عمران خان کو بہت پہلے مستعفیٰ ہوجانا چاہیے تھا، مظہر عباس

11mazharabbaskhanresignbhtpehly.jpg

سینئر تجزیہ کار مظہر عباس نے کہا ہے کہ عمران خان کو بہت پہلے ہی اپنے عہدے سے استعفیٰ دیدینا چاہیے تھا، انہوں نےایک ہاری ہوئی جنگ جیتنے کی کوشش کی۔

دنیا نیوز سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے مظہر عباس نےکہا کہ استعفیٰ دیدینا بھی ایک طرح سے احتجاج ہوتا ہے، مگر بدقسمتی سے عمران خان نے یہ گریس نہیں دکھائی۔

مظہر عباس نےمیزبان کی جانب سے عمران خان کو اپوزیشن کے رول میں کردار ادا کرنے سے متعلق سوال کے جواب میں کہا کہ ابھی یہ قبل از وقت گفتگو ہوگی، ابھی اسمبلی میں عدم اعتماد کامیاب ہونی ہے، پھر اسپیکر کے خلاف عدم اعتماد کا پراسس آئے گا اور اس کے بعد نئے وزیراعظم اعتماد کا ووٹ لیں گے۔


سینئر تجزیہ کار نےکہا کہ ابھی سے عمران خان کو اپوزیشن کے روپ میں دیکھنا شروع کردینا قبل از وقت ہوگا۔

پروگرام کے میزبان کامران شاہد نے کہا کہ اپوزیشن عدم اعتماد میں کامیاب ہوچکی تھی کیونکہ جس روز ووٹنگ ہونی تھی اس روز اپوزیشن کے پاس نمبرز پورے تھے، جس میں حکومتی اتحادی جماعتیں اور دیگر ارکان شامل تھے۔

کامران شاہد نے کہا کہ اگر عمران خان کے پاس اکثریت ہوتی تو آپ بھول جائیں کہ وہ تب اسمبلی توڑتے، ان کے پاس اکثریت نہیں تھی تو انہوں نے اسمبلی توڑی ہے۔
 
Advertisement

Aslan

Chief Minister (5k+ posts)
مافیا کا مقابلہ قانون اور شرافت سے نہیں ہوتا
خان اس معاملے میں چوتیا ہے. اب بھگتے
If Imran behaves like the corrupt mafia then what is the difference between him and the corrupt mafias?.He whole campaign against them was based on moral and financial corruption.The problem for Imran is that the majority of Pakistanis are ignorant,not educated at all or poorly educated.He is banging his head against a wall.
 

ahaseeb

Minister (2k+ posts)
It was a mistake of IK to prolong it. He should've dismissed the assemblies before vote of no confidence. In politics, timing is everything. PMLN/PPP/JUI etc will now come and change ECP rules etc to rig in their favor
 
Sponsored Link