چین ری ایکشن ہو گیا دھما کے کا انتظار

Shah Shatranj

Chief Minister (5k+ posts)
کورونا ملک میں جگہ جگہ سے نمودار ہونے والے کرونا کے کیس دیکھ کر اب یہ بات کنفرم ہوچکی ہے کہ کرونا اس ملک میں سرایت کر چکا ہے اندر ہی اندر کرونا ہزاروں سے لاکھوں افراد کو متاثر کر چکا ہے . جیسے نیوکلیر دھماکے سے پہلے ایک چین ری ایکشن ہوتا ہے وہ ہو چکا ہے . ذرا تصور کریں اسلام آباد کا ایک علاقہ کرونا کی وجہ سے سیل کردیا گیا . ایک سے ہوئے بارہ تو کیا بارہ سے چوبیس نہیں ہوں گے اسی طرح ان چوبیس سے مزید اڑتالیس ہوں گے یوں ایک اندازے کے مطابق یہ تعداد لاکھوں تک پہنچ چکی ہے . حکومت پانچ ہزار ٹیسٹ کرکے خوش ہے صرف بارہ سو نکلے لیکن جو لاکھوں ابھی ٹیسٹ ہی نہیں کیے ان کا کسی کو کیا معلوم . سب سے زیادہ مایوس کن بات حاکم وقت کی لاپرواہی ہے وہ اس بات پر شرمندہ نہیں کہ ہزار کیس اس کی غفلت کی وجہ سے ہوئے بلکہ خوش ہے کہ امریکہ اور چین جیسا حال نہیں ہے . پاکستان کم و بیش ایک آئسو لیٹڈ ملک ہے چین اور امریکہ کی طرح یہاں روزانہ لاکھوں کی تعداد میں غیر ملکی نہیں آتے . یہ جو مہینے میں چند ہزار لوگ غیر ملکی پروازوں سے آتے ہیں ان کا خیال رکھنا کونسی مشکل بات تھی لیکن کیتان بھنگ پی کے سویا ہوا تھا الٹا ایران سے کرونا امپورٹ کیا اور اس قوم میں کرونا کا زہر پھیلا دیا . کوئی شرمندگی نہیں کوئی احساس نہیں . ایک طرف ملک کا جنازہ پڑا ہے دوسری طرف کپتان کی گھٹیا سیاست ہے اب وہ لاک ڈاؤن سے پہلے اپنی پارٹی کی یوتھ کو بھرتی کرے گا اور ان کی مدد سے غریبوں پر روٹی کا احسان کرے گا . ایسی قیادت ہو تو ملک میں جو تباہی نہیں بھی آنی وہ بھی آ جانی ہے . کپتان صاب اس بات کا انتظار کر رہے کہ اٹلی جیسے حالات ہوں اور اس قوم کو سمجھ آئے کہ کرونا کیا ہے . اب اس بات کی تیاری ہے کہ اٹلی جیسے حالات پیدا ہوگئے تو کیسے نمٹیں گے . اس بات کی فکر نہیں کہ کرونا روکنا کیسے ہے اس بات کی فکر ہے اٹلی جیسے حالات ہوئے تو کیا کرنا ہے . اس بندے کو کوئی احساس نہیں بچے کیسے تڑپ رہے مریض کیسے مر رہے نہ ہی یہ کوئی ذمہ دار شخص ہے . یہ ملک اس شخص کی نا اہلیت اور لاپرواہی کی بھینٹ چڑھ گیا ہے
 

Bubber Shair

Chief Minister (5k+ posts)
یہیں کہیں ایک حکومتی تنخواہ دار چولیں مارتا رہا ہے کہ پنجاب میں کرونا وائرس سندھ کی نسبت کم ہے کیونکہ بزدار نے بہت اچھا کنٹرول رکھا وغیرہ
اس کو اب دکھانا چاہئے کہ پنجاب بہت آگے نکل چکا ہے اور مزید تعداد ایک ہفتے بعد سامنے آنے والی ہے
 

jaypakistan

Minister (2k+ posts)
i only blame Pakistani awam for the spread of virus. I appreciate all govts for what they did in their capacity . Speaking is much easier than doing. If pakistanis can bribe ppl at airports and at borders, if they do not want to stay at their houses then they deserve to die .why should we expect all govts to save us but we wont want to save ourselves, our families?
 

amber123

Chief Minister (5k+ posts)
Desperate efforts from a group to bring Shriefs in lime light......threats ; requests; and propagandas to greet corrupt rejected criminals who khan totally rejected. Politics over corona....tell them do some public welfare return looted money back.... just amazing to note how land grabbers and TTs mafia are dead silent.
 

Bilalbhatti

Politcal Worker (100+ posts)
Inshallah tera ghar wala tu mare ga hi mare ga is corona sa inshallah. Chal post band kr our ghar walo ka test karwa inshallah corona 100 percent positive. Allah sa dua ha double corona nikla tera our tera ghar walo ma sa
کورونا ملک میں جگہ جگہ سے نمودار ہونے والے کرونا کے کیس دیکھ کر اب یہ بات کنفرم ہوچکی ہے کہ کرونا اس ملک میں سرایت کر چکا ہے اندر ہی اندر کرونا ہزاروں سے لاکھوں افراد کو متاثر کر چکا ہے . جیسے نیوکلیر دھماکے سے پہلے ایک چین ری ایکشن ہوتا ہے وہ ہو چکا ہے . ذرا تصور کریں اسلام آباد کا ایک علاقہ کرونا کی وجہ سے سیل کردیا گیا . ایک سے ہوئے بارہ تو کیا بارہ سے چوبیس نہیں ہوں گے اسی طرح ان چوبیس سے مزید اڑتالیس ہوں گے یوں ایک اندازے کے مطابق یہ تعداد لاکھوں تک پہنچ چکی ہے . حکومت پانچ ہزار ٹیسٹ کرکے خوش ہے صرف بارہ سو نکلے لیکن جو لاکھوں ابھی ٹیسٹ ہی نہیں کیے ان کا کسی کو کیا معلوم . سب سے زیادہ مایوس کن بات حاکم وقت کی لاپرواہی ہے وہ اس بات پر شرمندہ نہیں کہ ہزار کیس اس کی غفلت کی وجہ سے ہوئے بلکہ خوش ہے کہ امریکہ اور چین جیسا حال نہیں ہے . پاکستان کم و بیش ایک آئسو لیٹڈ ملک ہے چین اور امریکہ کی طرح یہاں روزانہ لاکھوں کی تعداد میں غیر ملکی نہیں آتے . یہ جو مہینے میں چند ہزار لوگ غیر ملکی پروازوں سے آتے ہیں ان کا خیال رکھنا کونسی مشکل بات تھی لیکن کیتان بھنگ پی کے سویا ہوا تھا الٹا ایران سے کرونا امپورٹ کیا اور اس قوم میں کرونا کا زہر پھیلا دیا . کوئی شرمندگی نہیں کوئی احساس نہیں . ایک طرف ملک کا جنازہ پڑا ہے دوسری طرف کپتان کی گھٹیا سیاست ہے اب وہ لاک ڈاؤن سے پہلے اپنی پارٹی کی یوتھ کو بھرتی کرے گا اور ان کی مدد سے غریبوں پر روٹی کا احسان کرے گا . ایسی قیادت ہو تو ملک میں جو تباہی نہیں بھی آنی وہ بھی آ جانی ہے . کپتان صاب اس بات کا انتظار کر رہے کہ اٹلی جیسے حالات ہوں اور اس قوم کو سمجھ آئے کہ کرونا کیا ہے . اب اس بات کی تیاری ہے کہ اٹلی جیسے حالات پیدا ہوگئے تو کیسے نمٹیں گے . اس بات کی فکر نہیں کہ کرونا روکنا کیسے ہے اس بات کی فکر ہے اٹلی جیسے حالات ہوئے تو کیا کرنا ہے . اس بندے کو کوئی احساس نہیں بچے کیسے تڑپ رہے مریض کیسے مر رہے نہ ہی یہ کوئی ذمہ دار شخص ہے . یہ ملک اس شخص کی نا اہلیت اور لاپرواہی کی بھینٹ چڑھ گیا ہے
 

Husaink

Prime Minister (20k+ posts)
کورونا ملک میں جگہ جگہ سے نمودار ہونے والے کرونا کے کیس دیکھ کر اب یہ بات کنفرم ہوچکی ہے کہ کرونا اس ملک میں سرایت کر چکا ہے اندر ہی اندر کرونا ہزاروں سے لاکھوں افراد کو متاثر کر چکا ہے . جیسے نیوکلیر دھماکے سے پہلے ایک چین ری ایکشن ہوتا ہے وہ ہو چکا ہے . ذرا تصور کریں اسلام آباد کا ایک علاقہ کرونا کی وجہ سے سیل کردیا گیا . ایک سے ہوئے بارہ تو کیا بارہ سے چوبیس نہیں ہوں گے اسی طرح ان چوبیس سے مزید اڑتالیس ہوں گے یوں ایک اندازے کے مطابق یہ تعداد لاکھوں تک پہنچ چکی ہے . حکومت پانچ ہزار ٹیسٹ کرکے خوش ہے صرف بارہ سو نکلے لیکن جو لاکھوں ابھی ٹیسٹ ہی نہیں کیے ان کا کسی کو کیا معلوم . سب سے زیادہ مایوس کن بات حاکم وقت کی لاپرواہی ہے وہ اس بات پر شرمندہ نہیں کہ ہزار کیس اس کی غفلت کی وجہ سے ہوئے بلکہ خوش ہے کہ امریکہ اور چین جیسا حال نہیں ہے . پاکستان کم و بیش ایک آئسو لیٹڈ ملک ہے چین اور امریکہ کی طرح یہاں روزانہ لاکھوں کی تعداد میں غیر ملکی نہیں آتے . یہ جو مہینے میں چند ہزار لوگ غیر ملکی پروازوں سے آتے ہیں ان کا خیال رکھنا کونسی مشکل بات تھی لیکن کیتان بھنگ پی کے سویا ہوا تھا الٹا ایران سے کرونا امپورٹ کیا اور اس قوم میں کرونا کا زہر پھیلا دیا . کوئی شرمندگی نہیں کوئی احساس نہیں . ایک طرف ملک کا جنازہ پڑا ہے دوسری طرف کپتان کی گھٹیا سیاست ہے اب وہ لاک ڈاؤن سے پہلے اپنی پارٹی کی یوتھ کو بھرتی کرے گا اور ان کی مدد سے غریبوں پر روٹی کا احسان کرے گا . ایسی قیادت ہو تو ملک میں جو تباہی نہیں بھی آنی وہ بھی آ جانی ہے . کپتان صاب اس بات کا انتظار کر رہے کہ اٹلی جیسے حالات ہوں اور اس قوم کو سمجھ آئے کہ کرونا کیا ہے . اب اس بات کی تیاری ہے کہ اٹلی جیسے حالات پیدا ہوگئے تو کیسے نمٹیں گے . اس بات کی فکر نہیں کہ کرونا روکنا کیسے ہے اس بات کی فکر ہے اٹلی جیسے حالات ہوئے تو کیا کرنا ہے . اس بندے کو کوئی احساس نہیں بچے کیسے تڑپ رہے مریض کیسے مر رہے نہ ہی یہ کوئی ذمہ دار شخص ہے . یہ ملک اس شخص کی نا اہلیت اور لاپرواہی کی بھینٹ چڑھ گیا ہے
ویسے پٹواریوں اور بھٹواریوں کی پوری کوشش ہے کہ خدا نخواستہ پاکستان میں لمبی چوڑی ہلاکتیں ہوں تاکہ خان پر ذمہ داری ڈالی جائے کائرہ کی بکواس تو پوری قوم نے سنی ہی ہوگی کہ ہم خان سے تعاون نہیں کریں گے
 

Husaink

Prime Minister (20k+ posts)
کورونا ملک میں جگہ جگہ سے نمودار ہونے والے کرونا کے کیس دیکھ کر اب یہ بات کنفرم ہوچکی ہے کہ کرونا اس ملک میں سرایت کر چکا ہے اندر ہی اندر کرونا ہزاروں سے لاکھوں افراد کو متاثر کر چکا ہے . جیسے نیوکلیر دھماکے سے پہلے ایک چین ری ایکشن ہوتا ہے وہ ہو چکا ہے . ذرا تصور کریں اسلام آباد کا ایک علاقہ کرونا کی وجہ سے سیل کردیا گیا . ایک سے ہوئے بارہ تو کیا بارہ سے چوبیس نہیں ہوں گے اسی طرح ان چوبیس سے مزید اڑتالیس ہوں گے یوں ایک اندازے کے مطابق یہ تعداد لاکھوں تک پہنچ چکی ہے . حکومت پانچ ہزار ٹیسٹ کرکے خوش ہے صرف بارہ سو نکلے لیکن جو لاکھوں ابھی ٹیسٹ ہی نہیں کیے ان کا کسی کو کیا معلوم . سب سے زیادہ مایوس کن بات حاکم وقت کی لاپرواہی ہے وہ اس بات پر شرمندہ نہیں کہ ہزار کیس اس کی غفلت کی وجہ سے ہوئے بلکہ خوش ہے کہ امریکہ اور چین جیسا حال نہیں ہے . پاکستان کم و بیش ایک آئسو لیٹڈ ملک ہے چین اور امریکہ کی طرح یہاں روزانہ لاکھوں کی تعداد میں غیر ملکی نہیں آتے . یہ جو مہینے میں چند ہزار لوگ غیر ملکی پروازوں سے آتے ہیں ان کا خیال رکھنا کونسی مشکل بات تھی لیکن کیتان بھنگ پی کے سویا ہوا تھا الٹا ایران سے کرونا امپورٹ کیا اور اس قوم میں کرونا کا زہر پھیلا دیا . کوئی شرمندگی نہیں کوئی احساس نہیں . ایک طرف ملک کا جنازہ پڑا ہے دوسری طرف کپتان کی گھٹیا سیاست ہے اب وہ لاک ڈاؤن سے پہلے اپنی پارٹی کی یوتھ کو بھرتی کرے گا اور ان کی مدد سے غریبوں پر روٹی کا احسان کرے گا . ایسی قیادت ہو تو ملک میں جو تباہی نہیں بھی آنی وہ بھی آ جانی ہے . کپتان صاب اس بات کا انتظار کر رہے کہ اٹلی جیسے حالات ہوں اور اس قوم کو سمجھ آئے کہ کرونا کیا ہے . اب اس بات کی تیاری ہے کہ اٹلی جیسے حالات پیدا ہوگئے تو کیسے نمٹیں گے . اس بات کی فکر نہیں کہ کرونا روکنا کیسے ہے اس بات کی فکر ہے اٹلی جیسے حالات ہوئے تو کیا کرنا ہے . اس بندے کو کوئی احساس نہیں بچے کیسے تڑپ رہے مریض کیسے مر رہے نہ ہی یہ کوئی ذمہ دار شخص ہے . یہ ملک اس شخص کی نا اہلیت اور لاپرواہی کی بھینٹ چڑھ گیا ہے
اس وقت امریکہ میں کرونا بڑی سپیڈ سے پھیل رہا ہے امریکہ بھی اب خان کی بھینٹ ہی چڑھے گا
 

Husaink

Prime Minister (20k+ posts)
کورونا ملک میں جگہ جگہ سے نمودار ہونے والے کرونا کے کیس دیکھ کر اب یہ بات کنفرم ہوچکی ہے کہ کرونا اس ملک میں سرایت کر چکا ہے اندر ہی اندر کرونا ہزاروں سے لاکھوں افراد کو متاثر کر چکا ہے . جیسے نیوکلیر دھماکے سے پہلے ایک چین ری ایکشن ہوتا ہے وہ ہو چکا ہے . ذرا تصور کریں اسلام آباد کا ایک علاقہ کرونا کی وجہ سے سیل کردیا گیا . ایک سے ہوئے بارہ تو کیا بارہ سے چوبیس نہیں ہوں گے اسی طرح ان چوبیس سے مزید اڑتالیس ہوں گے یوں ایک اندازے کے مطابق یہ تعداد لاکھوں تک پہنچ چکی ہے . حکومت پانچ ہزار ٹیسٹ کرکے خوش ہے صرف بارہ سو نکلے لیکن جو لاکھوں ابھی ٹیسٹ ہی نہیں کیے ان کا کسی کو کیا معلوم . سب سے زیادہ مایوس کن بات حاکم وقت کی لاپرواہی ہے وہ اس بات پر شرمندہ نہیں کہ ہزار کیس اس کی غفلت کی وجہ سے ہوئے بلکہ خوش ہے کہ امریکہ اور چین جیسا حال نہیں ہے . پاکستان کم و بیش ایک آئسو لیٹڈ ملک ہے چین اور امریکہ کی طرح یہاں روزانہ لاکھوں کی تعداد میں غیر ملکی نہیں آتے . یہ جو مہینے میں چند ہزار لوگ غیر ملکی پروازوں سے آتے ہیں ان کا خیال رکھنا کونسی مشکل بات تھی لیکن کیتان بھنگ پی کے سویا ہوا تھا الٹا ایران سے کرونا امپورٹ کیا اور اس قوم میں کرونا کا زہر پھیلا دیا . کوئی شرمندگی نہیں کوئی احساس نہیں . ایک طرف ملک کا جنازہ پڑا ہے دوسری طرف کپتان کی گھٹیا سیاست ہے اب وہ لاک ڈاؤن سے پہلے اپنی پارٹی کی یوتھ کو بھرتی کرے گا اور ان کی مدد سے غریبوں پر روٹی کا احسان کرے گا . ایسی قیادت ہو تو ملک میں جو تباہی نہیں بھی آنی وہ بھی آ جانی ہے . کپتان صاب اس بات کا انتظار کر رہے کہ اٹلی جیسے حالات ہوں اور اس قوم کو سمجھ آئے کہ کرونا کیا ہے . اب اس بات کی تیاری ہے کہ اٹلی جیسے حالات پیدا ہوگئے تو کیسے نمٹیں گے . اس بات کی فکر نہیں کہ کرونا روکنا کیسے ہے اس بات کی فکر ہے اٹلی جیسے حالات ہوئے تو کیا کرنا ہے . اس بندے کو کوئی احساس نہیں بچے کیسے تڑپ رہے مریض کیسے مر رہے نہ ہی یہ کوئی ذمہ دار شخص ہے . یہ ملک اس شخص کی نا اہلیت اور لاپرواہی کی بھینٹ چڑھ گیا ہے
? لو جی اس باؤلے کی کھوپڑی کا دھماکہ تو ہو گیا
 

Shah Shatranj

Chief Minister (5k+ posts)
اس وقت امریکہ میں کرونا بڑی سپیڈ سے پھیل رہا ہے امریکہ بھی اب خان کی بھینٹ ہی چڑھے گا
ذات کی چھپکلی اور شہتیراں نو جپھے امریکا میں ایک ماہ میں ایک کروڑ لوگ بین لاقوامی سفر کرتے ہیں امریکا سے کیا مقابلہ کرتے ہو تین سو افراد ایران سے لا کر ملک تباہ کرنا والے قاتلو
 

Shah Shatranj

Chief Minister (5k+ posts)
افواہ تو یہ بھی آ رہی ہے کہ زرداری بھی خان کی بھینٹ چڑھنے جا رہا ہے
افواہ تو یہ بھی ہے کوئی ڈنڈہ دے کر ناک آؤٹ کرنے والا ہے . افواہ تو یہ بھی ہے کسی نے زبردستی ملک بند کروا دیا اور حاکم وقت ٹاؤں ٹاؤں کرتا رہ گیا
 

Truth matters

MPA (400+ posts)
ویسے پٹواریوں اور بھٹواریوں کی پوری کوشش ہے کہ خدا نخواستہ پاکستان میں لمبی چوڑی ہلاکتیں ہوں تاکہ خان پر ذمہ داری ڈالی جائے کائرہ کی بکواس تو پوری قوم نے سنی ہی ہوگی کہ ہم خان سے تعاون نہیں کریں گے
I hope Allah doesnot give corona to the people that play politics with this disease. All wishing bad for the people may get it themselves. Fear Allah
 
Last edited:

P@triot

Senator (1k+ posts)
Is qabron kay mujawir kay liye sirf dua hi ki jaa sakti hai. May Allah keep every Pakistani living in any province and out of country, safe and sound. All patwaris and bhutwaris are comparing coronavirus infection and death case counts as if they are election results. Dubb kay marr jao patwario aur bhutwario...Jo marzi afwaahain phelo lo..tumharay chor leaders kee baarian ab nahi aani...Baqi Allah SWT ki hikmat...
 

AWAITED

Senator (1k+ posts)
کورونا ملک میں جگہ جگہ سے نمودار ہونے والے کرونا کے کیس دیکھ کر اب یہ بات کنفرم ہوچکی ہے کہ کرونا اس ملک میں سرایت کر چکا ہے اندر ہی اندر کرونا ہزاروں سے لاکھوں افراد کو متاثر کر چکا ہے . جیسے نیوکلیر دھماکے سے پہلے ایک چین ری ایکشن ہوتا ہے وہ ہو چکا ہے . ذرا تصور کریں اسلام آباد کا ایک علاقہ کرونا کی وجہ سے سیل کردیا گیا . ایک سے ہوئے بارہ تو کیا بارہ سے چوبیس نہیں ہوں گے اسی طرح ان چوبیس سے مزید اڑتالیس ہوں گے یوں ایک اندازے کے مطابق یہ تعداد لاکھوں تک پہنچ چکی ہے . حکومت پانچ ہزار ٹیسٹ کرکے خوش ہے صرف بارہ سو نکلے لیکن جو لاکھوں ابھی ٹیسٹ ہی نہیں کیے ان کا کسی کو کیا معلوم . سب سے زیادہ مایوس کن بات حاکم وقت کی لاپرواہی ہے وہ اس بات پر شرمندہ نہیں کہ ہزار کیس اس کی غفلت کی وجہ سے ہوئے بلکہ خوش ہے کہ امریکہ اور چین جیسا حال نہیں ہے . پاکستان کم و بیش ایک آئسو لیٹڈ ملک ہے چین اور امریکہ کی طرح یہاں روزانہ لاکھوں کی تعداد میں غیر ملکی نہیں آتے . یہ جو مہینے میں چند ہزار لوگ غیر ملکی پروازوں سے آتے ہیں ان کا خیال رکھنا کونسی مشکل بات تھی لیکن کیتان بھنگ پی کے سویا ہوا تھا الٹا ایران سے کرونا امپورٹ کیا اور اس قوم میں کرونا کا زہر پھیلا دیا . کوئی شرمندگی نہیں کوئی احساس نہیں . ایک طرف ملک کا جنازہ پڑا ہے دوسری طرف کپتان کی گھٹیا سیاست ہے اب وہ لاک ڈاؤن سے پہلے اپنی پارٹی کی یوتھ کو بھرتی کرے گا اور ان کی مدد سے غریبوں پر روٹی کا احسان کرے گا . ایسی قیادت ہو تو ملک میں جو تباہی نہیں بھی آنی وہ بھی آ جانی ہے . کپتان صاب اس بات کا انتظار کر رہے کہ اٹلی جیسے حالات ہوں اور اس قوم کو سمجھ آئے کہ کرونا کیا ہے . اب اس بات کی تیاری ہے کہ اٹلی جیسے حالات پیدا ہوگئے تو کیسے نمٹیں گے . اس بات کی فکر نہیں کہ کرونا روکنا کیسے ہے اس بات کی فکر ہے اٹلی جیسے حالات ہوئے تو کیا کرنا ہے . اس بندے کو کوئی احساس نہیں بچے کیسے تڑپ رہے مریض کیسے مر رہے نہ ہی یہ کوئی ذمہ دار شخص ہے . یہ ملک اس شخص کی نا اہلیت اور لاپرواہی کی بھینٹ چڑھ گیا ہے
جس کی موت لکھی ہے اسے کوئ بچا نہیں سکتا اور جس کی نہیں لکھی اسے کوئ مار نہیں سکتا. حکومت اپنے وسائل سے بڑھ کر کر رہی ہے. کاش یہ قوم خصوصاً تاجر ٹیکس چوری نہ کرتے تو رمضان میں آٹے کے تھیلے بانٹ کر لوگوں کی عزت نفس کو روند کر خوش ہونے کی بجاۓ حکومت کو دۓ گۓ پیسہ غرباء اپنا حق سمجھ کر لہتے
 

Shah Shatranj

Chief Minister (5k+ posts)
جس کی موت لکھی ہے اسے کوئ بچا نہیں سکتا اور جس کی نہیں لکھی اسے کوئ مار نہیں سکتا. حکومت اپنے وسائل سے بڑھ کر کر رہی ہے. کاش یہ قوم خصوصاً تاجر ٹیکس چوری نہ کرتے تو رمضان میں آٹے کے تھیلے بانٹ کر لوگوں کی عزت نفس کو روند کر خوش ہونے کی بجاۓ حکومت کو دۓ گۓ پیسہ غرباء اپنا حق سمجھ کر لہتے
کسی کو زہر دے کر کہو کہ دیکھتے ہیں تمہاری موت لکھی کہ نہیں ک لکھی . حکومت کچھ نہیں کر رہی بلکہ مزید کرونا پھیلا رہی ہے . یہ حکومت عوام کا اپنا چنا عذاب ہے جو عوام کو معاشی بدحالی کے بعد کرونا کا تحفہ دے رہی ہے
 
Sponsored Link