حکومت نے چیف جسٹس سمیت 3 ججز کیخلاف درخواست دائر کردی

naveed

Chief Minister (5k+ posts)
30142018cdb5a1b.png


وفاقی حکومت نے چیف جسٹس عمرعطا بندیال، جسٹس اعجاز الاحسن اور جسٹس منیب اختر کے خلاف سپریم کورٹ میں درخواست دائر کردی۔


حکومت نے درخواست میں آڈیو لیک کمیشن کے خلاف درخواستوں کے لیے نیا بینچ تشکیل دینے کی استدعا کی ہے۔

وفاقی حکومت نے متفرق درخواست آڈیولیک کمیشن کے خلاف درخواستوں کے مقدمے میں جمع کرائی۔

درخواست میں کہا گیا ہے کہ چیف جسٹس عمرعطا بندیال، جسٹس اعجازالاحسن اور جسٹس منیب اخترآڈیو لیک کا مقدمہ نہ سنیں، تینوں معزز ججز 5 رکنی لارجر بینچ میں بیٹھنے سے انکار کردیں، 26 مئی کو سماعت میں چیف جسٹس پر اٹھے اعتراض کو پذیرائی نہیں دی گئی، انکوائری کمیشن کے سامنے ایک آڈیو چیف جسٹس کی خوش دامن سے متعلقہ ہے۔

درخواست میں مزید کہا گیا کہ عدالتی فیصلوں اور ججز کوڈ آف کنڈیکٹ کے مطابق جج اپنے رشتہ کا مقدمہ نہیں سن سکتا، ماضی میں ارسلان افتخار کیس میں چیف جسٹس افتخار چوہدری نے اعتراض پر خود کو بینچ سے الگ کرلیا تھا، مبینہ آڈیو لیک جسٹس اعجازالاحسن اور جسٹس منیب اختر سے بھی متعلقہ ہیں۔

Source
 

Bull

Minister (2k+ posts)
Hafiz jee sary hoh-day bant kyown nahin datay PDM main. Na rahay bans aur na bajay gee bansury.
 
Last edited:
Sponsored Link