عمران خان جہانگیرترین کی وجہ سے وزیراعظم بنے؟سلیم صافی کا پرانا دعویٰ

safi11h1.jpg

جہانگیر ترین 60 سے 70 فیصد پی ٹی آئی کو اپنی جماعت میں شامل کرسکتے ہیں، سلیم صافی کا جہانگیر ترین سے متعلق پرانا دعویٰ

جہانگیرترین جن کے ذریعے ایک سیاسی جماعت استحکام پاکستان پارٹی بنائی گئی اور اس میں تحریک انصاف کے رہنماؤں سے پارٹی چھڑوا کر شامل کروایا گیا۔۔ تحریک انصاف کے کئی درجن مضبوط ترین رہنما جہانگیرترین کی جماعت کا حصہ بن چکے تھے ، خیال تھا کہ جہانگیرترین تحریک انصاف کا خاتمہ کردیں گے

لیکن الیکشن 2018 میں پیشنگوئی غلط ثابت ہوئی اور جہانگیرترین اپنی سیٹیں بھی ہارگئے اور سیاست سے آؤٹ ہوگئے جبکہ انکی جماعت کے منتخب ارکان عون چوہدری، علیم خان اور گل اصغر خان کی جیت بھی سوالیہ نشان ہے۔

سینئر صحافی و تجزیہ کار سلیم صافی کا سیاست سے کنارہ کشی اختیار کرنے والے جہانگیر ترین کے حوالے سے ماضی میں کیا گیا ایک دعویٰ سامنےآیا ہےجس میں ان کا کہنا تھا کہ 60 سے 70 فیصد پی ٹی آئی جہانگیر ترین کے پاس چلی جائے گی۔

تفصیلات کے مطابق سلیم صافی کی ماضی میں کی گئی گفتگو کا ایک کلپ سوشل میڈیا پر وائرل ہورہا ہے جس میں ان کا کہنا تھا کہ جہانگیر ترین عقل کے لحاظ سے عمران خان سے بہت آگے ہیں، جہانگیر ترین چینیوں کی طرح بولتے کم ہیں مگر عمل زیادہ کرتے ہیں، پی ٹی آئی کو بنانے میں اور اس میں شامل اکثریت کو لانے میں جہانگیر ترین کا اہم کردار تھا۔
https://twitter.com/x/status/1759961718552232434
سلیم صافی نے مزید کہا کہ جہانگیرترین نے سب سے زیادہ وسائل عمران خان پر خرچ کیے، اگر وہ نا ہوتے تو شائد عمران خان کبھی بھی وزیراعظم نہیں بن سکتے تھے۔

سینئر صحافی نے کہا کہ پی ٹی آئی کو ختم کرنے کی ضرورت نہیں ہے، جہانگیر ترین خود ہی پی ٹی آئی کو ختم کردے گا کیونکہ 60 سے 70فیصد پی ٹی آئی کے اراکین تو جہانگیر ترین کے پاس چلے جائیں گے۔

خیال رہے کہ سلیم صافی کا یہ تجزیہ 9 مئی کے بعد اور موجودہ انتخابات سے پہلے کا تھا اور یہ وہ تجزیے یا نقطہ نظر تھے جس کی وجہ سے شائد خود جہانگیر ترین بھی کسی خوش فہمی کا شکار ہوگئے تھے مگر عام انتخابات کے نتائج نے ان کی خوش فہمی اور سلیم صافی جیسےسیاسی پنڈتوں کی رائے کو یکسر بدل کررکھ دیا کیونکہ جہانگیر ترین لودھراں اور ملتان سے الیکشن ہارنے کے بعد نا صرف اپنی پارٹی بلکہ سیاست سے بھی مستعفیٰ ہوگئے ہیں۔
 

ranaji

President (40k+ posts)
اور افغانی گشتی کی یہ اولاد سلیم لفافئ
نسوار فروش فراڈیا چکلے میں آنے والے گاہک کے زنا سے بدکاری حرام کاری سے پیدا ہو ا یہ وہی چکلے کی طوائف کئ زنا کے بعد استعمال شدہ غلیظ صافی ہے جسکو پہلے سلیم طوائفی کہتے تھے پھر یہ افغانی گشتی کی اولاد نسوار فروش طوائفی سے غلیظ گندی استعمال شدہ صافی بن گہئ بڑے بڑے گشتی کے بچے گزرے ہیں لیکن یہ طوائف نسل گشتی بچہ غلیظ صافی سلیم طوایف سارے حرامی بچوں کا گُرو نکلا بے غیرت کنجر اور نطفہ حرام فراڈیا اس گشتی بچے کی وہ تصویریں دیکھیں جب یہ نسوار بیچتے بیچتے طوائفی بنا تھا گشتی بچہ جس میں یہ بھیک مانگنے والا ڈھیلی پتلون اور اپنے سے بڑی قمیض پہن کر نیا نیا کنجر اور دلا بنا تھا
 

Azpir

MPA (400+ posts)
safi11h1.jpg

جہانگیر ترین 60 سے 70 فیصد پی ٹی آئی کو اپنی جماعت میں شامل کرسکتے ہیں، سلیم صافی کا جہانگیر ترین سے متعلق پرانا دعویٰ

جہانگیرترین جن کے ذریعے ایک سیاسی جماعت استحکام پاکستان پارٹی بنائی گئی اور اس میں تحریک انصاف کے رہنماؤں سے پارٹی چھڑوا کر شامل کروایا گیا۔۔ تحریک انصاف کے کئی درجن مضبوط ترین رہنما جہانگیرترین کی جماعت کا حصہ بن چکے تھے ، خیال تھا کہ جہانگیرترین تحریک انصاف کا خاتمہ کردیں گے

لیکن الیکشن 2018 میں پیشنگوئی غلط ثابت ہوئی اور جہانگیرترین اپنی سیٹیں بھی ہارگئے اور سیاست سے آؤٹ ہوگئے جبکہ انکی جماعت کے منتخب ارکان عون چوہدری، علیم خان اور گل اصغر خان کی جیت بھی سوالیہ نشان ہے۔

سینئر صحافی و تجزیہ کار سلیم صافی کا سیاست سے کنارہ کشی اختیار کرنے والے جہانگیر ترین کے حوالے سے ماضی میں کیا گیا ایک دعویٰ سامنےآیا ہےجس میں ان کا کہنا تھا کہ 60 سے 70 فیصد پی ٹی آئی جہانگیر ترین کے پاس چلی جائے گی۔

تفصیلات کے مطابق سلیم صافی کی ماضی میں کی گئی گفتگو کا ایک کلپ سوشل میڈیا پر وائرل ہورہا ہے جس میں ان کا کہنا تھا کہ جہانگیر ترین عقل کے لحاظ سے عمران خان سے بہت آگے ہیں، جہانگیر ترین چینیوں کی طرح بولتے کم ہیں مگر عمل زیادہ کرتے ہیں، پی ٹی آئی کو بنانے میں اور اس میں شامل اکثریت کو لانے میں جہانگیر ترین کا اہم کردار تھا۔
https://twitter.com/x/status/1759961718552232434
سلیم صافی نے مزید کہا کہ جہانگیرترین نے سب سے زیادہ وسائل عمران خان پر خرچ کیے، اگر وہ نا ہوتے تو شائد عمران خان کبھی بھی وزیراعظم نہیں بن سکتے تھے۔

سینئر صحافی نے کہا کہ پی ٹی آئی کو ختم کرنے کی ضرورت نہیں ہے، جہانگیر ترین خود ہی پی ٹی آئی کو ختم کردے گا کیونکہ 60 سے 70فیصد پی ٹی آئی کے اراکین تو جہانگیر ترین کے پاس چلے جائیں گے۔

خیال رہے کہ سلیم صافی کا یہ تجزیہ 9 مئی کے بعد اور موجودہ انتخابات سے پہلے کا تھا اور یہ وہ تجزیے یا نقطہ نظر تھے جس کی وجہ سے شائد خود جہانگیر ترین بھی کسی خوش فہمی کا شکار ہوگئے تھے مگر عام انتخابات کے نتائج نے ان کی خوش فہمی اور سلیم صافی جیسےسیاسی پنڈتوں کی رائے کو یکسر بدل کررکھ دیا کیونکہ جہانگیر ترین لودھراں اور ملتان سے الیکشن ہارنے کے بعد نا صرف اپنی پارٹی بلکہ سیاست سے بھی مستعفیٰ ہوگئے ہیں۔
Is peela paper besharam lifafi ki oqat aik used condom se ziada nahi. Yeh to kahta tha PTI Jahangir Tareen ko nahi sambaal sakay gi. Hahaha. Is BC dalay ko serious lena nahi banta.
 

Citizen X

President (40k+ posts)
Jo lun leni da apni ek seat nahi jeet sakha itni dhandli aur zulm dhaa ne ke baad woh kissi ko khak PM banaye ga. Kissi joga hota to apni ek seat to nikal leta.

Lagta hai Saleem lifafi ko abhi bhi lodhran se lifafa aata hai
 

tahirmajid

Chief Minister (5k+ posts)
Pata nahi kis ne is jaiso ko sahafi bana dia, ye kisi office mein chaprasi bananey kay bhi qabil nahi.
Jo banda khud MNA/MPA banana kay qabil nahi wo kisi ko PM banwa sakta hay???
 

ranaji

President (40k+ posts)
کرزئی کے اس ممیسئے لونڈے نے بھونکا تھا کہ اگر سائفر ہوا تو میں سیاست چھوڑ دوں گا مگر افغانی گشتی کی اس غلیظ صافی نے جھوٹا اور لعنتئ ہونے کے باوجود نا حرام زدگی چھوڑی نا لونڈے بازوں سی بدفعلی کروانی چھوڑی نا حرام زدگی چھوڑی یا اپنی نطفہ حرامی اور مافیا کی دلا گیری چھوڑی نا ہی مونہہ سے شٹ چاٹ کر اپنی ماں کے یاروں کرپٹ مافیا کو اورل استنجا کرانا چھوڑا اس کھرک والے تشریفی طوائفی جیسا گشتی بچہ دیکھنے میں کم ہی ملتا ہے