گوجرہ ریپ کیس:ملزمان بااثر ہیں دھمکیاں دے رہے ہیں:متاثرہ لڑکی کابیان ریکارڈ

toll.jpg


گوجرہ ریپ کیس میں پیش رفت،متاثرہ لڑکی نے بیان ریکارڈ کروا دیا

گوجرہ موٹروے پر زیادتی کا شکار ہونے والی لڑکی نے اپنا بیان ریکارڈ کرادیا،پولیس کو دیئے گئے بیان کے مطابق لڑکی نے مقامی پولیس کے رویئے پرعدم اطیمنان کا اظہار کردیا، لڑکی نے انکشاف کیا کہ ملزمان بااثر ہیں دھمکیاں دے رہے ہیں، جان کو خطرہ ہے،کچھ ہوا تو ذمہ دار ملزمان ہوں گے،مقامی پولیس کا رویہ بھی نامناسب ہے۔

بیان میں متاثرہ لڑکی نے حکام بالا سے انصاف کا مطالبہ کردیا، کہا ملزمان کو کیفرکردار تک پہنچانا چاہتی ہوں،عدالت میں بیان ریکارڈکرانےکیلئےدرخواست بھی کردی،ڈی پی او ٹوبہ ٹیک سنگھ نجیب الرحمان کا کہنا ہے کہ اب تک کی تفتیش میں متاثرہ لڑکی اور ملزمان میں پہلے سے ٹیلی فونک رابطے تھے،یہ اچانک ہونے والا واقعہ نہیں، کیس کی تمام زایوں سے تفتیش جاری ہے،حقائق جلد سامنے آجائیں گے۔


11 اکتوبرکو پیش آنے والے اقعے کا مقدمہ بھی درج ہے،جس کے مطابق تین ملزمان حماد،رحمان اور لائبہ نے گارڈن ٹاؤن کی رہائشی اٹھارہ سالہ ‏لڑکی کو نوکری کے انٹرویو کا جھانسہ دے کر کارمیں بیٹھایا اور فیصل آباد موٹر وے ایم فور پر ملزمان نے لڑکی کا ریپ کیا،جس کے بعد ملزمان متاثرہ لڑکی کو فیصل آباد انٹر چینج پر پھینک کر بھاگ گئے۔

وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے آئی جی پنجاب اور آر پی او فیصل آباد ‏سے رپورٹ طلب کرلی،دو ملزمان حماد احمد اور رحمان پولیس کی حراست میں ہیں،گرفتار دونوں ملزمان کو چار دن کے جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا گیا ہے، جبکہ زیادتی کے مقدمہ میں نامزد شریک ملزمہ ‏لائبہ کی تلاش جاری ہے۔
 
Advertisement

Cape Kahloon

Minister (2k+ posts)
DPO Najeeb rahman rap huwa ha na Tu mulzam ko pakro. Achank huwa ha ya wajha jo be ha ap ka kam mulzam pakerna ha.
Yeah bato abe tk kitnay pakray hain.
Larki ke zindgi tabha hu ge ha Oor tum bat rahay hu achank ne huwa ha.
Had ha .
 

Behrouz27

Minister (2k+ posts)
ملزمان بااثر ، عدالتیں کرپٹ ، جج بکاؤ مال ، جنسی زیادتیاں عروج پر ،کسی کی جان و مال عزت و آبرو محفوظ نہیں اور بنانے چلے ہیں ریاست مدینہ
 
Sponsored Link