لڑنے کے لیے صرف حوصلہ کافی نہیں ہوتا۔ حکمت بھی چاہئے ہوتی ہے

News_Icon

Chief Minister (5k+ posts)
https://twitter.com/x/status/1804005056619925794
آج سے قریباً ڈیڑھ دہائی پہلے ہواؤں پر تیرتی ایک آواز ہمارے پہاڑوں پر چاندنی کیطرح اتری، راتوں رات اس کی روشنی میں پوری وادی نہلا گئی، لوگوں کی آنکھیں اس روشنی سے دمک اٹھتی تھیں۔ جن لبوں پر ذکر آتا تھا ان پر انگلیاں دبا کر پلکوں سے لگائی جاتیں۔ ٹمٹماتی آنکھوں، فرط جذبات سے دہکتے گالوں کے ساتھ عورتیں کلائیوں سے طلائی زیور اتار سفید چادروں پر ڈھیر کرتی جاتیں۔ کڑیل جوانوں نے جوانیاں دان دینے کی قسمیں کھائیں بزرگوں نے پیری میں اپنا مال ومتاع لٹا دیا۔ اللہ کی رضا کی خاطر۔ ایک دن علم ہوا وہ روشنی اتنی خیرہ کن اس لیے تھی کہ فریب کے خدوخال ڈھکے رہیں۔ چندھیائی آنکھوں کے سامنے رچنے والا کھیل تب واضح ہوا جب اندھیرے کے سوداگر اپنے جُبے اتار کر میدان میں اترے۔ مگر تب بہت دیر ہوچکی تھی۔ اب سامنے آگ اور خون کا دریا تھا۔ اور آبلا پائی کا ایک لمبا سفر درپیش۔۔ ٹوٹے، بکھرے، گرتے، سنبھلتے بڑا رستہ طے کرلیا۔ منزل کے قریب، رستے زخموں کو سہلانے چار گھڑی چھاؤں میں بیٹھے ہی تھے کہ پہاڑوں کی چوٹیوں پر وہی سیاہ مکروح سائے منڈلاتے دیکھے۔ جہاں ہاتھ سے روکنے کا حوصلہ تھا وہاں ہاتھ سے روکا، جب اختیار چھن گیا زبان سے روکا۔ مگر جس عفریت کی جڑوں کو آپ کے اپنوں کے ہاتھ دوام دے رہے ہوں اُس سے لڑنے کے لیے صرف حوصلہ کافی نہیں ہوتا۔ حکمت بھی چاہئے ہوتی ہے۔ مسئلہ درپیش ایک آکٹوپس ہے کہ جس نے سر پر بیٹھ کر آنکھیں ڈھانپ دیں ہیں، سوچنے سمجھنے کی صلاحیت کو اپنے وزن تلے دبا دیا ہے اور ساتھ ہی ہاتھوں پیروں سے لپٹ کر انہیں ناکارہ بنا رہا ہے۔ جو دِکھ رہا ہے، محظ وہی تصویر نہیں۔ جو پس پردہ ہیں وہ حقیقتیں اپنے گھناؤنے پن میں فقید المثل ہیں مگر جب حسیں بحال ہوں گی تو پلوں کے نیچے سے پانی بہہ چکا ہوگا۔ اور آپ مفلوج، مفلوک اُسی آبلہ پائی کے سفر میں ہوں گے۔ سیاہ سائے حسب ضرورت، حسب موقع، حسب منشاء کبھی پہاڑوں کے اُس پار دھکیلے جائیں گے کبھی اس پار۔ کبھی اپنی روشنی سے آنکھیں خیرہ کریں گے تو لبھی اپنی آگ سے جسم راکھ۔۔
 

Mocha7

Minister (2k+ posts)
ہمارے پاس ایک ادمی ہے جو اس سائنس کو بخوبی جانتا ہے
Acha?!? Ab tumhein Asim yaad araha hai?!?
🤔

800px-General_Asim_Munir_%28Pakistan%29.jpg
 

Jaguar707

MPA (400+ posts)
Say what he may, fact remains, Murad Saeed has preferred to be a boy of a cute old wealthy Afghan in Kabul in return of free room & board then to lead a revolution towards Adiala.

Imagine, Murad announcing a march from KPK to Adiala secured by KPK Police. In less then 6 hrs they will have no option but to release Khan.

But, no one wants to die for a man hiding behind a ugly black iron bucket.
 

digitalzygot1

Minister (2k+ posts)
Say what he may, fact remains, Murad Saeed has preferred to be a boy of a cute old wealthy Afghan in Kabul in return of free room & board then to lead a revolution towards Adiala.

Imagine, Murad announcing a march from KPK to Adiala secured by KPK Police. In less then 6 hrs they will have no option but to release Khan.

But, no one wants to die for a man hiding behind a ugly black iron bucket.
Tere maa ko bhe issse nay yadha hay barway. Har jaga galian khanay aaa jata hay begherat