لاہور میں جماعت الدعوۃ کی ثالثی عدالت

hmkhan

Senator (1k+ posts)

لاہور میں جماعت الدعوۃ کی ثالثی عدالت




160407162734_jud_supporters_640x360_epa.jpg



لاہور میں مذہبی تنظیم جماعت الدعوۃ نے لوگوں کے باہمی جھگڑوں کے حل کے لیے ’دارالقضاء شریعہ‘ کے نام سے اپنا ثالثی نظام قائم کر لیا ہے جہاں فریقین فوری اور قابل قبول حل کے لیے رجوع کر رہے ہیں۔

لاہور سے صحافی اے این خان کے مطابق ثالثی عدالت چوبرجی لاہور میں واقع جماعت الدعوۃ کے ہیڈکوارٹرز جامعہ قادسیہ میں قائم کی گئی ہے، جہاں کوئی بھی اپنے مسائل کے حل کے لیے درخواست دے سکتا ہے جسے سماعت اور کارروائی کے لیے ’دارالقضا شریعہ‘ کو بھیج دیا جاتا۔ ’دارالقضا شریعہ‘ کے قاضی کو عدالتی معاونین کی مدد بھی حاصل ہے جنھیں خادمین کہا جاتا ہے۔

جماعت الدعوۃ کے مرکزی ترجمان یحییٰ مجاہد کے مطابق یہ ثالثی نظام 90 کی دہائی سے قائم ہے جہاں لوگ اپنے مسائل اور باہمی جھگڑوں کی تصفیوں کے لیے رجوع کرتے ہیں اور ’دارالقضا شریعہ‘ ثالثی عدالت یا کونسل کی طرح ان کے درمیان فیصلے کرتی ہے اور یہ کام ملک کے مروجہ قوانین اور عدالتی نظام کے خلاف یا متوازی نظام قطعاً نہیں ہے کیونکہ ہمارا عدالتی نظام لوگوں کے درمیان مصالحت کے لیے ثالثی یاپنجائیتی سسٹم کو سپورٹ کرتا ہے۔

اس سلسلے میں جب پنجاب حکومت کے ترجمان سید زعیم قادری سے رابطہ کیا تو انہوں نے کہا کہ صوبہ میں کہیں بھی کوئی متوازی عدالتی نظام موجود نہیں ہے۔ جماعت الدعوۃ کے مرکز جامعہ قادسیہ میں بھی کسی قسم کی کوئی عدالت قائم نہیں کی گئی۔

صوبہ میں کہیں بھی کوئی متوازی عدالتی نظام موجود نہیں ہے۔ جماعت الدعوہ کے مرکز جامعہ قادسیہ میں بھی کسی قسم کی کوئی عدالت قائم نہیں کی گئی
سید زعیم قادری، ترجمان پنجاب حکومت


انھوں نے کہا کہ جامعہ قادسیہ میں بھی مصالحتی اور ثالثی طرز کی پنجائیت کام کر رہی ہے جو لوگوں کے درمیان ان کی رضامندی سے فیصلے کرتی ہے لیکن اس سلسلے میں شائع کی گئی خبر کو ٹوئسٹ دیا گیا ہے پنجاب میں کسی کو نہ قانون ہاتھ میں لینے دیا جائے گا اور نہ ہی متوازی عدالتیں لگانے دی جائیں گی۔
زعیم قادری نے کہاکہ اگر جامعہ قادسیہ سے کسی کو سمن جاری کیے گئے ہیں تو وہ پولیس کے نوٹس میں لائے، حکومت کسی سے کوئی رعایت نہیں برتے گی۔

جماعت الدعوۃ کے مرکزی ترجمان کے مطابق یہ ’عدالت‘ سزائیں دینے کے لیے نہیں ہے اور نہ ہی ابھی تک کسی کو سزا دی گئی ہے بلکہ فریقین کی رضامندی سے شریعت کی روشنی میں فیصلے کیے جاتے ہیں جنھیں فریقین بخوشی قبول کرتے آ رہے ہیں۔ اور زیادہ تر لوگ مروجہ عدالتی نظام سے فوری فیصلے نہ ملنے کی وجہ سے دارالقضا سے رجوع کرتے ہیں، کسی کے ساتھ کوئی زبردستی، ظلم یا زیادتی نہیں کی جاتی۔


تاہم یحییٰ مجاہد کے دعویٰ کے برعکس معلوم ہوا ہے کہ ’دارالقضا شریعہ‘ کے سامنے پیش ہونے کے لیے لوگوں کو سمن بھی جاری کیے جاتے ہیں اور پیش نہ ہونے کی صورت میں سخت ایکشن لینے کی وارننگ بھی دی جاتی ہے۔ میڈیا میں شائع ہونے والی خبروں کے مطابق سمن جماعت الدعوۃ کے مونو گرام والے لیٹرہیڈ کے ذریعے جاری کیے جاتے ہیں جس پر ’دارالقضا شریعہ‘ جماعت الدعوۃ پاکستان اور ثالثی شرعی عدالت عالیہ لکھا ہوا ہے۔


مقامی اخبار ڈان کے مطابق اسی طرح کے سمن وصول کرنے والے ایک شخص نے جماعت الدعوۃ کی عدالت میں پیش ہونے کی بجائے چیف جسٹس آف پاکستان، وزیرِ اعظم پاکستان اور دیگر عدالتی و حکومتی شخصیات کو خطوط لکھ دیے ہیں، لیکن اسے تاحال حکومت یا عدالت عظمیٰ سے کوئی جواب نہیں دیا گیا۔


قانونی ماہرین جماعت الدعوۃ کی ثالثی عدالت کو متوازی نظام سے تعبیر کر رہے ہیں۔ پاکستان بار کونسل کے ممبر اعظم نذیر تارڑ کا کہنا ہے کہ کسی نجی تنظیم کو لفظ ’عدالت‘ استعمال کرنے کا کوئی حق حاصل نہیں ہے۔ ’عدالت‘ کا لفظ صرف سپریم کورٹ، ہائی کورٹ، فیڈرل شریعت کورٹ اور ملکی قانون و آئین کے تحت قائم کی گئی دیگر عدالتوں کے لیے ہی استعمال کیا جا سکتا ہے۔



http://www.bbc.com/urdu/pakistan/2016/04/160407_jud_court_as
 
Last edited by a moderator:

khan_sultan

Banned
پنجاب میں بھی ان دایش کے سپورٹروں کی موجودگی کا تو سنا تھا پر اس لیول پر بات پہنچ گئی ہے یہ بہت خطرناک ہے یہ نجدی جدھر بھی گئے ہیں ادھر تباہی ہی ای ہے
 

dangerous tears

Senator (1k+ posts)
شکریہ میاں سانپ
مگر طالبان خان تو عمران خان ہے. نہیں؟

یہ میاں صاحب کے بس کی بات نہیں ۔
حافظ سعید الدعوۃ والے کے سر پر شکریہ راحیل شریف کا ہاتھ
ہے کس کی مجال اس کو چھیڑ سکے
 

Milk Shaykh

Banned
Banned Islamist group (Jamatud Dawa) runs Shariat Court in Lahore

Banned Islamist group (Jamatud Dawa) runs Shariat Court in Lahore

2014626114754900580_20.jpg


A victim speaks in Geo programme ‘Aaj Shahzeb Khanzada Ke Sath’

ISLAMABAD: Jamatud Dawa is running its court in Lahore. This illegal and unconstitutional court called the Darul Qaza Shariat is issuing notices to people. Though the JuD is on the watchlist of the Interior Ministry, it seems that no one is keeping an eye on its activities, revealed Shahzeb Khanzada in his programme on Geo.

Khalid Saeed, a victim of the JuD court, said in the programme that one Muhammad Azam called him through the court in 2010 and obtained cheques. He said he paid all the money but got another notice on January 19, 2016. The notice carried the name of the Federal Shariat Court and one Hafiz Idrees called him on the phone threatening that they would take him to the court from his office if he failed to appear before the “court” on January 25.

He said he could not go to his office because of these threats for the last three months. He said he put up applications to the chief justice, the army chief and the prime minister, etc, against this practice. He said the Supreme Court referred his application to the Samanabad Police Station. He said he tried to go to the police station but “Maulana Sahiban” were around in their pick-up trucks.

Punjab Law Minister Rana Sanaullah told Khanzada that they were trying to contact the victim after viewing the news. The DIG Operations has been told to investigate the formation of the illegal court, he said. He said the responsible would be held accountable if the news was true. He said no one has the right to force others to bow to a Panchayat. He said the government would settle the matter within 24 hours, adding that no one was allowed to set up an illegal court.

Media reports mention that the JuD spokesman Yahya Mujahid defends the functioning of the ‘Sharia Court’ saying it is not a parallel system to the constitutional courts of the country. “It is an arbitration court, which decides disputes with the consent of the parties,” he said. He states disputes have been resolved in accordance with the Islamic laws and that offering arbitration to confronting parties is not illegal.

Source
 
Last edited by a moderator:

lurker

Chief Minister (5k+ posts)
Re: Banned Islamist group (Jamatud Dawa) runs Shariat Court in Lahore

Yaar ek to hamari government parwah bohut kerti hai islam islam ki. 2 ya 3 bandon ko shaheed kerdo dekho tamasha kaisa chalta hai. Aur ayen ge. Aur maardo. Martay jao, bandon ki kami nahi hai Pakistan mein.
 

Wadaich

Prime Minister (20k+ posts)
Re: Banned Islamist group (Jamatud Dawa) runs Shariat Court in Lahore

What is the problem in establishing Shariat Court?
 

arafay

Chief Minister (5k+ posts)
Re: Banned Islamist group (Jamatud Dawa) runs Shariat Court in Lahore

herat ki baat hakay kisi news channel ne ye khabar nahi di. ager aesa koi wakiya peshawar me hota tu ab tak logo ne khattak se resignation maang lena tha.
 

arafay

Chief Minister (5k+ posts)
Re: Banned Islamist group (Jamatud Dawa) runs Shariat Court in Lahore

What is the problem in establishing Shariat Court?

no problem except it is a parallel system which if not checked will lead to different justice systems being setup. This is the first clear sign of failure of state - i.e. people dont trust/respect the justice system provided by the state.
 

Believer12

Chief Minister (5k+ posts)
Re: Banned Islamist group (Jamatud Dawa) runs Shariat Court in Lahore

جسدن ڈیفنس اور چھاونی کے رہائشی فوجی افسران کو سمن ملنا شروع ہو جائیں گے اس دن سے اس جماعت کی شرعی عدالت غیر شرعی ہوجاۓ گی
 

Believer12

Chief Minister (5k+ posts)
Re: Banned Islamist group (Jamatud Dawa) runs Shariat Court in Lahore

What is the problem in establishing Shariat Court?
افسوس کے پڑھے لکھے ہو کر بھی آپ عجیب و غریب موقف اپناتے ہو ، اگر آئین میں کہیں پر یہ لکھا ہوا ہے کہ ہر گروہ اور جماعت اور فرقہ اپنے طور پر عدالتیں بنا سکتا ہے اور لوگوں کو اجازت ہے کہ وہاں جاکر اپنا کیس دائر کریں تو پھر تو کوی حرج نہیں مگر ایسا کرنا قانونا جرم اور غیر آئینی ہے کیونکہ اس رعایت کے بعد ہر فرقے اور جماعت کی اپنی عدالت ہوگی جسکے بعد عدالتیں بھی آپس میں لڑنا بھڑنا سٹارٹ کردیں گی وہابی عدالت کا فیصلہ جس فریق کے خلاف جاۓ گا وہ دیوبندی عدالت سے جاکر سٹے لے لے گا اور دونوں کے خلاف بریلوی عدالت سٹے دے دیا کرے گی ، براۓ کرم ملک کو مزید تماشہ نہ بنائیں پہلے ہی فوج دہشت گردوں کے خلاف لڑ لڑ کر تھک چکی ہے اسے مزید مت تھکائیں ، یہ اس ملک کی ہسٹری ہے کہ مذہبی مسلح جماتیں آخر کار فوج اور عوام سے ہی لڑتی ہیں دشمن سے نہیں
 

Milk Shaykh

Banned
Re: Banned Islamist group (Jamatud Dawa) runs Shariat Court in Lahore

What is the problem in establishing Shariat Court?

absolutely nothing. I promote Shariah in favor of non islamic law. but the courts are being run by a banned terrorist group.
 

Wadaich

Prime Minister (20k+ posts)
Re: Banned Islamist group (Jamatud Dawa) runs Shariat Court in Lahore

absolutely nothing. I promote Shariah in favor of non islamic law. but the courts are being run by a banned terrorist group.

Are they non-muslims/Takfeeri Hell dogs?
 

Wadaich

Prime Minister (20k+ posts)
Re: Banned Islamist group (Jamatud Dawa) runs Shariat Court in Lahore


افسوس کے پڑھے لکھے ہو کر بھی آپ عجیب و غریب موقف اپناتے ہو ، اگر آئین میں کہیں پر یہ لکھا ہوا ہے کہ ہر گروہ اور جماعت اور فرقہ اپنے طور پر عدالتیں بنا سکتا ہے اور لوگوں کو اجازت ہے کہ وہاں جاکر اپنا کیس دائر کریں تو پھر تو کوی حرج نہیں مگر ایسا کرنا قانونا جرم اور غیر آئینی ہے کیونکہ اس رعایت کے بعد ہر فرقے اور جماعت کی اپنی عدالت ہوگی جسکے بعد عدالتیں بھی آپس میں لڑنا بھڑنا سٹارٹ کردیں گی وہابی عدالت کا فیصلہ جس فریق کے خلاف جاۓ گا وہ دیوبندی عدالت سے جاکر سٹے لے لے گا اور دونوں کے خلاف بریلوی عدالت سٹے دے دیا کرے گی ، براۓ کرم ملک کو مزید تماشہ نہ بنائیں پہلے ہی فوج دہشت گردوں کے خلاف لڑ لڑ کر تھک چکی ہے اسے مزید مت تھکائیں ، یہ اس ملک کی ہسٹری ہے کہ مذہبی مسلح جماتیں آخر کار فوج اور عوام سے ہی لڑتی ہیں دشمن سے نہیں

Which constitution you are referring to? The one which gives the nation traitors, looters, and plunderers like Busharaf/Kiyani, Nawaz/Zardari, Altaf/Diesel?
I don't know about the TOR's of the court being run by this Jamatud Dawa; but I do know about the one such court in Islamabad. In this court case is not taken until both the parties pose confidence on it. Decision of this court is not legally binding or enforced by exercising any kind of force or violence.........If any of the party breaches the decision, the matter is left to Allah.

By the way what is the crime list for which it is banned it.
 
Re: Banned Islamist group (Jamatud Dawa) runs Shariat Court in Lahore

Problem yeh hai k inki shariayat b apni hai.. Masjidon per qabzay tau inka business tha he ab logon ko apne courts mein bhi bulaane lage hein.. Aur yeh waqai sach hai kiyun k hamare area ki masjid mein is so called shariat court k judge sahib tashreef laiy thy aur logon se keh rahe thy k shariyat court he aap k problems solve ker sakta hai aur kuch arsa baad pata chala k shariyat court mein khoob galam galoch huwa aur yeh log aapas mein aik doosre per fatway lagate rahe aur yahan bss nahi hoi balke jis masjid mein wo bayan krne aaiy thy uss masjid per b wabza ker liya gaya
 

Believer12

Chief Minister (5k+ posts)
Re: Banned Islamist group (Jamatud Dawa) runs Shariat Court in Lahore

Which constitution you are referring to? The one which gives the nation traitors, looters, and plunderers like Busharaf/Kiyani, Nawaz/Zardari, Altaf/Diesel?
I don't know about the TOR's of the court being run by this Jamatud Dawa; but I do know about the one such court in Islamabad. In this court case is not taken until both the parties pose confidence on it. Decision of this court is not legally binding or enforced by exercising any kind of force or violence.........If any of the party breaches the decision, the matter is left to Allah.

By the way what is the crime list for which it is banned it.
yes i am referring that constitution which is passed by all religious parties and political parties. I am not discussing if this court is shari or not my point view is that if other sects also establish their own courts than how govt can run our judicial system?
if these so called religious parties want to establish their own system than they need to cancel our constitution first. for this purpose they need public support and their votes, nobody have right to implement his own constitution.
 
log in k shariyat court ka sun ker paagal ho rahe hein jab yeh log tau najaane kia kuch kerte hein.. For instance.. Gujranwala k qareeb aik gaon jiska naam gondalawala hai ka naam " pind shaheedan " rakh diya gaya hai.. Iski tafseel kuch is trha hai k is " pind shaheedan " k noujawaan pakistan bher mein sab se ziyada " shaahadat " k mansab per faiz ho chuke hein.. Tareeqa e waardat kuch is trha hai k pehly saada- loh aur kam taleem yaafta noujawaano ( jin ki is area mein achi khaasi taadad moujood hai ) ko kashmir mein hone waale zulm sitam suna ker " nursery " tayyar ki jaati hai.. Us k baad tayyar shuda nursery mein " farziyat e jihaad " ka beej boya jaata hai.. Fasl ko pakane k liye " dora e aama " aur " dora e khaasa " jese khasoosi spry kiye jaate hein aur phir fasal ki poori tayyari k baad usy " matlooba mandi " mein pouncha diya jata hai.. Yaad rahe is saare amal k doraan jamaat k qaideen aur unki aulaadein " fasli batairon " k fareeza ka kirdaar bakhoobi nibha rahe hote hein.. Mandi mein " mandda " hone ki soorat mein in noujaawano ko " Falah e insaniyat " k naam se registered falahi mansoobay se munsalik ker diya jata hai aur phir unko " bharpoor " maali aur ghaibi ( yahan ghaibi se muraad in logon ka yeh cliam hai k inhy pakistan army aur uski intelligence agencies ki pusht panahi haasil hai ) " imdaad ki jaati hai.yaad rahe k in logon k tanzeem mein shaamil hone se pehly aur uhdedaar banane k baad in k bank accounts aur property ki malkiyat mein waazeh faraq in k ikhlaaqi kirdaar per b sawaliya nishaan hai.
 

Believer12

Chief Minister (5k+ posts)
Re: شرعی عدالتیں قائم ہیں ،مفتی ادریس

اگر انصاف کے حصول کیلئے آپکو کسی عدالت میں جانا پڑے تو معلوم ہوگا کہ یہاں انصاف خریدنا پڑتا ہے ،وکیل اور اسکے منشی سے لے کر عدالت کے چپڑاسی تک ،اشٹام فروش سے لے کرجج تک ہر جگہ پیسے کی برسات ہوگی تو بات کسی نتیجے پر پنہچے گی،کچہری کا گیٹ کراس کرتے ہی چھوٹے بڑے مگرمچھ اپنے ہولناک جبڑوں میں آپکو جکڑنے کیلئے تیار ملیں گے
کسی کا قتل ہوجاۓ تو کیس لڑنے کیلئے دس بیس لاکھ جیب میں ہونے ضروری ہیں، پھر قاتلوں سے اپنے آپ اور گواہوں کو بچانے کیلئے آپکا اپنا سکیورٹی نظام ہونا بھی لازمی ہے ، اس سارے بکھیڑے سے بچنے کیلئے اکثر لوگ بیس لاکھ ہرجانہ وصول کرکے صلح کر لیتے ہیں

کسی جج یا حاکم کو توفیق نہیں ملی کہ اس سارے کرپٹ نظام سے بچانے اور مظلوم کی داد رسی کی خاطر مجرم کے خلاف خود مدعی بن کر عدالت میں کیس لڑیں

پانچ سال پہلے میرا ایک قریبی دوست پولیس ڈیوٹی کے دوران قتل ہوگیا تھا اسکے بھائی نے مجھے بتایا کہ پولیس نے اس کے لاکھوں خرچ کروا دیے تب جاکر قتل گرفتار ہوے مگر چند ماہ بعد مجرموں کی ضمانت ہوگئی ، تب مقتول اے ایس پی کے دوست نے ان کو دوبارہ گھیر کر پار

کیا اسی ظلم پر مبنی بے ہودہ نظام کی وجہ سے یہ سالسی عدالتیں نہیں بن رہیں ؟

کسی کے بیٹی کو ریپ کیا جاتا ہے پھر اسکی تصویریں فیس بک پر بیچ دی جاتی ہیں اسے بلیک میلنگ سے بچنے کیلئے کیا اسی بے ہودہ عدالتی سسٹم کی دھول چاٹنی چاہئے

ان عدالتوں سے چھٹکارہ پانے کا ایک ہی ھل ہے کہ ہم اپنے بیہودہ عدالتی نظام میں انقلابی تبدیلیاں لائیں

 
Last edited: