ڈپٹی چیئرمین سینیٹ نے ملک میں 9 نئے صوبے بنانےکی تجویز دیدی

naveed

Chief Minister (5k+ posts)


ڈپٹی چیئرمین سینیٹ مرزا محمد آفریدی نے ملک میں 9 نئے صوبے بنانےکی تجویز دے دی۔

نجی ٹی وی کو انٹرویو دیتے ہوئے ڈپٹی چیئرمین سینیٹ مرزا محمد آفریدی نےکہا کہ کراچی کو بالکل الگ صوبہ بنانا چاہیے، بلوچستان کے 3 اور پنجاب میں بھی 3 الگ صوبے بنانے چاہئیں۔

ڈپٹی چیئرمین سینیٹ کا کہنا تھا کہ وفاق کے زیر انتظام سابقہ علاقے فاٹا کو بھی الگ صوبہ بنانا چاہیے اور ایک صوبہ ہزارہ کا بھی بننا چاہیے۔

مرزا محمد آفریدی کا کہنا تھا کہ پاکستان میں جتنے زیادہ صوبے ہوں گے اتنا بہتر ہوگا، 18 ویں ترمیم کے بعد صوبوں کو اپنا اپنا حصہ ملتا رہےگا، نئے صوبے بنیں گے تو آپ کو این ایف سی ایوارڈ کے تحت حصہ ملتا رہےگا۔

ڈپٹی چیئرمین سینیٹ کا کہنا تھا کہ حکومت نے فاٹا کے ساتھ کیے گئے وعدے پورے نہیں کیے، آج بھی فاٹا کے لوگوں کو کئی تحفظات ہیں اور انہیں کئی مشکلات درپیش ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ہم نے وزیر خزانہ اسحاق ڈار کے ساتھ بھی فنڈز کا معاملہ اٹھایا ہے، ملک میں نئے صوبے بنیں گے تو مسائل حل ہوں گے۔

Source
 
  • Like
Reactions: Kam

Rizwan2009

Chief Minister (5k+ posts)
صوبے کی بجائے ڈویژن بنائیں ہر ضلع کو شہر کا درجہ دے کر اس کی اپنی سپریم کورٹ، ہائی کورٹ، عدالت، یونیورسٹی فائنانس ٹیکس سسٹم اور لوکل گورنمنٹ سسٹم بنادو صوبے بنانے کی ضرورت نہیں رہے گی۔
 

Kam

Minister (2k+ posts)
صوبے کی بجائے ڈویژن بنائیں ہر ضلع کو شہر کا درجہ دے کر اس کی اپنی سپریم کورٹ، ہائی کورٹ، عدالت، یونیورسٹی فائنانس ٹیکس سسٹم اور لوکل گورنمنٹ سسٹم بنادو صوبے بنانے کی ضرورت نہیں رہے گی۔
Dear provinces are already established bus ab cities ki Bari hai. . .
 

A.G.Uddin

Minister (2k+ posts)
https://twitter.com/x/status/1675971913590661120
Meanwhile reaction by PPP and Sindhi nationalists who narrate slogans of "Sindh Dharti Ma" 👇

Khopdi-Tod-Saale-Ka-meme-template-of-Heri-Pheri-1024x576.jpg