Misuse of Me Too: A College Lecturer Commits Suicide Upon False Allegations

Kashif Rafiq

Chief Minister (5k+ posts)

ایم اے او کالج لاہور میں انگلش پروفیسر افضل محمود نے خاتون طالب علم کی جانب سے ہراساں کرنے کے الزام پر اور انکوائری کے بعد اس کے غلط ثابت ہونے کے باوجود انتظامیہ کی جانب سے تصدیقی خط جاری نہ کرنے پر خودکشی کر لی ہے۔

ایم اے او کالج میں انگریزی کے استاد افضل محمود نے نو اکتوبر کو زہر کھا کر اپنی زندگی کا خاتمہ کیا۔ استاد کو انکوائری کمیٹی نے کلئیر قراردیا تھا لیکن کالج انتظامیہ تصدیقی لیٹر نہیں دے رہی تھی اور استاد مسلسل بدنامی سے دلبرداشتہ ہوگیا تھا۔


استاد نے خط میں لکھا کہ میری بیوی بھی آج مجھے بدکردار قرار دے کر گھر چھوڑکر جا چکی ہے۔ میرے پاس زندگی میں کچھ نہیں بچا۔ میں کالج اور گھر میں ایک بدکردار آدمی کے طور پر جانا جاتا ہوں۔ اس وجہ سے میرے دل اور دماغ میں ہر وقت تکلیف ہوتی ہے۔ اگر کسی وقت ان کی موت ہو جائے تو ان کی تنخواہ اور اس الزام سے بریت کا خط ان کی والدہ کو دے دیا جائے۔






 
Advertisement

!n5aNiTy

Minister (2k+ posts)
I hope and pray that if the allegation was really baselless.... i only hope tht girl gets raped for real.... infact gets gang banged..
 

Galaxy

Chief Minister (5k+ posts)
May be he had some other issues too.You dont take your life in a Harram way like this only because of this little incidence. What about million other incidences like this happening in Pakistan and world wide.People dont take their lives.
 
Sponsored Link

Latest Blogs Featured Discussion