پاکستان میں اینٹی بائیوٹک ادویات کا بے دریغ استعمال, ہزاروں اموات کا انکشاف

89173_79312835.jpg


پاکستان میں اینٹی بائیوٹک ادویات کا بے دریغ استعمال, ہزاروں اموات کا انکشاف

عالمی ادارہ صحت نے پاکستانیوں کے لئے خطرے کی گھنٹہ بجادی, عالمی ادارہ صحت کی رپورٹ کے مطابق سال 2019 میں اینٹی بائیوٹک ادویات کے بے دریغ استعمال سے پاکستان میں 60 ہزار افراد کی اموات ہوئیں,عالمی ادارہ صحت کی رپورٹ کے مطابق ٹائیفائڈ، ڈائریا اور ٹی بی کا باعث بننے والے بیکٹیریا میں اینٹی بائیوٹک ادویات کے خلاف مزاحمت پیدا ہوگئی ہے۔

رپورٹ میں بتایا گیا کہ دنیا بھر میں سال 2019 میں اینٹی بائیوٹک ادویات کے خلاف مزاحمت رکھنے والے بیکٹیریا کی وجہ سے 13 لاکھ افراد کی ہلاکت ہوئی تھی۔ ماہرین صحت کے مطابق اینٹی بائیوٹک ادویات کا بے تحاشہ استعمال ان ادویات کو بیکٹیریا کے خلاف غیر مؤثر کر رہا ہے,عالمی ادارہ صحت نے اینٹی بائیوٹک ادویات کے خلاف مزاحمت رکھنے والے 15 بیکٹریا کی نئی لسٹ جاری کر دی ہے۔

اینٹی بائیوٹکس ادویات کے غیر ضروری استعمال سے بیکٹیریا خود کو اینٹی بائیوٹکس کے مطابق ڈھال لیتا ہے۔ یہ ان ادویات کا عادی ہو جاتا ہے اور پھر ایک وقت ایسا بھی آتا ہے کہ یہ ادویات بیکٹیریا پر اثر کرنا چھوڑ دیتی ہیں۔
 
Featured Thumbs
https://www.siasat.pk/data/files/s3/antib medi pakistan.jpg