مرنے کےخوف پر قابو پالیا ہے:عمران خان کا برطانوی جریدے دی ٹائمز کو انٹرویو

imran-khan-pti-kkn-int.jpg


چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کا کہنا تھا کہ 26 سال پہلے سیاست میں آیا جب سے جان خطرے میں ہے لیکن میں نے مرنے کے خوف پر قابو پالیا۔

تفصیلات کے مطابق چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان نے برطانوی جریدے دی ٹائمز کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ میرا قاتلانہ حملےمیں بچنا مشکل تھا ،اللہ کا شکر ادا کیا۔ سابق وزیراعظم نے کہا 26سال پہلےسیاست میں آیا جب سےمیری جان خطرےمیں ہے لیکن میں نے مرنے کے خوف پر قابو پالیا ہے۔

چیئرمین پی ٹی آئی نے بتایا کہ میری اہلیہ نے حملے کے بعد مجھے ٹی وی پر ہاتھ ہلاتے ہوئے دیکھا، اہلیہ سمجھیں میں ٹھیک ہوں ، انہیں اندازہ نہیں تھا کہ مجھے تین گولیاں لگیں۔

یاد رہے چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے امریکی نشریاتی ادارے کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا تھا کہ احتجاج کرنا ہماراآئینی حق ہے، ملک میں ناانصافی کیخلاف آوازاٹھارہےہیں، چوروں کا ٹولہ ہم پر مسلط کیا گیا۔

چیئرمین تحریک انصاف نے کہا تھا کہ فوری الیکشن نہیں ہوتے تو مجھے فرق نہیں پڑتا کیونکہ ہماری مقبولیت مین دن بدن اضافہ ہورہا ہے لیکن الیکشن نہ ہونے سے ملک میں انتشار پھیل جائے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ امریکا جمہوری ریاست ہے،جمہوریت تنقید کو قبول کرتی ہے ، چینج سازش کی وجہ سے امریکا سے تعلقات نہیں توڑسکتا ہے، امریکہ کے ساتھ پاکستان کے تعلقات ہمارے لیے بہت اہم ہیں۔

ہم چاہتے ہیں پاکستان کے فیصلے پاکستان میں ہوں، ہم نہیں چاہتے کوئی ہمیں ڈکٹیشن دے کہ فلاں سے تیل لینا ہے یا نہیں۔ ملک بھی میراہے اور فوج بھی میری ہے اگر میں اپنی پارٹی سے کسی برے شخص کو نکالوں گا تو پارٹی میں بہتری ہو گی دو پارٹیوں نے جرائم پیشہ لوگوں کواداروں میں لگا کر انہیں تباہ کیا۔

چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے یہ بھی کہا ہے کہ مجھے قوم کامفاد عزیز ہے رجیم چینج سازش کے باعث امریکا سے تعلقات نہیں توڑسکتا دو، تین کالی بھیڑوں کے ساتھ ہمیں مسئلہ تھا، اگر ہم دو، تین لوگوں کے خلاف ہیں تو مطلب پورے ادارے کے خلاف نہیں اچھے اور برے لوگ ہرجگہ موجود ہوتے ہیں۔
 
Sponsored Link