اب حالات ایسے ہیں کہ الیکشن بھی کسی چیز کا حل نہیں ہے: شاہد خاقان عباسی

shahid-khaqan-abbasi-pti-election-pak.jpg


سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ اب صورتحال اس قدر خراب ہوچکی ہے کہ الیکشن بھی کسی چیز کا حل نہیں ہے۔

تفصیلات کے مطابق شاہد خاقان عباسی نے اے آر وائی نیوز کے پروگرام میں خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ حالات جس نہج پر پہنچ چکے ہیں اس میں کوئی ایک سیاسی جماعت ایسی صلاحیت نہیں رکھتی جو حالات کو بہتر کرسکے، کوئی ایک جماعت تنہا ملکی مسائل کو حل نہیں کرسکتی، تمام اسٹیک ہولڈرز کو ایک ساتھ بیٹھنا ہوگا اور ایجنڈا طےکرنا ہوگا اس کے علاوہ کوئی حل نہیں ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ بات معاشی نظام نہیں بلکہ پورے نظام کو تبدیل کرنے کی ہے، اس وقت پورے ملک کے نظام کو بدلنے کی ضرورت ہے، بیوروکریسی کے نظام کو تبدیل کرنا ہوگا، نیب کو ختم کرنا ہوگا، عدلیہ کا نظام بھی تبدیل ہوگا۔


شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ گزشتہ دو سالوں میں پاکستان کی تمام سیاسی جماعتیں حکومت میں رہ چکی ہیں، کوئی بھی مسائل کو حل نہیں کرسکا، وزیراعظم ذمہ داری لیں اور سب کو مدعو کریں، ایجنڈے کا تعین کریں، جو لوگ نہیں آتے یہ ان کی اپنی ذمہ داری ہوگی، جب ایجنڈا طے ہوجائے تو سب اس کی سپورٹ کریں۔

رہنما ن لیگ نے کہا کہ ہمیں سیاست کو ایک طرف رکھ کر ملکی مفاد کو ترجیح دینا ہوگی، میری سوچ ہے کہ مزید صوبے بنائے جائیں تاکہ وسائل تقسیم ہوسکیں، این ایف سی میں وفاق نےصوبوں کو پیسے دیئے مگر ذمہ داری نہیں دی گئی، صوبوں کو خود پیسے جمع کرنے کی ذمہ داری دینی چاہیے، آنے والے وقتوں کیلئے ہمیں ایک سیاسی سوچ چاہیے۔ف
 

Aliimran1

Prime Minister (20k+ posts)

Nooron Murdarion Fazlu Kanjar—— FOUJ ADALIYA aur Afsar shahi POLICE ko Awam ki Adalat Se saza-e-moat ——-They all failed and could not deliver Justice and basic stuff to the public —— Hang them all.​

 

Melanthus

Chief Minister (5k+ posts)
The dollar generals and PDM criminals deliberately created this situation to avoid elections.They had no intention of holding elections from day one.
 

Aliimran1

Prime Minister (20k+ posts)
The dollar generals and PDM criminals deliberately created this situation to avoid elections.They had no intention of holding elections from day one.

More precise —— THE GENERALS ——— to avoid Justice for Establishment​