وفاقی حکومت نے بجٹ میں دفاعی اداروں کیلئے کتنے ارب روپے مختص کئے ہیں؟


difah11i1h.jpg


وفاقی حکومت نےمالی سال 25-2024 کے بجٹ میں وزارت داخلہ اور اس کے ماتحت قانون نافذ کرنے والے اداروں کے لیے27 کھرب 99 ارب روپے سے زائد اور دفاعی اداروں کیلئے 2221 ارب مختص کرنے کی تجویز پیش کردی۔

بجٹ دستاویزات کے مطابق وزارت داخلہ کے لیے مجموعی طور پر 27 کھرب99 ارب روپے سے زائد کا بجٹ مختص کرنے کی تجویز دی گی، جس کے تحت ماتحت کمبائنڈ سول آرمڈ فورسز کے لیے 23 کھرب23 ارب مختص ہوں گے,اسی طرح آئی سی ٹی کے لیے 20 ارب 41 کروڑ روپے، نیکٹا کے لیے ایک ارب ایک کروڑ اور وزارت داخلہ ڈویژن کے لیے 15 ارب 36 کروڑ مختص کرنے کی تجویز دی گی ہے۔

بجٹ دستاویزات میں بتایا گیا کہ آئندہ مالی سال میں اسلام آباد پولیس کے لیے 14 ارب 98 کروڑ 87 لاکھ روپے، پنجاب رینجرز کے لیے 16 ارب 2 کروڑ 72 لاکھ روپے، چاروں صوبوں کی پولیس کے لیے 209 ارب روپے مختص کرنے کی تجویز دی گئی ہے۔

وفاقی حکومت نے آئندہ مالی سال کے بجٹ میں مجموعی طور پر دفاع کے لیے 2 ہزار 144 ارب روپے مختص کرنے کی تجویز دی ہے,دفاعی اداروں کیلئے 2221 ارب مختص کرنے کی تجویزبجٹ دستاویزات کے مطابق حکومت کی جانب سے وزارت دفاع کے لیے 7 ارب 86 کروڑ روپے مختص کرنے کی تجویز دی گئی ہے۔

وزارت دفاع کے علاوہ بجٹ میں کنٹونمنٹ ایریا میں تعلیمی اداروں کے لیے 14 ارب 31 کروڑ اور دفاعی اداروں کے لیے مجموعی طور پر 2 ہزار122 ارب روپے مختص کرنے کی تجویز دی گئی ہے۔

دستاویزات کے مطابق پاک فوج کے لیے ایک ہزار 9 ارب روپے، پاکستان ائیرفورس کے لیے 451 ارب روپے اور پاکستان نیوی کے لیے 230 ارب روپے مختص کرنے کی تجویز دی گئی ہے۔