راہول گاندھی کا لوک سبھامیں قرآنی آیت اور رسول کریمﷺ کی تعلیمات کا حوالہ

Kashif Rafiq

Prime Minister (20k+ posts)
https://twitter.com/x/status/1807724011129860240 https://twitter.com/x/status/1807768325612503250 https://twitter.com/x/status/1807783539535905166 https://twitter.com/x/status/1807782684694806648
بھارتی لوک سبھا(ایوان زیریں پارلیمنٹ) میں قائد حزب اختلاف کے طورپر اپنی اولین تقریر میں کانگریسی رہنما راہول گاندھی نے وزیراعظم نریندر مودی اور اس کے انتہا پسند ہندو وزراء کی موجودگی میں اسلام کی امن پسندی اور تشدد سے نفرت کاذکر کرتے ہوئے قرآنی تعلیمات کا حوالہ دیاتو حضور نبی اکرمﷺ کا اسم مبارک لیتے ہوئے آپؐ پر درود بھیجا۔

مودی اور اس کےرفقا دم بخودہو کر اس منظر کو دیکھتے رہے۔دو گھنٹے کی تقریر میں بار بار مودی کو ہدف بنایا اور یاد دلایا کہ وہ نفرت اور تشدد کاسہارالیکر سیاست کررہاہے۔

راہول گاندھی نے لوک سبھا میں قائدحزب اختلاف کے طورپر مودی اور اس کےساتھیوں کو مخاطب ہو کر کہا آپ تو ہندو ہی نہیں ہو۔

راہول گاندھی نے لارڈ شیواجی کی تصویر بار بار لہرائی اور کہا کہ اس میں کہیں تشدد اور نفرت کا پرچار نہیں ہے انہوں نے اسلامی تعلیمات پر مبنی پوسٹر بھی لہرایا۔

گورو نانک کی تصویر بھی دکھائی جس میں وہ ہاتھ کے اشارےسے رکنے کےلئے کہہ رہے ہیں۔