بلاول بھٹو کا کچھ اہم عہدوں پر ایم کیو ایم کو موقع دینے کا عندیہ

10bilallwlabhuttomqmqmq.png


چیئرمین پاکستان پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے حکومت سازی کے عمل میں کچھ اہم عہدوں پر متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) کے رہنمائوں کو موقع دینے کا عندیہ دے دیا۔

بلاول بھٹو زرداری سے پارلیمنٹ ہائوس میں اجلاس کے بعد ایک صحافی نے سوال کیا کہ "یہ سننے میں آرہا ہے کہ کامران ٹیسوری کے گورنر سندھ ہونے پر پاکستان پیپلزپارٹی کو اعتراضات ہیں؟" جس پر ان کا کہنا تھا کہ ہماری کسی بھی ایک خاص شخص سے متعلق ایسی کوئی بات نہیں ہے۔

بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ حکومت سازی کے عمل میں مسلم لیگ ن سے ہونے والے مذاکرات میں بہت سے عہدوں پر ہمارے معاملات طے ہو چکے ہیں۔ پاکستان مسلم لیگ ن اور پیپلزپارٹی کے درمیان جن عہدوں کے لیے کوئی بات اب تک طے نہیں ہوئی ان پر مجھے امید ہے کہ متحدہ قومی موومنٹ پاکستان (ایم کیو ایم) کو ضرور موقع دیا جائے گا۔


قبل ازیں ذرائع کے مطابق مرکز میں حکومت سازی کے لیے پاکستان پیپلزپارٹی، مسلم لیگ ن اور متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کے درمیان ہونے والے اجلاس میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ سندھ کے لیے گورنر کا امیدوار مسلم لیگ ن لانا چاہتی ہے جہاں پیپلزپارٹی کا بھی اتحادی جماعت سے اتفاق ہے تاہم ایم کیو ایم کی خواہش ہے کہ گورنر سندھ ان کی جماعت سے ہو۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ حکومت سازی میں مسلم لیگ ن اور پیپلزپارٹی سے تعاون کے لیے ایم کیو ایم کی شرائط میں سے ایک گورنر سندھ ان کی جماعت سے ہونا ہے، وہ موجودہ گورنر سندھ کامران ٹیسوری کو ان کے عہدے پر برقرار رکھنا چاہتے ہیں۔ دوسری طرف پیپلزپارٹی اور مسلم لیگ ن نے گورنر سندھ کیلئے خوش بخت شجاعت کا نام دیا ہے اور دونوں جماعتوں کا اصرار ہے کہ انہیں گورنر سندھ بنایا جائے۔


https://twitter.com/x/status/1763608362346766737
 
Last edited by a moderator: