچہ جو بادشاہ کے لباس کی تعریف میں ایک دوسرے پر بازی لے جانے والے جی حضوری ہجوم کا حصہ ہوتے ہوئے بھی نتائج و مصلحت سے آزاد یکدم چیخ پڑتا ہے، بادشاہ کے تن پر تو کپڑے ہی نہیں ۔بادشاہ تو ننگا ہے ابا۔۔۔

BBC- URDU
 
Last edited:

Muqadas

Chief Minister (5k+ posts)
ایک بوڑھا، نحیف، لاغر، فالج زدہ انسان
کس کو پتہ تھا کہ یہ بوڑھا ، ایک روز تن تنہا پاکستان کی سلامتی کی جنگ لڑے گا
اور فتحیاب ہو گا
 
Last edited:

جمہور پسند

Minister (2k+ posts)


پاکستان میں اگر آج جمہوریت ہے تو اس کا کریڈٹ جاوید ہاشمی کو جاتا ہے


آزاد منش انسان ، اپنے ضمیر کی آواز پر بولنے والا
 

MashraQi Larka

Minister (2k+ posts)
ٹھینکس ٹُو عمران خان۔۔ اگر وہ اِلزامات نہ لگاتے تو آج ن لیگ پہلے سے زیادہ مظبوط نہ ہوتی اور نہ ہی ہمیں تحریکِ اِنصاف کا اصل چہرہ نظر آتا
 

patriot

Minister (2k+ posts)
​ہاشمی صاحب نے اسمبلی میں کھڑے ہو کر کہا تھا کہ میرا لیڈر نواز شریف ہے ، حالانکہ وہ اس وقت تحریکِ انصاف میں تھے ۔
 

GeoG

Chief Minister (5k+ posts)
​ہاشمی صاحب نے اسمبلی میں کھڑے ہو کر کہا تھا کہ میرا لیڈر نواز شریف ہے ، حالانکہ وہ اس وقت تحریکِ انصاف میں تھے ۔


Please come out of that political frame of mind
when you are in other party, you just have to BASH
 

سائنسدان

Senator (1k+ posts)
ایک بوڑھا، نحیف، لاغر، فالج زدہ انسان
کس کو پتہ تھا کہ یہ بوڑھا ، ایک روز تن تنہا پاکستان کی سلامتی کی جنگ لڑے گا
اور فتحیاب ہو گا

اسی بوڑھے پر آج کل اسی کے حلقے پر لعن طعن ہورہی ہے۔اسکے اپنے علاقے مخدوم رشید کے لوگ اس پر تھو تھو کررہے ہیں۔

اوقاف کی زمینیں جو پنجاب حکومت نے اس سے چھینی تھیں وہ واپس کردی ہیں لیکن علاقے میں اسکی کوئی عزت نہیں۔ اگر اب ن لیگ کے ٹکٹ پر بھی الیکشن لڑے تو یہ چوتھی یاپانچویں پوزیشن پر ہوگا۔

 

staray khaatir

Minister (2k+ posts)


پاکستان میں اگر آج جمہوریت ہے تو اس کا کریڈٹ جاوید ہاشمی کو جاتا ہے


آزاد منش انسان ، اپنے ضمیر کی آواز پر بولنے والا
pakistan main Hashmi Sahib k payay Ka democrat nahi hai,magar democracy Ka credit Gen Raheel ko jata hai Jo keh filhaal complete take over k leyay tayyaar nahi thay.
 

سائنسدان

Senator (1k+ posts)
ٹھینکس ٹُو عمران خان۔۔ اگر وہ اِلزامات نہ لگاتے تو آج ن لیگ پہلے سے زیادہ مظبوط نہ ہوتی اور نہ ہی ہمیں تحریکِ اِنصاف کا اصل چہرہ نظر آتا

ن لیگ میں خواجہ آصف ، عابد شیرعلی، پرویز رشید ، خواجہ سعد رفیق جیسے گدھے بہت ہیں کچھ دن بعد ساری ن لیگ فیتی فیتی کردیں گے
 

سائنسدان

Senator (1k+ posts)


پاکستان میں اگر آج جمہوریت ہے تو اس کا کریڈٹ جاوید ہاشمی کو جاتا ہے


آزاد منش انسان ، اپنے ضمیر کی آواز پر بولنے والا

واقعی جمہوریت ہے اس لئے تو دو سال میں عوام کا کچرا ہوگیا ہے۔۔ ہر شخص پر قرضہ70 ہزار سے ایک لاکھ دس ہزار ہوگیا ہے۔ مہنگائی دوگنی، بجلی کی قیمتیں دوگنی ہوگئی ہیں۔۔۔
 

جمہور پسند

Minister (2k+ posts)
راحیل شریف ٹیک اور کرنا بھی چاہتے تو نہیں کر سکتے
کیونکہ ساری جماعتیں ایک طرف تھی اور دو کزن دوسری
راحیل شریف نے اگر حکومت نہیں گرائی تو کوئی فیوور بھی نہیں دیا
اگر آرمی کہہ دیتی کہ ریڈ زون نہ جاؤ تو کوئی جا سکتا تھا ؟


pakistan main Hashmi Sahib k payay Ka democrat nahi hai,magar democracy Ka credit Gen Raheel ko jata hai Jo keh filhaal complete take over k leyay tayyaar nahi thay.
 

MashraQi Larka

Minister (2k+ posts)
ن لیگ میں خواجہ آصف ، عابد شیرعلی، پرویز رشید ، خواجہ سعد رفیق جیسے گدھے بہت ہیں کچھ دن بعد ساری ن لیگ فیتی فیتی کردیں گے

کوئی نئی، اللہ لمبی حیاتی دے خان کو۔ وہ پھر اِلزام لگا لگا کر ن لیگ کو مظبوط کر دیگا۔۔
 

جمہور پسند

Minister (2k+ posts)
سائنس دان اپنی تحریکی ریسرچ اس تھریڈ پر پبلش نہ کرو
یہ کسی اور تھریڈ پر ڈسکس کریں گے
چونتیس سال میں کیا فوج نے حکومت کر کہ ملک کو سوئٹزر لینڈ بنا دیا تھا ؟

[SIZE=4 said:
سائنسدان;3403513]واقعی جمہوریت ہے اس لئے تو دو سال میں عوام کا کچرا ہوگیا ہے۔۔ ہر شخص پر قرضہ70 ہزار سے ایک لاکھ دس ہزار ہوگیا ہے۔ مہنگائی دوگنی، بجلی کی قیمتیں دوگنی ہوگئی ہیں۔۔۔[/SIZE]
 

Muqadas

Chief Minister (5k+ posts)
راحیل شریف ٹیک اور کرنا بھی چاہتے تو نہیں کر سکتے
کیونکہ ساری جماعتیں ایک طرف تھی اور دو کزن دوسری
راحیل شریف نے اگر حکومت نہیں گرائی تو کوئی فیوور بھی نہیں دیا
اگر آرمی کہہ دیتی کہ ریڈ زون نہ جاؤ تو کوئی جا سکتا تھا ؟

راحیل شریف کا کریڈٹ ضرور
لیکن ایسی صورتحال بنائی جارہی تھی کہ وہ بھی مجبور ہو جاتے
آج ہارون رشید صاحب نےدنیا نیوز پر اپنے پروگرام میں کہا کہ اس وقت کے آئی ایس آئی چیف ظہیر السلام نے کہا کہ راحیل شریف کا مسئلہ نہیں وہ ابھی نیا ہے
یعنی ہم اپنا کام نکلوا سکتے ہیں کیوں کہ ابھی وہ پوری طرح سیٹل نہیں

جاوید ہاشمی نے اس شام اس غبارے میں سے ہوا نہ نکال دی ہوتی تو خدشات برقرار تھے
انہوں نے سب کو پیچھے ہٹنے پر مجبور کر دیا

ایکسپریس اخبار کی سب ایڈیٹر ، جو اب انٹرنشپ پر امریکہ میں ہیں اپنے بلاگ میں لکھا کہ
ہمیں "وہ" بتاتے تھے کہ آج عمران خان کی کون سی تصویر فرنٹ پر کتنے سائز میں چھپے گی
اور آج اخبار کی سپر لیڈ کیا ہوگی
اور یہ سلسلہ اچانک اس شام ختم ہو گیا جس شام ہاشمی صاحب بولے
اس دن کے بعد کوئی فون نہیں آیا
 
Last edited:

handsome.ebi

Chief Minister (5k+ posts)

ہاشمی صاحب تو یہ بھی کہتے تھے کے ناصر الملک صاحب پی ٹی آئی کے حق میں فیصلہ دینگے - اس بات کا کیا بنا
 

سائنسدان

Senator (1k+ posts)
سائنس دان اپنی تحریکی ریسرچ اس تھریڈ پر پبلش نہ کرو
یہ کسی اور تھریڈ پر ڈسکس کریں گے
چونتیس سال میں کیا فوج نے حکومت کر کہ ملک کو سوئٹزر لینڈ بنا دیا تھا ؟



آپ جمہوریت کا بھاشن دے رہے ہیں میں جمہوریت کی اوقات بتارہا ہوں۔پاکستان میں کوئی جمہوریت نہیں ہے یہاں ابھی بھی ڈکٹیٹر شپ ہے فوجی وردی کے بغیر
پہلے ڈکٹیٹر جی ایچ کیوسے آتے تھے اب رائیونڈ سے آتے ہیں


 

Altaf Lutfi

Chief Minister (5k+ posts)
بہت عمدہ پوسٹ ھاشمی صاحب کی آخری اننگ کی تعریف میں لیکن یہ پوسٹ کچھ جلدی نھیں چھاپ دیا ؟ فیصلہ تو یہ ھوا تھا کہ جب ھاشمی صاحب کی سیاست کی پہلی پرسی منایؑیں گے تو ھدیہِ تبریک پیش کریں گے، بہرحال اب ھاشمی صاحب تاریخ کا حصہ ھیں، چینی ادویات کے بے تحاشا استعمال نے ان کی بچی کھچی مت بھی مار ڈالی ھے، ایک عمدہ اور طویل اننگ کھیلنے والے کھلاڑی کا سپاٹ فکسنگ میں پکڑے جانا اور لمبے کیریؑر کا اختتام ایسے رسوا کُن انداز میں ھونا کسی کے لیے خوشگوار یاد نھیں
 

UniFaithDici

Senator (1k+ posts)
جاوید ہاشمی پاگل آدمی ہے۔ اس کے بیانات کی اہمیت صرف پٹواریوں کو ہی ہے
 

handsome.ebi

Chief Minister (5k+ posts)


پاکستان میں اگر آج جمہوریت ہے تو اس کا کریڈٹ جاوید ہاشمی کو جاتا ہے


آزاد منش انسان ، اپنے ضمیر کی آواز پر بولنے والا


کونسی جمہوریت سر جی - کراچی میں سارا نظام رینجرز کے ہاتھ میں ہے - پاک چین راہداری منصوبے کا وزٹ آرمی چیف کر رے ہیں - ملک میں فوجی عدالتیں قائم ہیں - نواز شریف صاحب نے اپنا اقتدار بچانے کے لئے ملک فوج کے حوالے کیا ہوا ہے - اور آپ لوگ پتا نہی کس جمہوریت کا راگ الاپ رے ہیں
 
Sponsored Link