hijab ka islam se koi taluk nahi. yeh arab culture hay..Hasan Nisar

?? ??? ?? ????? ?????? ?? ???? ?????? ??? ?? ????? ?? ???? ??? ?? ???? ?? ?????? ?? ?? ?? ???? ?? ?? ?? ?????? ?? ????? ????? ????.. ?? ?? ??? ?? ?????? ?? ????? ?? ?? ?? ?? ?? ???? ?? ????? ?? ???? ?? ???? ... ????? ??? ??? ?? ????? ?????? ?? ?? ???? ?? ?? ?? ????? ????? ??? ???? ?? ??? ???? ?? ??? ?? .. ??? ?? ?? ??? ?? ???? ?? ?? ????? ???? ??? ?


 
Last edited by a moderator:

paki-muslim

Minister (2k+ posts)
Pmln propaganda against Hasan Nisar. Hahahaha .


th2_zps588ecc14.jpg
[/URL][/IMG]
PicOfHassanNisar.jpg

ah-hassan180508-4.jpg

has_zps07eb0da8.jpg
[/URL][/IMG]
 
Last edited:

iltaf

Chief Minister (5k+ posts)
hijab wali bt 100% sahi h, arab/persian culture h, though m nt against it, but it shouldnt be considered as Islamic ritual also.
 
hijab wali bt 100% sahi h, arab/persian culture h, though m nt against it, but it shouldnt be considered as Islamic ritual also.

matlab Quran men aur Ahadees-e-mubarka men jo details aaee hain wo sab ghalat hain baqol aap ke.. ? kia aap ka yeh bayan Quran aur Ahadees ka inkaar nahi?
 

zubair.maalick

MPA (400+ posts)
I agree .. his concepts are totally weird .. but note that he is note a religious scholar .. in religion he is just like us (not knowledgeable) .. so, why to ask or listen anything about religion from him.

Worship or west and hatred to Arabs can lead anybody having such concepts.
 

helloworld

Citizen

بات تو سچ ہے مگر بات ہے رسوائ کی- ایک دانشور کی باتیں ھمیں مذاق اور ایک مسخرے کی باتیں ھمیں اچھی لگتی ھیں. کیونکہ ھم خود مسخرے ہیں. ہمارے سروں پر دولے شاہ کے خول چڑھے ھوے ہیں. ہماری سوچنے سمجھنے کی صلاحیت ختم ہو چکی ہے. ھم دوسروں کے نقطہ نظر کو برداشت نہیں کر سکتے- ہر شخص مذہب کا ٹھکیدار بنا ہوا ہے- اور کیا کیا بیان کرو




th2_zps588ecc14.jpg
[/URL][/IMG]
PicOfHassanNisar.jpg

ah-hassan180508-4.jpg

has_zps07eb0da8.jpg
[/URL][/IMG]
 

210akash

Senator (1k+ posts)
​Han ya thek kaha rahe ha hijab arabic moshare ma se ha , lakin ALLAH ne quran ma is ka hukam diya ha.
 

Muhkam

MPA (400+ posts)
BAKWAS.

In fact, like many other stupidities, be-hijabi and embellishment was the culture of Arabs in the days of earlier ignorance before Islam. (Refer to Verse 33 of Surah al-ahzab)
 

samkhan

Chief Minister (5k+ posts)
حجاب کہ خلاف بات کرنے پر تو حسن نثار کو شاید معاف کیا جاسکتا ہے مگر وہ جو میاں محمد نواز شریف کہ ساتھ کتے والی میرا مطلب ہے انکی شان میں گستاخی کرتا ہے اسکا حساب اسے ضرور دینا ہوگا

 

Usama Tayyab

Minister (2k+ posts)
حجاب کہ خلاف بات کرنے پر تو حسن نثار کو شاید معاف کیا جاسکتا ہے مگر وہ جو میاں محمد نواز شریف کہ ساتھ کتے والی میرا مطلب ہے انکی شان میں گستاخی کرتا ہے اسکا حساب اسے ضرور دینا ہوگا

Spot on brother
 

Amal

Chief Minister (5k+ posts)

يَا أَيُّهَا النَّبِيُّ قُل لِّأَزْوَاجِكَ وَبَنَاتِكَ وَنِسَاءِ الْمُؤْمِنِينَ يُدْنِينَ عَلَيْهِنَّ مِن جَلَابِيبِهِنَّ ذَلِكَ أَدْنَى أَن يُعْرَفْنَ فَلَا يُؤْذَيْنَ وَكَانَ اللَّهُ غَفُورًا رَّحِيمًا.
(الاحزاب، 33 : 59)
اے نبی! اپنی بیویوں اور اپنی صاحبزادیوں اور مسلمانوں کی عورتوں سے فرما دیں کہ (باہر نکلتے وقت) اپنی چادریں اپنے اوپر اوڑھ لیا کریں، یہ اس بات کے قریب تر ہے کہ وہ پہچان لی جائیں (کہ یہ پاک دامن آزاد عورتیں ہیں) پھر انہیں (آوارہ باندیاں سمجھ کر غلطی سے) ایذاء نہ دی جائے، اور اللہ بڑا بخشنے والا بڑا رحم فرمانے والا ہے۔
دوسری جگہ ارشاد باری تعالی ہے:
وَقُل لِّلْمُؤْمِنَاتِ يَغْضُضْنَ مِنْ أَبْصَارِهِنَّ وَيَحْفَظْنَ فُرُوجَهُنَّ وَلَا يُبْدِينَ زِينَتَهُنَّ إِلَّا مَا ظَهَرَ مِنْهَا وَلْيَضْرِبْنَ بِخُمُرِهِنَّ عَلَى جُيُوبِهِنَّ وَلَا يُبْدِينَ زِينَتَهُنَّ إِلَّا لِبُعُولَتِهِنَّ أَوْ آبَائِهِنَّ أَوْ آبَاءِ بُعُولَتِهِنَّ أَوْ أَبْنَائِهِنَّ أَوْ أَبْنَاءِ بُعُولَتِهِنَّ أَوْ إِخْوَانِهِنَّ أَوْ بَنِي إِخْوَانِهِنَّ أَوْ بَنِي أَخَوَاتِهِنَّ أَوْ نِسَائِهِنَّ أَوْ مَا مَلَكَتْ أَيْمَانُهُنَّ أَوِ التَّابِعِينَ غَيْرِ أُوْلِي الْإِرْبَةِ مِنَ الرِّجَالِ أَوِ الطِّفْلِ الَّذِينَ لَمْ يَظْهَرُوا عَلَى عَوْرَاتِ النِّسَاءِ وَلَا يَضْرِبْنَ بِأَرْجُلِهِنَّ لِيُعْلَمَ مَا يُخْفِينَ مِن زِينَتِهِنَّ وَتُوبُوا إِلَى اللَّهِ جَمِيعًا أَيُّهَا الْمُؤْمِنُونَ لَعَلَّكُمْ تُفْلِحُونَ.
(النور، 24 : 31)
اور آپ مومن عورتوں سے فرما دیں کہ وہ (بھی) اپنی نگاہیں نیچی رکھا کریں اور اپنی شرم گاہوں کی حفاظت کیا کریں اور اپنی آرائش و زیبائش کو ظاہر نہ کیا کریں سوائے (اسی حصہ) کے جو اس میں سے خود ظاہر ہوتا ہے اور وہ اپنے سروں پر اوڑھے ہوئے دوپٹے (اور چادریں) اپنے گریبانوں اور سینوں پر (بھی) ڈالے رہا کریں اور وہ اپنے بناؤ سنگھار کو (کسی پر) ظاہر نہ کیا کریں سوائے اپنے شوہروں کے یا اپنے باپ دادا یا اپنے شوہروں کے باپ دادا کے یا اپنے بیٹوں یا اپنے شوہروں کے بیٹوں کے یا اپنے بھائیوں یا اپنے بھتیجوں یا اپنے بھانجوں کے یا اپنی (ہم مذہب، مسلمان) عورتوں یا اپنی مملوکہ باندیوں کے یا مردوں میں سے وہ خدمت گار جو خواہش و شہوت سے خالی ہوں یا وہ بچے جو (کم سِنی کے باعث ابھی) عورتوں کی پردہ والی چیزوں سے آگاہ نہیں ہوئے (یہ بھی مستثنٰی ہیں) اور نہ (چلتے ہوئے) اپنے پاؤں (زمین پر اس طرح) مارا کریں کہ (پیروں کی جھنکار سے) ان کا وہ سنگھار معلوم ہو جائے جسے وہ (حکمِ شریعت سے) پوشیدہ کئے ہوئے ہیں، اور تم سب کے سب اللہ کے حضور توبہ کرو اے مومنو! تاکہ تم (ان احکام پر عمل پیرا ہو کر) فلاح پا جاؤ۔
عورت کے لیے ہاتھ پاؤں اور چہرے کے علاوہ سارا جسم ستر ہے، جس کو چھپانا اس پر فرض ہے۔
 

akbar41

Senator (1k+ posts)
hasan nisar jab tumko deen ki samjh nai tu bakwas kion karta hai, apno biwi aur beti ko bikni pahna beach par le kar jaa,we dont care, we all know tum aik sharabi hoo, dont talk about ISLAM.UR WIFE AUR BETI KE BOY FRIEND HAIN, IF NOT WHY, GHATIA BANDA
 

khamosh awam

MPA (400+ posts)

يَا أَيُّهَا النَّبِيُّ قُل لِّأَزْوَاجِكَ وَبَنَاتِكَ وَنِسَاءِ الْمُؤْمِنِينَ يُدْنِينَ عَلَيْهِنَّ مِن جَلَابِيبِهِنَّ ذَلِكَ أَدْنَى أَن يُعْرَفْنَ فَلَا يُؤْذَيْنَ وَكَانَ اللَّهُ غَفُورًا رَّحِيمًا.
(الاحزاب، 33 : 59)
اے نبی! اپنی بیویوں اور اپنی صاحبزادیوں اور مسلمانوں کی عورتوں سے فرما دیں کہ (باہر نکلتے وقت) اپنی چادریں اپنے اوپر اوڑھ لیا کریں، یہ اس بات کے قریب تر ہے کہ وہ پہچان لی جائیں (کہ یہ پاک دامن آزاد عورتیں ہیں) پھر انہیں (آوارہ باندیاں سمجھ کر غلطی سے) ایذاء نہ دی جائے، اور اللہ بڑا بخشنے والا بڑا رحم فرمانے والا ہے۔
دوسری جگہ ارشاد باری تعالی ہے:
وَقُل لِّلْمُؤْمِنَاتِ يَغْضُضْنَ مِنْ أَبْصَارِهِنَّ وَيَحْفَظْنَ فُرُوجَهُنَّ وَلَا يُبْدِينَ زِينَتَهُنَّ إِلَّا مَا ظَهَرَ مِنْهَا وَلْيَضْرِبْنَ بِخُمُرِهِنَّ عَلَى جُيُوبِهِنَّ وَلَا يُبْدِينَ زِينَتَهُنَّ إِلَّا لِبُعُولَتِهِنَّ أَوْ آبَائِهِنَّ أَوْ آبَاءِ بُعُولَتِهِنَّ أَوْ أَبْنَائِهِنَّ أَوْ أَبْنَاءِ بُعُولَتِهِنَّ أَوْ إِخْوَانِهِنَّ أَوْ بَنِي إِخْوَانِهِنَّ أَوْ بَنِي أَخَوَاتِهِنَّ أَوْ نِسَائِهِنَّ أَوْ مَا مَلَكَتْ أَيْمَانُهُنَّ أَوِ التَّابِعِينَ غَيْرِ أُوْلِي الْإِرْبَةِ مِنَ الرِّجَالِ أَوِ الطِّفْلِ الَّذِينَ لَمْ يَظْهَرُوا عَلَى عَوْرَاتِ النِّسَاءِ وَلَا يَضْرِبْنَ بِأَرْجُلِهِنَّ لِيُعْلَمَ مَا يُخْفِينَ مِن زِينَتِهِنَّ وَتُوبُوا إِلَى اللَّهِ جَمِيعًا أَيُّهَا الْمُؤْمِنُونَ لَعَلَّكُمْ تُفْلِحُونَ.
(النور، 24 : 31)
اور آپ مومن عورتوں سے فرما دیں کہ وہ (بھی) اپنی نگاہیں نیچی رکھا کریں اور اپنی شرم گاہوں کی حفاظت کیا کریں اور اپنی آرائش و زیبائش کو ظاہر نہ کیا کریں سوائے (اسی حصہ) کے جو اس میں سے خود ظاہر ہوتا ہے اور وہ اپنے سروں پر اوڑھے ہوئے دوپٹے (اور چادریں) اپنے گریبانوں اور سینوں پر (بھی) ڈالے رہا کریں اور وہ اپنے بناؤ سنگھار کو (کسی پر) ظاہر نہ کیا کریں سوائے اپنے شوہروں کے یا اپنے باپ دادا یا اپنے شوہروں کے باپ دادا کے یا اپنے بیٹوں یا اپنے شوہروں کے بیٹوں کے یا اپنے بھائیوں یا اپنے بھتیجوں یا اپنے بھانجوں کے یا اپنی (ہم مذہب، مسلمان) عورتوں یا اپنی مملوکہ باندیوں کے یا مردوں میں سے وہ خدمت گار جو خواہش و شہوت سے خالی ہوں یا وہ بچے جو (کم سِنی کے باعث ابھی) عورتوں کی پردہ والی چیزوں سے آگاہ نہیں ہوئے (یہ بھی مستثنٰی ہیں) اور نہ (چلتے ہوئے) اپنے پاؤں (زمین پر اس طرح) مارا کریں کہ (پیروں کی جھنکار سے) ان کا وہ سنگھار معلوم ہو جائے جسے وہ (حکمِ شریعت سے) پوشیدہ کئے ہوئے ہیں، اور تم سب کے سب اللہ کے حضور توبہ کرو اے مومنو! تاکہ تم (ان احکام پر عمل پیرا ہو کر) فلاح پا جاؤ۔
عورت کے لیے ہاتھ پاؤں اور چہرے کے علاوہ سارا جسم ستر ہے، جس کو چھپانا اس پر فرض ہے۔
Amaal aap batain tu bri achi kerte he,hamesha references bhi quran hadees k dete he,aur dhernu ki himayet bhi bri dil o jaan se kerte he,kya wahan aap ku perdahdaar bibian nazer aati he? aur woh ayat bhol jate he jis me aurtu kughar me tikke rehne ka hukm he?kya ye durukhi he.
1465290_10151803040212659_1184882299_n.jpg
 

khalilqureshi

Senator (1k+ posts)

بات تو سچ ہے مگر بات ہے رسوائ کی- ایک دانشور کی باتیں ھمیں مذاق اور ایک مسخرے کی باتیں ھمیں اچھی لگتی ھیں. کیونکہ ھم خود مسخرے ہیں. ہمارے سروں پر دولے شاہ کے خول چڑھے ھوے ہیں. ہماری سوچنے سمجھنے کی صلاحیت ختم ہو چکی ہے. ھم دوسروں کے نقطہ نظر کو برداشت نہیں کر سکتے- ہر شخص مذہب کا ٹھکیدار بنا ہوا ہے- اور کیا کیا بیان کرو
It doesn't matter who is saying right we have to accept it. Unfortunately or fortunately this time this DANISHWAR is wrong and this MASKHRA is right and because DANISHWAR SAHIB is wrong his these saying cannot be accepted. I am just pasting some ayahs ans there translation taken from another post of this forum. Thanks for the poster.
اسلام میں* عورت کے پردے کے بارے میں* کیا احکام ہیں؟


يَا أَيُّهَا النَّبِيُّ قُل لِّأَزْوَاجِكَ وَبَنَاتِكَ وَنِسَاءِ الْمُؤْمِنِينَ يُدْنِينَ عَلَيْهِنَّ مِن جَلَابِيبِهِنَّ ذَلِكَ أَدْنَى أَن يُعْرَفْنَ فَلَا يُؤْذَيْنَ وَكَانَ اللَّهُ غَفُورًا رَّحِيمًا.
(الاحزاب، 33 : 59)
اے نبی! اپنی بیویوں اور اپنی صاحبزادیوں اور مسلمانوں کی عورتوں سے فرما دیں کہ (باہر نکلتے وقت) اپنی چادریں اپنے اوپر اوڑھ لیا کریں، یہ اس بات کے قریب تر ہے کہ وہ پہچان لی جائیں (کہ یہ پاک دامن آزاد عورتیں ہیں) پھر انہیں (آوارہ باندیاں سمجھ کر غلطی سے) ایذاء نہ دی جائے، اور اللہ بڑا بخشنے والا بڑا رحم فرمانے والا ہے۔
دوسری جگہ ارشاد باری تعالی ہے:
وَقُل لِّلْمُؤْمِنَاتِ يَغْضُضْنَ مِنْ أَبْصَارِهِنَّ وَيَحْفَظْنَ فُرُوجَهُنَّ وَلَا يُبْدِينَ زِينَتَهُنَّ إِلَّا مَا ظَهَرَ مِنْهَا وَلْيَضْرِبْنَ بِخُمُرِهِنَّ عَلَى جُيُوبِهِنَّ وَلَا يُبْدِينَ زِينَتَهُنَّ إِلَّا لِبُعُولَتِهِنَّ أَوْ آبَائِهِنَّ أَوْ آبَاءِ بُعُولَتِهِنَّ أَوْ أَبْنَائِهِنَّ أَوْ أَبْنَاءِ بُعُولَتِهِنَّ أَوْ إِخْوَانِهِنَّ أَوْ بَنِي إِخْوَانِهِنَّ أَوْ بَنِي أَخَوَاتِهِنَّ أَوْ نِسَائِهِنَّ أَوْ مَا مَلَكَتْ أَيْمَانُهُنَّ أَوِ التَّابِعِينَ غَيْرِ أُوْلِي الْإِرْبَةِ مِنَ الرِّجَالِ أَوِ الطِّفْلِ الَّذِينَ لَمْ يَظْهَرُوا عَلَى عَوْرَاتِ النِّسَاءِ وَلَا يَضْرِبْنَ بِأَرْجُلِهِنَّ لِيُعْلَمَ مَا يُخْفِينَ مِن زِينَتِهِنَّ وَتُوبُوا إِلَى اللَّهِ جَمِيعًا أَيُّهَا الْمُؤْمِنُونَ لَعَلَّكُمْ تُفْلِحُونَ.
(النور، 24 : 31)
اور آپ مومن عورتوں سے فرما دیں کہ وہ (بھی) اپنی نگاہیں نیچی رکھا کریں اور اپنی شرم گاہوں کی حفاظت کیا کریں اور اپنی آرائش و زیبائش کو ظاہر نہ کیا کریں سوائے (اسی حصہ) کے جو اس میں سے خود ظاہر ہوتا ہے اور وہ اپنے سروں پر اوڑھے ہوئے دوپٹے (اور چادریں) اپنے گریبانوں اور سینوں پر (بھی) ڈالے رہا کریں اور وہ اپنے بناؤ سنگھار کو (کسی پر) ظاہر نہ کیا کریں سوائے اپنے شوہروں کے یا اپنے باپ دادا یا اپنے شوہروں کے باپ دادا کے یا اپنے بیٹوں یا اپنے شوہروں کے بیٹوں کے یا اپنے بھائیوں یا اپنے بھتیجوں یا اپنے بھانجوں کے یا اپنی (ہم مذہب، مسلمان) عورتوں یا اپنی مملوکہ باندیوں کے یا مردوں میں سے وہ خدمت گار جو خواہش و شہوت سے خالی ہوں یا وہ بچے جو (کم سِنی کے باعث ابھی) عورتوں کی پردہ والی چیزوں سے آگاہ نہیں ہوئے (یہ بھی مستثنٰی ہیں) اور نہ (چلتے ہوئے) اپنے پاؤں (زمین پر اس طرح) مارا کریں کہ (پیروں کی جھنکار سے) ان کا وہ سنگھار معلوم ہو جائے جسے وہ (حکمِ شریعت سے) پوشیدہ کئے ہوئے ہیں، اور تم سب کے سب اللہ کے حضور توبہ کرو اے مومنو! تاکہ تم (ان احکام پر عمل پیرا ہو کر) فلاح پا جاؤ۔
عورت کے لیے ہاتھ پاؤں اور چہرے کے علاوہ سارا جسم ستر ہے، جس کو چھپانا اس پر فرض ہے
As this is in Quran. No Muslim would deliberately ridicule it.
 

sajidliaqat07

Politcal Worker (100+ posts)
100% galat baat ki ha Hassan Nisar ne,

Islam phela hi Arab se ha. Hindustan men parde ka tasawar tha hi nahe tb.
Parde ka hukam ha to zahir ha Hijab to pehnna ho ga.