پریانتھا کمارا کی موت پر پاکستانی ردعمل سے مطمئن ہیں،سری لنکن ہائی کمشنر

4sirhighcomm.jpg

پاکستان میں سری لنکن ہائی کمشنر موہن وجے کرما نے کہا ہے کہ پریانتھا کمارا کی ہلاکت پر پاکستان کی حکومت اور عوام کے ردعمل سے مطمئن ہیں۔

خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید نے پاکستان میں سری لنکن ہائی کمشنر اور وائس ایڈمرل موہن وجے کرما سے ملاقات کی اور سری لنکن شہری کی سیالکوٹ فیکٹری میں ہلاکت پر تعزیت کا اظہار بھی کیا۔

اس موقع پر وزیر داخلہ شیخ رشید نے سری لنکن ہائی کمشنر سے پریانتھا کمارا کے قتل پر دکھ اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ واقعے پر پاکستانی عوام سوگوار ہے، حکومت واقعے میں ملوث مجرمان کو قانون کے کٹہرے میں ضرور لائے گی اور کسی ملوث شخص کو رعایت نہیں ملے گی، مجرموں کو مثالی سزادی جائے گی۔


ملاقات کے دوران سری لنکن ہائی کمشنر نے کہا کہ اس افسوسناک واقعے پر پاکستانی حکومت اور عوام نے جو ردعمل دیا اس پر ہم مکمل طور پر مطمئن ہیں اور پاکستانی عوام کے جذبات سے قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں۔


سری لنکن ہائی کمشنر نے سری لنکن مینجر کی نعش کو سرکاری اعزاز کے ساتھ سری لنکا بھجوانے پر پاکستانی حکومت کا شکریہ بھی ادا کیا اور کہا کہ پاکستان اور سری لنکا کے درمیان دیرینہ تعلقات اس واقعے سے متاثر نہیں ہوں گے۔
 
Advertisement

ahaseeb

Minister (2k+ posts)
the whole country is devastated over this

i hope all of the srilanka realize this
Agreed but the issue is that people are more focused on that he didn't do the blasphemy but they're perfectly okay with this lynching if he actually did it. That mind set need to be changed.

Now the vast majority isn't questioning the lynching part but that the person was innocent. Unless that mindset changes, such incidents will keep on happening. Is there any leader who has condemned that blasphemy isn't punishable by people
 
Sponsored Link