لندن شہر میں شہر بسانے کا منصوبہ تیار

saeenji

Minister (2k+ posts)
[h=1]لندن شہر میں شہر بسانے کا منصوبہ تیار[/h]
288953-endlesscity-1411053562-609-640x480.jpg

چینی انجینئر نے لندن میں تعمیر کیلئے ایسا ٹاور ڈیزائن کیا ہے جس میں ناصرف گھر بلکہ دکانیں اور پارکس بھی ہوں گے۔ فوٹو؛ کیٹرز

لندن: بلند و بالا عمارتیں بنانا ہمیشہ سے انسانی فطرت میں شامل رہا ہے۔ ہر دور میں جدید، خوبصورت اور بلند عمارتیں تعمیر کی گئیں۔ آج سائنس کے ترقی یافتہ دور میں تو اس دوڑ میں فن تعمیر کے ایسے ایسے شاہکار تعمیر کئے گئے ہیں جن کو دیکھ کر عقل حیران رہ جائے لیکن ابھی یہ سفر ختم نہیں ہوا بلکہ اس کو مزید عروج میں پہنچایا جا رہا ہے لندن میں ایسی عظیم الشان عمارت کی تعمیر کا منصوبہ تیار کیا گیا ہے جو عمارت کم اور شہر زیادہ نظر آئےگا۔

0-endlesscity-1411053671.jpg


چین کے کم فائی تائی نامی سپر اسکائی اسکریپر ایوارڈ یافتہ انجینئر نے اس منصوبے کو حقیقت کا رنگ دینے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے۔ کم فائی کی جانب سے ڈیزائن کی گئی اس عمارت کو ’اینڈ لیس‘ کا نام دیا گیا ہے۔ اس بلند و بالا عمارت کی لمبائی 300 میٹر ہوگی۔ کم فائی کا کہنا ہے کہ ان کی کوشش ہے کہ وہ صرف ایک بلند عمارت کی تعمیر نہیں کر رہے بلکہ ایک شہر بسا رہے ہیں۔ اس ٹاور میں دوگلیاں ہوں گی جو پوری عمارت میں گھومیں گی جب کہ اس کے دونوں جانب نہ صرف گھر ہی گھر ہوں گے بلکہ دوکانیں اور پارک بھی بنائے جائیں گے جہاں جب آپ کا دل کرے آپ کسی پارک میں جائیں اورخوب انجوائے کریں۔

0-endlesscity-1411053743.jpg


ڈیزائنر کا کہنا ہے کہ اس عمارت سے پورے لندن سے رابطہ رکھنے کے ساتھ ساتھ پورے لندن کا نظارہ بھی کیا جا سکے گا۔ انہوں نے کہا کہ مجھے امید ہے عمارت کے اندر تعمیر کیئے گئے الگ الگ پلازہ وہاں آنے والوں کے لیے دلکش نظارہ پیش کریں گے۔


0-endlesscity-1411053773.jpg


اس خواب ناک ٹاور کو حقیقت کا رنگ دینے والی تعمیراتی کمپنی شور کی منیجر الینا ویلکارس کا کہنا ہے کہ ٹاور کے اندر آپ کے گھومنے کی کوئی حد نہیں ہوگی آپ پورے شہر کا چکر لگا سکتے ہیں۔ ان کا کہنا تھاکہ عمارت کی گلیاں چھت کے قریب زیادہ وسیع ہوں گی تاکہ قدرتی روشنی اور ہوا کا حصول ممکن ہو جس کی بدولت توانائی کا خرچہ کم کیا جاسکے گا۔ عمارت میں بارش کے پانی کو جمع کرنے اور اسکو ری سائیکل کے ذریعے دوبارہ استعمال کرنے کا نطام بھی موجود ہوگا۔


0-endlesscity-1411053883.jpg


منصوبے کے تحت یہ ٹاور لندن کے اونچے ترین شارڈ ٹاور اور نیویارک کے کرسلر سے اونچا ہوگا۔ ڈیزائنرز کو امید ہے کہ اس عمارت کی تعمیر سے لوگ مستقبل میں عمارتوں کے عمودی ڈیزائنز پر زیادہ توجہ دیں گے۔

Source



 
Last edited:

Zindabad4u

Senator (1k+ posts)
Nawaz family and arab family going to be invest 80% they got enough money from the ppl of Pakistan... thats why nawaz family going to london to see model of that tower.... anyway already got east london "ilford tower "