حکومت اپوزیشن سے مذاکرات پر آمادہ، فضل الرحمان کو اعتراض

12fazaluaitrazz.jpg

وفاقی حکومت نے پاکستان تحریک انصاف کے ساتھ مذاکرات پر آمادگی کا اظہار کردیا ہے تاہم حکمران اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ(پی ڈی ایم) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے پر خوش نہیں ہیں۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم شہباز شریف اور سربراہ پی ڈی ایم مولانا فضل الرحمان کے درمیان ملاقات ہوئی جس میں ملک کی مجموعی سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا ، اس موقع پر مولانا فضل الرحمان نے حکومت کی جانب سے پی ٹی آئی کے ساتھ مذاکرات پر آمادگی کا اظہا ر پر اپنےتحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ چیئرمین پی ٹی آئی ماضی میں پی ڈی ایم رہنماؤں کو چور اور لٹیرا قرار دیتے رہے ہیں ، ان سے کسی بھی صورت میں بات نہیں ہونی چاہیے۔


مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ نا ہی ملک میں قبل ازوقت انتخابات ہوں گے اور نا ہی اس حوالے سے کسی کا دباؤ قبول کیا جائے گا، اسمبلیاں توڑنے کا اعلان کرنے والا پہلے اپنے اندرونی خلفشار کو سنبھالے۔

یادرہے کہ حکومت اور پی ٹی آئی کے درمیان کشیدگی کو کم کرنے اور مذاکرات کو بحال کرنے کیلئے وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار اور صدر مملکت عارف علوی کے درمیان ایک اور ملاقات ہوئی ہے، ملاقات میں دونوں رہنماؤں کے درمیان اسمبلیوں کی تحلیل، عام انتخابات کے انعقاد ، صوبوں اور وفاقی حکومت کے درمیان ورکنگ ریلیشن شپ سمیت اہم سیاسی و اقتصادی امور پر تبادلہ خیا ل کیا گیا ہے۔

ملاقات میں وفاقی وزیر خزانہ نے آئی ایم ایف معاہدےپر عمل درآمد، درآمدی بل کم کرنے اور سیاسی استحکام کیلئے اپوزیشن سے تعاون کی درخواست کی، صدر عارف علوی نے تمام امور پر پی ٹی آئی قیادت سے بات چیت کرنے کا وعدہ کیا۔
 

samisam

Chief Minister (5k+ posts)
اس لونڈے باز اور ممیسئے نطفہ حرام فراڈئے کی تو لاٹری لگی ہوئی ہے جس حرام زادے کو اس کے اپنے حلقے والوں نے کتے اور سور کے بچے والی کرکے زلیل کرکے ہرا دیا وہ حرام کا نطفہ اپنی کھرک مٹانے کے لئے اپنے ساتھ بدفعلی کرانے والا خنزیر جو بچوں کے ساتھ خود بھی بد فعلی کرتا ہے اسلام فروش منافق پاکستان کی تشکیل کو گناہ بھونکنے والا خنزیر ئ نسل کا مودی کا پالتو کتا وہ حرام کا نطفہ لونڈے باز پاکستان کا ماما بننے کی حرام زدگی ُ کررہا ہے در لعنت منافق اسلام فروش نطفہ حرام فراڈیئے بلیک میلر
 

Eyeaan

Chief Minister (5k+ posts)
دس لعنت نیوز کاسٹرز اور نیوز روم پر جو بے حیا فجلو کے بیان چلاتے ہیں ۔ پی ڈی ایم تو ہے جرائم پیشہ ٹولہ مگر ان صحافیوں میں کیا کچھ شرم نہیں بچی۔۔ ،
 

WHAT

MPA (400+ posts)
12fazaluaitrazz.jpg

وفاقی حکومت نے پاکستان تحریک انصاف کے ساتھ مذاکرات پر آمادگی کا اظہار کردیا ہے تاہم حکمران اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ(پی ڈی ایم) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے پر خوش نہیں ہیں۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم شہباز شریف اور سربراہ پی ڈی ایم مولانا فضل الرحمان کے درمیان ملاقات ہوئی جس میں ملک کی مجموعی سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا ، اس موقع پر مولانا فضل الرحمان نے حکومت کی جانب سے پی ٹی آئی کے ساتھ مذاکرات پر آمادگی کا اظہا ر پر اپنےتحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ چیئرمین پی ٹی آئی ماضی میں پی ڈی ایم رہنماؤں کو چور اور لٹیرا قرار دیتے رہے ہیں ، ان سے کسی بھی صورت میں بات نہیں ہونی چاہیے۔


مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ نا ہی ملک میں قبل ازوقت انتخابات ہوں گے اور نا ہی اس حوالے سے کسی کا دباؤ قبول کیا جائے گا، اسمبلیاں توڑنے کا اعلان کرنے والا پہلے اپنے اندرونی خلفشار کو سنبھالے۔

یادرہے کہ حکومت اور پی ٹی آئی کے درمیان کشیدگی کو کم کرنے اور مذاکرات کو بحال کرنے کیلئے وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار اور صدر مملکت عارف علوی کے درمیان ایک اور ملاقات ہوئی ہے، ملاقات میں دونوں رہنماؤں کے درمیان اسمبلیوں کی تحلیل، عام انتخابات کے انعقاد ، صوبوں اور وفاقی حکومت کے درمیان ورکنگ ریلیشن شپ سمیت اہم سیاسی و اقتصادی امور پر تبادلہ خیا ل کیا گیا ہے۔

ملاقات میں وفاقی وزیر خزانہ نے آئی ایم ایف معاہدےپر عمل درآمد، درآمدی بل کم کرنے اور سیاسی استحکام کیلئے اپوزیشن سے تعاون کی درخواست کی، صدر عارف علوی نے تمام امور پر پی ٹی آئی قیادت سے بات چیت کرنے کا وعدہ کیا۔

yea vo he hy na jis ky 2 baap hain
actually dono ky he 2 2 baap hain
 

miafridi

Prime Minister (20k+ posts)
12fazaluaitrazz.jpg

وفاقی حکومت نے پاکستان تحریک انصاف کے ساتھ مذاکرات پر آمادگی کا اظہار کردیا ہے تاہم حکمران اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ(پی ڈی ایم) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے پر خوش نہیں ہیں۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم شہباز شریف اور سربراہ پی ڈی ایم مولانا فضل الرحمان کے درمیان ملاقات ہوئی جس میں ملک کی مجموعی سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا ، اس موقع پر مولانا فضل الرحمان نے حکومت کی جانب سے پی ٹی آئی کے ساتھ مذاکرات پر آمادگی کا اظہا ر پر اپنےتحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ چیئرمین پی ٹی آئی ماضی میں پی ڈی ایم رہنماؤں کو چور اور لٹیرا قرار دیتے رہے ہیں ، ان سے کسی بھی صورت میں بات نہیں ہونی چاہیے۔


مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ نا ہی ملک میں قبل ازوقت انتخابات ہوں گے اور نا ہی اس حوالے سے کسی کا دباؤ قبول کیا جائے گا، اسمبلیاں توڑنے کا اعلان کرنے والا پہلے اپنے اندرونی خلفشار کو سنبھالے۔

یادرہے کہ حکومت اور پی ٹی آئی کے درمیان کشیدگی کو کم کرنے اور مذاکرات کو بحال کرنے کیلئے وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار اور صدر مملکت عارف علوی کے درمیان ایک اور ملاقات ہوئی ہے، ملاقات میں دونوں رہنماؤں کے درمیان اسمبلیوں کی تحلیل، عام انتخابات کے انعقاد ، صوبوں اور وفاقی حکومت کے درمیان ورکنگ ریلیشن شپ سمیت اہم سیاسی و اقتصادی امور پر تبادلہ خیا ل کیا گیا ہے۔

ملاقات میں وفاقی وزیر خزانہ نے آئی ایم ایف معاہدےپر عمل درآمد، درآمدی بل کم کرنے اور سیاسی استحکام کیلئے اپوزیشن سے تعاون کی درخواست کی، صدر عارف علوی نے تمام امور پر پی ٹی آئی قیادت سے بات چیت کرنے کا وعدہ کیا۔

Munafiq Fitna Maulvi.
 
Sponsored Link