سوشل میڈیا پر ٹرولنگ، گالی گلوچ کی تربیت دینے پریقین نہیں رکھتے،احسن اقبال

Wake up Pak

President (40k+ posts)
A PATWARI 🤣 🤣 🤣


GQIDQoYWAAAtEF_
 

chandaa

Prime Minister (20k+ posts)
China downgraded its relationships with Pakistan and this F Phatwari is selling Chinese dreams on TV. F habitual liars and hypocrites of Gang Noon leak.
 
Last edited:

Wake up Pak

President (40k+ posts)
چین کے دورے میں اپنی قمیضوں پر چین کا جھنڈا لگا کر مستری اور چیری بلاسم پہنچ گئے، سودی عرب کے دورے پر چیری بلاسم کہتا کہ پاکستان محمد بن سلمان کی قیادت میں ترقی کرے گا😂

ایسی بھکاریوں والی حرکتوں کی وجہ سے پاکستان دنیا میں ذلیل ہو رہا ہے، اور کنجر کہتے تھے عمران خان نے پاکستان کو isolate کروایا۔

https://twitter.com/x/status/1803374514039927211
 

naushadansari81

Councller (250+ posts)
بھڑوئے وہ ہوتےہیں جو دلالی کرتے ہیں۔اور اس میں سب کو پتاہے ن لیگ سب سے اگے ہے۔
 

ranaji

(50k+ posts) بابائے فورم
اس گشتی کے بچے احسن اقبال فراڈئے کی گشتی ماں نثار فاطمہ
وہ گشتی عورت تھی جس نے خورد اور اس گشتی کے حرام زادے باپ
یعنی اس بجو حرامی کے کنجر نانے جس کا نام شاید محمد حسین تھا
اس نے
پاکستان بننے کے خلاف مہم چلائی کانگریس نے اس دور میں
اسکو ہزاروں روپے دئے اور اس پیسے کے بدلے اس نے اپنی ماں چ۔۔ کر مسلم لیگ کے
خلاف الیکشن لڑا ایک مسلم لیگی معمولی مزدور اور عام ورکر کے خلاف
کانگریس کی
ٹکٹ پر الیکشن لڑا اس حرام زادے کو ٹکٹ مجبوری
میں دی کانگریس نے کیونکہ
اور کوئی حلالی
ماں باپ کی حلالی اولاد اور مسلمان امیدوار پاکستان بنانے والی قائداعظم کی
مسلم لیگ کے کسی بھی امیدوار کے خلاف الیکشن لڑنا
ہی نہیں چاہتا تھا لیکن جب کوئی اور با اثر مسلمان پاکستان اور قائد اعظم کے امیدوار کے
خلاف الیکشن لڑنے پر تیار نا ہوا
اس وقت اس کے حرامی نانے نے اپنی ماں چ۔۔ کر یہ پاکستان مخالف الیکشن لڑا اور اسکے
مخالف نے ہزاروں ووٹ لے کر اس کے نانے اور کانگریسی چیلے حرام زادے کی ضمانت ضبط
کرادی جس نے صرف بیس بائیس ووٹ
لئے اسطرح زلیل ہونے کے بعد اس کے حرامی نانے
اور اسکی ماں پھاتو گشتی ناروالی یعنی
نثار فاطمہ
نے قائد اعظم اور مسلم لیگ اور پاکستان کے خلاف اور زیادہ بھونکنا شروع کردیا
لیکن اللہ کی
شان اور ہمیشہ ہی زلیل ہوتی رہی
لیکن پھر جب جنرل ضیا نے مارشل لا لگایا تو وہ
گشتئ عورت اس جھوٹ کے ساتھ ضیا سے ملی کہ
جس بہادر دلیر لڑکی اور مسلم لیگی لڑکی نے لاہور سیکریٹریٹ پر پاکستان کا جھنڈا لہرایا تھا وہ پاکستان
سے محبت کرنے والی وہ مسلمُ لیگی لڑکی وہ خود تھی
یعنی وہ لڑکی نثار فاطمہ تھی
جبکہ وہ لڑکی جو کہ اس وقت تک عورت بن چکی تھی وہ کوئی اور تھی اور وہ مسلم لیگی عورت تھی
لیکن یہ گشتی تو کانگریسی عورت تھی اور پاکستان کے خلاف تھی
لیکن یہ جھوٹ بھونک کر نثار فاطمہ نامی وہ جھوٹی مکار گشتی عورت
جنرل ضیا کے پاس اس مسلم لیگی لڑکی کے نام پر پہنچی اور حکومت میں داخل ہوئی اور شاید وزیر
یا کوئی
مشیر بنی لیکن جب ایک بار اس گشتی جھوٹی لعنتئ کانگریسی عورت نثار فاطمہ نے حکومت میں آنے کے
بعد دوبارہ اپنے نام سے یہ جھوٹا کلیم کیا
اور ایک اخباری انٹرویو میں یہ دعوئی کیا وہ جھنڈا لہرانے
والی مسلم لیگی بہادر لڑکی یہ خود نثار فاطمہ تھی
تو اس وقت بھی چند صحافی بہت محنت کرکے اس اصلی لڑکی کو ڈھونڈھ
کر
سامنے لے آئے جس نے اصل میں لاہور سیکریٹریٹ پر انگریزی فوج اور گارڈز کی موجودگی میں وہ
جھنڈا لہرایا تھا اور جس کا جھوٹ بھونک کر وہ جھوٹی مکار لعنتئ عورت نثار فاطمہ
ضیا کی
حکومت میں شامل ہوئی لیکن جب اخباری نمائندوں نے اسکا جھوٹ بے نقاب کیا اور اسکی پول کھولی
تو وہ حرام زادی اس راز کھلنے کے بعد کچھ دن تو تک
شرم سے مونہہ چھپائے پھری اور چند دن غائب رہی
لیکن پھر اس گشتی عورت قائداعظم کو گالیاں بھونکنے والی کانگریسی کتیا ڈھیٹ اور جھوٹی گشتی عورت
نے دوبارہ اپنے یہ جھوٹ کی گرد بیٹھے کے بعد اس
نے پھر مارشل لا کے کرپٹ ٹولے اور انکی لوٹ مار میں
اپنا حصہ وصول کرنا شروع کردیا اور جھوٹ کی بنیاد
پر آئی ہوئی اس گشتی عورت نے اپنے بجو کی شکل کے بیٹے احسن اقبال کو بھی جنرل ضیا کی اس بات سے فائدہ اٹھایا کہ جنرل ضیا کو نعتیں بہت پسند تھیں
اور بجو کنجر احسن اقبال فراڈیا گانے بہت اچھے گاتا تھا شاید کنجر اور میراثی دادے جی وجہ سے
اس کی آواز کی وجہ سے اس گشتی عورت نے جنرل ضیا کی پسند کو مدنظر رکھتے ہوئے اس کو نعتیں
یاد کرانا شروع کردیں اور یہ بجو احسن اقبال فراڈیا اپنی گشتی ماں کے ساتھ جنرل ضیا کو نعتیں سنانے پہنچ جاتا تھا
کے پاس لیجانا شروع کردیا اور اس طرح یہ حرام زادہ جنرل ضیا کا نعت خوان بن کر سیاست میں آیا
جنرل ضیا کو اس سے زیادہ ریڈیو اور ٹی وی کا اناونسر اورپھر ڈائرکٹر شاعر منصور تابش کی آواز بہت پسند تھی جس نے مشہور زمانہ نعت گائی تھی
یہ تو تیرا کرم ہے آقا کہ بات اب تک بنی ہوئی ہے اور جنرل ضیا کی بہت کی تقریبات میں
منصور تابش نعت خواں ہوتا تھا اور قاری خوشی محمد تلاوت قرآن پاک قرائت کے ساتھ سناتے تھے
جنرل ضئا کی اسئ پسند کو گشتی نثار فاطمہ کانگریسی
حرامن نے کیش کرایا اس بہانے سے ضیا سے مفادات
حاصل کرنے کے لئے بس یہ اوقات ہے اس کنجر ارسطو بجو حرام زادے کی
اس کنجر کی
اوقات دیکھو اور اس کا بھونکنا سنو تو حیرت ہوتی ہے
کیسے کیسے مایک اور حرامی سیاست میں کیسے کیسے طریقے سے داخل ہوئے