پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں اضافہ، صارفین نے حکومت پر طنز کے تیر برسا دیے

2eterolrection.jpg

پیٹرول کی قیمت میں لگی آگ نے سب کو جھلسا دیا، سوشل میڈیا پر بھی خوب شور شرابا ہورہا ہے، ٹوئٹر پر پیٹرول پرائس سمیت دیگر ہیش ٹیگ ٹرینڈ کرنے لگے،صارفین کی جانب سے حکومت کو خوب آڑے ہاتھوں لیا جارہاہے،صارفین کا پارہ اس وقت بہت ہائی ہے اور وہ اپنا غصہ سوشل میڈیا پر نکال رہے ہیں۔

لیگی رہنما حنا پروزیز بٹ نے لکھا عمران نیازی کچھ عرصہ مزید وزیراعظم رہا تو پیٹرول ، چینی، گھی ، کوکنگ آئل وغیرہ دکانوں پر نہیں لوگوں کو عجائب گھر میں ملیں گے۔۔۔اس نااہل کو ہٹاؤ ملک بچاؤ


جواب میں بابر بٹ نے کہا کہ آپ بھی مہربانی فرما کر لانگ مارچ کی کال دے دیں بہت ہو گیا تماشا غریب عوام مر رہے ہیں، مہنگائی سنگل ایجنڈا رکھیں۔


عمر غنی نے کہا کہ جب وزیرِاعظم صاحب نے کہا تھا کہ ہم ملک کا جی ڈی پی اوپر لے کر جائیں گے تب کوئی نہیں سمجھا تھا کہ
اس کا مطلب گیس، ڈیزل اور پیٹرول ہے۔


اقصی نے طنزیہ لکھا آہستہ آہستہ لیکن پیٹرول کی قیمت ایک ہزار روپے لیٹر تک پہنچ جائے گی۔


سوشل میڈیا صارفین پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے اور مہنگائی کو حکومت کی ناکامی قرار دے کر خوب طنز کے تیر برسا رہے ہیں۔
 
Advertisement
Sponsored Link