عوام کو مفت سولر سسٹم دینے کیلئے پنجاب حکومت نے طریقہ کار طے کر لیا

muftsish11i1.jpg


پنجاب حکومت نے صوبے کے مستحق عوام کو مفت سولر سسٹم فراہم کرنے کا طریقہ کار طے کرلیا۔دستاویزات کے مطابق ماہانہ 100 یونٹس تک بجلی استعمال کرنے والے 50 ہزار گھرانوں کو مفت سولر سسٹم فراہم کیا جائے گا۔

تمام اخراجات صوبائی حکومت برداشت کرے گی اور ایس ایم ایس کے ذریعے صارفین رجسٹریشن کرا سکیں گے، سولرسسٹم اور انسٹالیشن کا 100فیصد خرچہ پنجاب حکومت برداشت کرے گی۔

منصوبے پر 10ارب روپے لاگت آئے گی، بجلی چوری، میٹر ٹیمپرنگ ریکارڈ یا کسی بھی دوسری سکیم سے مستفید گھرانے اہل نہیں ہوں گے۔

دستاویزات کے مطابق اہل صارفین بل ریفرنس نمبر اور شناختی کارڈ نمبر 8800 پر بھیج کر اپنی رجسٹریشن کروا سکیں گے، سو یونٹس سے کم بجلی استعمال کرنے والے صارفین کا ڈیٹا نیشنل ٹیلی کمیونیکیشن کارپوریشن کو مہیا کیا جائے گا۔

این ٹی سی تصدیق کے بعد اہل صارفین کا ڈیٹا پی آئی ٹی بی کو بھی فراہم کرے گا، پی آئی ٹی بی سے جاری حتمی لسٹیں ضلعی انتظامیہ کو بھیجی جائیں گی۔

سرکاری دستاویزات کے مطابق منصوبے پر عملدرآمدکے لئے محکمہ توانائی کو پراجیکٹ مینجمنٹ یونٹ کے قیام کی منظوری بھی مل گئی، منصوبے کو نئے مالی سال کا حصہ بنا کر یکم جولائی سے عملدرآمد کا آغاز کیا جائے گا۔
 

Dr Adam

Prime Minister (20k+ posts)


مفت سولر سسٹم ؟؟؟

سلمان شہباز کی سولر کمپنی کے ذریعے بیرونی ممالک سے پنجاب حکومت یہ سولر پینلز مہنگے داموں خریدے گی اور اپنے پٹواریوں میں تقسیم کر دے گی . قوم کے پیسے سے خریدے ہوئے ان سولر پینلز پر اشتہار بازیوں سے سیاسی فائدہ کون اٹھائے گا اور مالی فائدہ کس کا ہو گا؟؟ اس قوم کا بچہ بچہ جانتا ہے

خاندانی ڈاکوؤں پر مشتمل یہ شریف ٹولہ اپنی دیہاڑیاں لگانے سے باز نہیں آئے گا