روسی تیل پر پی ٹی آئی کی بات چیت پرعمل کیا جاتے تو اربوں ڈالرکافائدہ ہوتا

2hamamazhahrrussianaoil.jpg


سابق وفاقی وزیر حماد اظہر نے کہا ہے کہ روسی تیل کی خریداری کے حوالے سے تمام معاملات طے پاچکے تھے مگر پی ڈی ایم حکومت نے 14 ماہ ٹال مٹول سے کام لیا۔

مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ ٹویٹر پر سابق وفاقی وزیر توانائی حماد اظہر نے 30 مارچ2022 کو روس سے سستے تیل کی خریداری کے حوالے سے میں نے روسی حکام کی درخواست پر تمام بات چیت کو تحریری شکل دے کر روسی ہم منصب کو پاکستانی سفیر کے ذریعے مراسلہ بھجوایا تھا۔


حماد اظہر نے اس مراسلے کی نقل شیئر کرتے ہوئے کہا کہ سستے تیل کی پہلی کارگو پچھلے سال اپریل میں موصول کرنی تھی، مگر افسوس کہ پی ڈی ایم حکومت نے اس معاملے پر 14 ماہ ٹال مٹول سے کام لیا، اگر پی ٹی آئی حکومت کے ساتھ ہوئی بات چیت پر عمل کیا جاتا تو ملک کواربوں ڈالر کا فائدہ پہنچ سکتا تھا اور عوام پر مہنگائی کا بوجھ کم ہوسکتا تھا۔


انہوں نے مزید کہا کہ 14 ماہ گزرنے کے بعد اب رعایت بھی اتنی خاص نہیں ملی اور خام تیل کی مقدار بھی بہت تھوڑی خریدی گئی، اس حکومت نے ہر چیز کا بیڑہ غرق کرنے کا عزم کررکھا ہے، ماضی میں یہ کہتے رہے کہ ہماری ریفائنریز روسی تیل کو پراسس نہیں کرسکتی، عالمی دنیا سے پاکستان پر معاشی پابندیاں لگ سکتی ہیں ، میں نے بار بار ان کے ایسے بہانوں پر جواب دیتے ہوئےکہا کہ یہ سب جھوٹ ہے۔
 

merapakistanzindabad

MPA (400+ posts)
2hamamazhahrrussianaoil.jpg


سابق وفاقی وزیر حماد اظہر نے کہا ہے کہ روسی تیل کی خریداری کے حوالے سے تمام معاملات طے پاچکے تھے مگر پی ڈی ایم حکومت نے 14 ماہ ٹال مٹول سے کام لیا۔

مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ ٹویٹر پر سابق وفاقی وزیر توانائی حماد اظہر نے 30 مارچ2022 کو روس سے سستے تیل کی خریداری کے حوالے سے میں نے روسی حکام کی درخواست پر تمام بات چیت کو تحریری شکل دے کر روسی ہم منصب کو پاکستانی سفیر کے ذریعے مراسلہ بھجوایا تھا۔


حماد اظہر نے اس مراسلے کی نقل شیئر کرتے ہوئے کہا کہ سستے تیل کی پہلی کارگو پچھلے سال اپریل میں موصول کرنی تھی، مگر افسوس کہ پی ڈی ایم حکومت نے اس معاملے پر 14 ماہ ٹال مٹول سے کام لیا، اگر پی ٹی آئی حکومت کے ساتھ ہوئی بات چیت پر عمل کیا جاتا تو ملک کواربوں ڈالر کا فائدہ پہنچ سکتا تھا اور عوام پر مہنگائی کا بوجھ کم ہوسکتا تھا۔


انہوں نے مزید کہا کہ 14 ماہ گزرنے کے بعد اب رعایت بھی اتنی خاص نہیں ملی اور خام تیل کی مقدار بھی بہت تھوڑی خریدی گئی، اس حکومت نے ہر چیز کا بیڑہ غرق کرنے کا عزم کررکھا ہے، ماضی میں یہ کہتے رہے کہ ہماری ریفائنریز روسی تیل کو پراسس نہیں کرسکتی، عالمی دنیا سے پاکستان پر معاشی پابندیاں لگ سکتی ہیں ، میں نے بار بار ان کے ایسے بہانوں پر جواب دیتے ہوئےکہا کہ یہ سب جھوٹ ہے۔
I was reading Russian news that pakistan paid in Yuan instead of dollars !!!
 

yaar 20

MPA (400+ posts)
کھوتے دے پتر۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔تو پھر سپریم کورٹ پر حملہ کرنے اور آئین شکنی کرنے والوں کے متعلق کیا خیال ہے۔۔۔۔۔۔
 
Sponsored Link