خاتون کرکٹر کو ہراساں کرنے کا معاملہ، پی سی بی نے کوچ معطل کر دیا

2pcbsuspendedcoach.jpg

پاکستان کرکٹ بورڈ نے خاتون کرکٹر پر مبینہ طور پر جنسی طور پر ہراساں کرنے کے الزام میں جنوبی پنجاب ریجن کے کوچ کو معطل کر دیا۔ کوچ ندیم اقبال کو پچھلی انتظامیہ نے جنوبی پنجاب
ریجن کا کوچ تعینات کیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق ندیم اقبال نامی کوچ کے متعلق پولیس کی تحقیقات کا علم پی سی بی کو گزشتہ ہفتے ہوا۔ ایف آئی آر میں متاثرہ خاتون کے بیان کے مطابق خاتون کرکٹر گگو منڈی کی کالج ٹیم میں فاسٹ باؤلر ہیں، پانچ سال قبل کوچ نے ان کو ٹیم میں سلیکشن اور نوکری کی لالچ دیتے ہوئے اپنی رہائش گاہ پرآنے کیلئے کہا تھا۔

خاتون کرکٹر نے معطل کوچ پر الزام عائد کیا کہ تین سال قبل کوچ نے ان کو نشہ آور دوا کھلا کر ریپ کیا، بعد ازاں کوچ کا ایک دوست بھی اس شرمناک عمل میں شریک تھا۔ ملزم ندیم اقبال اور ان کے دوست نے ان کی قابلِ اعتراض ویڈیو بھی بنائیں اور سوشل میڈیا پر اپ لوڈ کیا۔



خاتون کرکٹر نے کہا کہ ایک جعلی نکاح نامہ بنایا گیا اور ان کو اپنی اہلیہ کے طور پر متعارف کرایا۔ خاتون کرکٹر کے بیان کے مطابق ملزم نے ان کو 29 مئی کو اغوا کیا، ٹارچر کیا اور اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا ان کے زیورات، موبائل فون اور نقدی بھی چھین لی۔

انہوں نے یہ بھی الزام عائد کیا کہ ندیم اقبال اور ان کے دوستوں نے دیگر خواتین کرکٹرز کے ساتھ بھی ایسے گھناؤنے کام کیے۔ شکایات کے بعد پی سی بی ڈائریکٹر ندیم خان نے کوچ کے خلاف تحقیقات کا آغاز کیا جس کے بعد ملزم کو معطل کر دیا گیا۔
 
Advertisement
Sponsored Link