ماڈل ٹاؤن کا واقعہ-ایک مختلف نقطہء نظر

Qarar

MPA (400+ posts)
قرار نامہ
9/19/2014
...

میں اس مضمون میں ماڈل ٹاؤن کے واقعے پر ایک مختلف زاویے سے روشنی ڈالنا چاہتا ہوں ...ذرائع ابلاغ میں یہ عام تاثر یہ ہے کہ حکومت نے ظلم اور بربریت، اور کچھ حضرات کے مطابق، ریاستی دہشت گردی کا مظاہرہ کرتے هوئے منہاج القرآن کے چودہ نہتے کارکنوں کو بھون ڈالا جبکہ دسیوں بلکہ سینکڑوں افراد کو مار پیٹ کرکے زخمی کیا ....میرا اس پورے واقعے پر ایک بلکل مختلف نقطہ نظر ہے


لاہور پولیس منہاج القرآن کے سیکرٹیریٹ میں غیر قانونی تجاوزات ہٹانے کی آڑ میں ماڈل ٹاؤن گئی .....اب اس موقعے پر خاص طور پر قادری کی آمد سے پہلے پولیس کو یہ اقدام کرنے کی کیا ضرورت تھی؟ ...ظاہر ہے کہ قادری کے پر کاٹنے کا پروگرام تھا ...اور اسے یہ پیغام دینا مقصود تھا کہ اگر لونگ مارچ وغیرہ کا ارادہ ترک نہ کیا تو حکومت سختی کرنے کا ارادہ رکھتی ہے...(جو دھما چوکڑی قادری نے اسلام آباد میں مچائی ہے اس کو دیکھتے هوئے یہ اقدام شاید کوئی اتنا برا بھی نہ تھا) ...میڈیا کے مطابق پولیس کے منہاج القرآن کی انتظامیہ سے تقریباً دو گھنٹے مذاکرات هوئے لیکن کوئی نتیجہ نہ نکلا ... پولیس نے زبردستی کرنے کی کوشش کی جس پر قادری کے کارکن مشتعل ہوگئے اور انہوں نے پولیس کو بزور طاقت اس اقدام سے روکنے کی کوشش کی


اب یہاں ایک لمحے کا توقف کرتے ہیں ...اگر یہ فرض بھی کر لیا جائے کہ پولیس غلط تھی اور منہاج القرآن کی انتظامیہ کا موقف درست تھا کہ تجاوزات قانونی تھیں تو کیا عوامی تحریک کے کارکنوں کا یہ رویہ درست تھا کہ پولیس پر حملہ کردیا جائے؟ جن لوگوں کی زبان ان کارکنوں کو "نہتے کارکن" کہتے نہیں تھکتی کیا انھوں نے ان کارکنوں کے ہاتھوں میں تھامے ڈنڈوں کی لمبائی اور موٹائی پر غور کیا ہے؟ یہ تین انچ قطر کا ڈنڈا اگر کسی انسان پر برس پڑے تو اس کا کیا حشر ہوگا؟


پولیس اکثر زیادتی بھی کرتی ہے ...کرپٹ بھی ہے ...غریبوں کو مختلف اور امیروں کو مختلف ٹریٹ کرتی ہے ...پولیس میں یہ ساری خامیاں ہونگی مگر پولیس ریاست کی رٹ کو بھی قائم کرنے کی ذمہ دار ہے ....کسی لٹھ بردار گروہ کو یہ اجازت نہیں دی جاسکتی کہ وہ اینٹوں، پتھروں ، ڈنڈوں، کیل والے ڈنڈوں یا اسلحے کا استعمال پولیس کے خلاف کرے چاہے بظاہر انہیں پولیس کا اقدام جائز نہ لگے ....اگر عوامی تحریک والے لوگ پولیس پر حملہ کرنے کی بجائے عدالت سے رجوع کرتے تو پولیس کو دفاعی پوزیشن اختیار کرنے پر مجبور کرسکتے تھے ...یاد رکھئے کہ یہ وہی عدالتیں ہیں جنہوں نے لاہور اور اسلام آباد میں عوامی تحریک کے کارکنوں کے مرنے پر وزیراعظم ، وزیراعلیٰ، اور متعدد وفاقی وزراء کے خلاف ایف آئی آر درج کرنے کے احکامات دے رکھے ہیں ....مسئلہ یہ ہے کہ متعدد فوجی مداخلتوں کے بعد پاکستان کے عوام کو بھی جس کی لاٹھی اس کی بھینس کا قانون استعمال کرنے کی لت پر چکی ہے


پولیس پر حملہ کرنے کے اقدام کو حق بجانب کہنے سے پہلے یہ بھی سوچئے کہ اگر پولیس کسی اطلاع پر کہ کسی وڈیرے نے ایک نجی جیل میں لوگوں کو قید کیا ہوا ہے کوئی کاروائی کرنے بوہنچتی ہے ...جس پر وڈیرے کے محافظ لاٹھیوں یا اسلحے کے زور پر پولیس کو پسپا کردیتے ہیں .........یا یہ کہ ایک با اثر شخص کسی علاقے میں زبردستی لوگوں سے بھتہ وصول کر رہا ہے ...مگر پولیس کے روکنے پر غنڈے الٹا پولیس پر حملہ کردیتے ہیں ....کیا یہ صحیح ہوگا؟ کیا لوگوں کو اس بات کی اجازت دی جاسکتی ہے کہ آپ اپنی مرضی سے یہ فیصلہ کریں کہ پولیس کا حکم ماننا ہے یا نہیں؟ پولیس کی زیادتیوں کی داد رسی کے لیے ایک فورم یعنی عدالت موجود ہے ...اس سے استفادہ حاصل کیا جانا چاہئیے ....انتہائی شرمناک بات یہ ہے کہ اس سارے قضیے میں پولیس کہیں بھی منہاج القرآن کی عمارت میں داخل نہیں ہونا چاہتی تھی ...وہ صرف چند تجاوزات ہٹا کر سڑک صاف کرنا چاہتی تھی ....اس معمولی سی بات پر کارکنوں کا انتہائی اقدام ....سڑک کو میدان جنگ بنا دینا کیوں ضروری تھا؟ ان چودہ جانوں کے ضیاع کی ذمہ داری پولیس سے زیادہ خود ان کارکنوں پر ہے


میڈیا کا اس سارے معاملے میں انتہائی جانبدارانہ تھا اور ہے ....ہر کوئی شخص "سانحہ سانحہ" کی رٹ لگا رہا ہے ....جن بوجھ کر ...بار بار صرف وہ فوٹیج ٹی وی پر دکھائی جارہی ہے جس میں پولیس اپنے آپ پر ہونے والے انتہائی پرتشدد حملوں کے بعد اپنے دفاع میں کاروائی کر رہی ہے ....ہم میں سے جن لوگوں نے مارشل لاء ادوار میں پولیس کی بربریت کے مناظر دیکھے اور سنے ہیں وہ اچھی طرح جانتے ہیں کہ پولیس کرنے پر آئے تو چند سو کے قریب کارکنوں اور ملازمین کو آسانی سے زیادہ تشدد کرکے قابو کیا جاسکتا تھا ....پھر کیا وجہ تھی کہ پولیس اور کارکنوں کے درمیان دس بارہ گھنٹے لڑائی ہوتی رہی؟ وجہ صاف ظاہر ہے کہ پولیس نے ہاتھ ہولا رکھنے کی حتی المقدور کوشش کی ...شروع میں مذاکرات بھی کیے ...تاہم آخر میں جب مظاہرین حد سے بڑھ گئے اور کچھ ہوائی فائرنگ کی بھی آوازیں آئیں تو پولیس کے لیے ضروری تھا کہ اپنے دفاع میں گولی چلاتی .....میڈیا بڑے دھوم دھڑکے سے وہ گولیاں چلانے کے تو مناظر تو دکھا رہا ہے مگر شروع کے چند گھنٹوں کی ....کارکنوں کی طرف سے ہونے والی پر تشدد کاروائیوں کو بلکل گول کر رہا ہے ....یہ صحافتی بدیانتی کی ایک بڑی مثال ہے کہ تصویر کے دونوں رخ نہیں دکھائے جارہے


اب بیرون ملک پولیس کو حاصل کچھ اختیارات کا ذکر کرتے ہیں ....امریکا میں ایک پولیس افسر کو اس شخص پر گولی چلانے کا اختیار حاصل ہے جو پولیس افسر کی وارننگ کو نظر انداز کرکے افسر کی طرف بڑھے ..وارننگ پر ہاتھ کھڑے نہ کرے اور مسلسل جارحانہ عمل اختیار کرے ....میں ایک آنکھوں دیکھا واقعہ آپ کی خدمت میں پیش کرتا ہوں ...میں ایک دوست کی گاڑی میں سفر کر رہا تھا ...اچانک ایک پولیس کار نے پیچھے آکر لائٹیں جلادیں ....دوست نے گاڑی سائیڈ پر پارک کی اور گاڑی سے نکل کر پولیس کار کی طرف کچھ وضاحت کرنے چل پڑا...(یہ غلط تھا ...اس صورتحال میں قانون گاڑی میں بیٹھ کر افسر کا انتظار کرنے کو کہتا ہے) ...پولیس افسر نے جوکہ ابھی اپنی گاڑی سے نکلا ہی تھا میرے دوست کو واپس گاڑی میں جانے کی ہدایت کی...دوست نے کچھ بولنے کی کوشش کی تو اس پولیس افسر نے پستول نکال کر تان لی ...میرے دوست نے غلطی محسوس کی اور واپس گاڑی میں بیٹھ گیا ...لیکن میں یقین سے کہ سکتا ہوں کہ اگر میرا دوست پیش قدمی جاری رکھتا تو پولیس افسر اس پر ضرور گولی چلا دیتا ...اور امریکا کی کوئی عدالت یا جیوری اس افسر کو قصوروار نہ ٹھہراتی ....ابھی حال ہی میں امریکی ریاست میزوری (میسوری) کے شہر فرگوسن میں ایک پولیس افسر کی طرف سے ایک سیاہ فام نوجوان پر گولی چلانے کا واقعہ پیش آیا ہے جس میں نوجوان ہلاک ہو گیا ..جس پر لوگ..خاص طور پر سیاہ فام ... مظاہرے کر رہے ہیں ....پولیس افسر کے مخالفین اصرار کرتے ہیں کہ اس نوجوان نے اپنے ہاتھ اٹھا دئیے تھے لہذا پولیس افسر کو فائر نہیں کرنا چاہئیے تھا ...جبکہ پولیس کا موقف ہے کہ نوجوان نے پیش قدمی کی اور افسر نے اپنے دفاع میں گولی چلائی کیونکہ اسے شاید نوجوان کے ہاتھ میں کوئی چاقو نما ہتھیار کا شک ہوا تھا ....لیکن اہم بات یہ ہے کہ پولیس کے مخالفین بھی یہ تسلیم کرتے ہیں کہ افسر کو نوجوان کو پیش قدمی کی صورت میں گولی چلانے کا اختیار ہے ...ان کا آرگیومنٹ صرف یہ ہے کہ نوجوان ہاتھ اٹھا کر کھڑا تھا اس لیے گولی کی ضرورت نہیں تھی


اب مندرجہ بالا مثال کا موازنہ ماڈل ٹاؤن کے "نہتے" مظاہرین سے کریں تو کیا پولیس کا گولی چلانا غیر مناسب لگتا ہے جبکہ ان پر ڈنڈوں اور پتھروں کی بارش ہو رہی ہو؟
ساری کی ساری پولیس کو کرپٹ کہ کر تھانوں پر حملے کرنا ....ملزموں کو چھڑوانا ...سیاسی یا غیر سیاسی ریلیوں کے دوران توڑ پھوڑ کرنا اور پھر پولیس کی طرف سے روکنے یا جائز مارپیٹ اور تشدد کے بعد اپنی معصومیت کے رونے رونا ایک فیشن بن گیا ہے جس کی بھرپور مذمت کی جانی چاہئیے


کچھ لوگ اس پر بھی آوازیں اٹھا رہے ہیں کہ سیدھی سیدھی گولیاں کیوں چلائی گئیں ...ٹانگ اور بازو پر مار کر زخمی کیوں نہ کیا گیا ...بندے تو نہ مرتے ....عرض یہ ہے کہ پولیس کو ٹریننگ کے دوران جسم کے بڑے حصے پر گولی مارنے کی تربیت دی جاتی ہے ...مجھے خود بھی گنز جمع کرنے کا شوق ہے اور نشانہ بازی کے لیے مختلف شوٹنگ رینجز میں آتا جاتا ہوں ...وہاں بھی پولیس سے وابستہ یا ریٹائرڈ افراد یہی کنفرم کرتے ہیں کہ گولی اگر سینے پر مارنے کی بجائے ٹانگ اور بازو پر ماری جائے تو نشانہ چوکنے کا اور راہگیروں کے مرنے کا خدشہ ہوتا ہے


....آخر میں شہباز شریف کے طرز حکومت پر کچھ الفاظ

شہباز شریف یا رانا ثناء اللہ کی بری پلاننگ یا بد انتظامی تھی کہ چند سو مظاہرین کو قابو نہ کیا جاسکا ...اگر اس قابل نہ تھے تو پھر پولیس بھیجنے کی کیا ضرورت تھی ...اور اگر مظاہرین کو ابتدائی طور پر پسپا نہ کیا جاسکا تھا تو پھر بعد میں زیادہ قوت کے ساتھ واپس بھی آیا جاسکتا تھا ....تجاوزات ہٹانے والے معمولی سے کام کے دوران چودہ بندے مارنا ایک انتظامی ناکامی تھی.......لیکن سب سے بدترین بات پولیس پر سارا ملبہ گرانا ہے ....شہباز شریف اور رانا ثناء اللہ میں اتنی اخلاقی جرات ہونی چاہئیے تھی کہ اپنے اور پولیس کے اقدام کو صحیح اور درست کہتے اور پولیس کا مکمل دفاع کیا جاتا ....آج بھی دیکھ لیں ...ہر حکومتی وزیر میڈیا کے پریشر میں آکر ماڈل ٹاؤن والے واقعے کو ناقابل دفاع کہ رہا ہے ...اس کو غلطی کہ رہا ہے ....مافیاں مانگ رہا ہے ..جبکہ حقیقت میں قصور پولیس کا نہیں بلکہ مظاہرین کا ہے ..پولیس عمارت میں نہیں جارہی تھی ..کسی کو گرفتار نہیں کر رہی تھی ...صرف سڑک کلئیر کروا رہی تھی ....لیکن اپنے اوپر ہونے والے شدید حملوں کے بعد پولیس کو بھی غصہ آیا اور جیسے گیہوں کے ساتھ گھن بھی پس جاتا ہے ...کئی بیگناہ بھی پھر رگڑے گئے اور کچھ اشخاص اور عورتوں کے ساتھ ناروا سلوک ہوا جوکہ نہیں ہونا چاہئیے تھا
حکومت کا فرض تھا کہ پولیس کے ساتھ کھڑی ہوتی اور لوگوں کو وارننگ دیتی کہ قانون ہاتھ میں لینے والوں کو معاف نہیں کیا جائے گا ...لیکن افسوس ایسا نہیں ہوا.....پہلی ایف آئی آر پولیس کی مدعیت میں عوامی تحریک کے کارکنوں کے خلاف درج کی گئی ..اور یہی اصل ایف آئی آر تھی ...بدقسمتی سے کچھ جج بھی ٹی وی پر لاشیں دیکھ کر میڈیا کے دباؤ میں الٹی سیدھی ایف آئی آر درج کرنے کے حکمنامے دے رہے ہیں
 
Last edited by a moderator:

MHAMZA

Minister (2k+ posts)
Being in USA has not made you any sensitive to the sanctity of human life over man made laws!!

This Punjab Police was acting as militant wing of the Badmash of Riwind to assert their tyranny and to intimidate PAT leadership and workers!
They had no court orders to remove any illegal obstructions neither any written orders..... to show the PAT administration who one their part maintain to this day have High Court permission to put protective barricades!
On top of all this to try to remove the barricades at 2:00 AM at night is way to suspicious..
Also they did call for reinforcements which were present the next day and in day time started their violent operation, it was not spur of the moment action of the Police...Also Gullu Butt needs to be given some role as the car smashing goon of PML-N and his charge at the PAT needs some plausible explanation too....which is missing in your cock and bull story...
Do get the facts straight before concocting a scenario of your liking....

To me it is just a lame attempt to dilute the crime from murder to mismanagement of Police by the real murders the CTBT of Riwind...
May the murderers of the innocent be punished by Allah SWA ...AMEEN
 
Last edited:

cheetah

Chief Minister (5k+ posts)
if you are talking about principles first tell us under what law there are so much barriers around the palaces of sharif family in model town very much same locality where the incidence took place.
 

rainbow22

MPA (400+ posts)
Only way Nawaz can get out of this murder case is to blame it on Rana Snaullah. Rana is friend of khawarji groups such as Sipah saba and Lashkare Jangvi. But the truth will come out and the responsible will be hanged inshAllah.
 

Altaf Lutfi

Chief Minister (5k+ posts)
yaar aap 1400 saal pehlay kahan thay ? Yazeed apnay qabeeh jurm k baad taweelaat talash karnay main nakaam raha, aap hotay tu Karbala ko ek "mukhtalif" andaz se pesh kar k hamari tareekh par lagay muqaddas khoon ko dho daltay. ek baat baharhaal note karna keh aap jis niralay zawiayay se jaezah lenay bethay, tu aap khud bakhud line ki us taraf ho gaye, aap ko pata tha keh kya nateeja nikalna hai.aap ne Mihaj walon k dandon ki pemaish tu kar li hai.kisi se Rabb ki be-awaaz laathi ka bhi poochh lena. shayad woh bhi tumharay jaisay saffak log thay jo lashon par dastar khawan bichha kar dinner kar k apna naam tareekh main likhwa gaye.
 

Qarar

MPA (400+ posts)
Being in USA has not made you any sensitive to the sanctity of human life over man made laws!!

Living abroad has made me understand the respect of the law. Suppose you have parked your car on a street and a mob starts vandalizing. If police comes to your protection and beats the sh!t out those crooks, I doubt that you would start protesting against police heavy handedness.
 

Qarar

MPA (400+ posts)
if you are talking about principles first tell us under what law there are so much barriers around the palaces of sharif family in model town very much same locality where the incidence took place.

All people who hold government and other sensitive positions should be given security. It's a norm all around the world. You don't want your PM or CM kidnapped by Taliban for ransom.

Qadri on the other hand is not in the government. There is no need to block a road for his protection.
 

Qarar

MPA (400+ posts)
yaar aap 1400 saal pehlay kahan thay ? Yazeed apnay qabeeh jurm k baad taweelaat talash karnay main nakaam raha, aap hotay tu Karbala ko ek "mukhtalif" andaz se pesh kar k hamari tareekh par lagay muqaddas khoon ko dho daltay.

1400 hundreds years ago, there was a power struggle between two Muslim factions. One side (Yazid) had all but 72 Muslims on his side and he won. All Muslims swore to obey him otherwise how would you justify the fact that after killing Hussein, Yazid continued to govern without any significant protest from Hussein followers. Yazid died a natural death. His son became the ruler afterwards for a short time and then his uncles, Marwan, became the king and his family ruled fro decades. Do you think you are a bigger Muslim than the Muslims of that era who pledged their allegiance to Yazid and his family?
 

Altaf Lutfi

Chief Minister (5k+ posts)
"there was a power struggle between two Muslim factions. One side (Yazid) had all but 72 Muslims on his side and he won."

"Do you think you are a bigger Muslim than the Muslims of that era who pledged their allegiance to Yazid and his family?
"

Enjoy your faith. No comments !
 

cheetah

Chief Minister (5k+ posts)
All people who hold government and other sensitive positions should be given security. It's a norm all around the world. You don't want your PM or CM kidnapped by Taliban for ransom.

Qadri on the other hand is not in the government. There is no need to block a road for his protection.
Dear no way at the cost of civilians anywhere in the world. come and see in model town protocol of the so called leaders. I am not the supporter of the qadri however this brutal force can not be justified.
 

tmukhtar

Voter (50+ posts)
@Qarar
One side (Yazid) had all but 72 Muslims on his side and he won.

>>Is it a speculation of yours or a historical fact. Provide a proof that ALL but 72 were with Yazid??
>> Hope you wont get offended and allow me to know whether you believe in Prophet Mohammed (pbuh) and Quran as Allah's (swt) book of guidance??

Thanks
 

Altaf Lutfi

Chief Minister (5k+ posts)
mujhay kuchh kuchh is baat par yaqeen anay laga hai keh Minhaj walon k danday kafi chubhnay walay rahay hon gey kyon keh pichhlay haftay ki marham patti k baad aaj phir Qarar cheekhtay huay hospital aa gaya hai. lekin mujhay andaza hai is baar Qarar ki andarooni chotain faqat Minhaj wali naheen balkeh IK ka Karachi jalsa, Lahore jalsay ki tareekh aur Mian sahib ka jagah jagah zabardast istiqbaal bhi dard ki shiddat main izafay ka moojib hain.
 

Qarar

MPA (400+ posts)
@Qarar
>>Is it a speculation of yours or a historical fact. Provide a proof that ALL but 72 were with Yazid??

Although this is an off topic discussion but since you asked I'll briefly reply and try to give you a history lesson.

You may have seen a reaction of Muslims to blasphemous cartoons. Muslims all around the world can cause havoc on this insignificant issue of cartoons; however, when the grandson of the prophet was killed by the sitting ruler, did you see mass protests against Yazid? Yazid should have been thrown out of power within days after this tragedy. But, Muslims (except Abdullah bin Zubair and some of his followers in Madina and Kufa) either stayed neutral or didn't have the courage to fight with Yazid. How many people Hussein had with him at Karbala?

Later on after several years, followers of Hussein (under Abdullah bin Zubair) and Yazid's cousin Khalifa Abdul Malik bin Marwan fought again. Khalifa Abdul Malik sent Hajjaj bin Yousaf to crush the rebellion. Hussein's followers lost again. Hajjaj Bin Yousaf surrounded Mecca where Zubair was hiding and did heavy stone shelling, and in the process, destroyed 'Khana Kaaba' which had to be rebuild later. Hajjaj bin Yousaf then beheaded Abdulla bin Zubair.

As I said before, there was a power struggle between two factions, and one side won the other lost. I'm not debating with you who was right and who was wrong. We see countless examples for power grab in Islamic history. Aurangzeb Alamgir killed several of his brothers before he became the king of subcontinent (India). Similarly, during Abbasi rule, Mamoon-al-Rashid beheaded his brother Khalifa Ameen-al-Rashid and became khalifa himself.

In my opinion, if Prophet had announced that only his descendants would rule Muslims, there would have been more clarity and less bloodshed - there would have been no shia or sunni. But that didn't happen.

@Qarar
>> Hope you wont get offended and allow me to know whether you believe in Prophet Mohammed (pbuh) and Quran as Allah's (swt) book of guidance??

No, I don't mind the question. I believe faith is a personal matter. My faith is mine and yours is yours. But I hope next you wouldn't ask for a proof of my circumcision to establish my patriotism. ;-)
 

tmukhtar

Voter (50+ posts)
[MENTION=65213]Qarar[/MENTION]

One side (Yazid) had all but 72 Muslims on his side and he won.

Your response does not qualify your above statement at all. At best you are beating around the bush with irrelevant historical episodes. Instead of being a headless chicken running around weaving supposed historical lessons simply provide a historical reference which clearly states or approve your quoted statement.

Dont worry I wont report you to aabpara for your mickymouse checkup. Bhutto has served the deeds for the rest of the nation.

Again you dodged a simple question about your belief-system. If you have the audacity to brew, supposedly your own, fairy tales then why hide in the veils.

Honesty is the best policy. No fun in living a layered life of an onion.