خاور مانیکا پر حملہ کرنیوالے وکلاکے لائسنس منسوخ کئے جائیں،بیرسٹر علی ظفر

alai1h111.jpg

خاور مانیکا پر حملہ کرنیوالے وکلاپی ٹی آئی سے نہیں ، لائسنس منسوخ کئے جائیں ، بیرسٹر علی ظفر

پاکستان تحریک انصاف کے رہنما اور سینیٹر بیرسٹر علی ظفر نے واضح کہہ دیا کہ خاور مانیکا پر عدالت کے احاطے میں حملہ کرنے والے پی ٹی آئی کے وکلاء نہیں تھے,خاور مانیکا پر حملہ کرنے والے وکلاء کا تحریک انصاف سے کوئی تعلق نہیں ۔

انہوں نے کہا کسی وکیل کو بھی کسی صورت یہ حق نہیں کہ وہ کسی پر ہاتھ اٹھائے ، واقعے میں ملوث افراد کے لائسنس منسوخ ہونے چاہئیں,انہوں نے مزید کہا کہ کسی قسم کی کوئی ڈیل نہیں ہوئی نہ ہونے جا رہی ، یہ افواہیں ہیں,جو کچھ پی ٹی آئی کے ساتھ ہو رہا ہے اس سے صاف ظاہر ہے کہ کوئی ڈیل نہیں ہو رہی۔

واضح رہے کہ بانی پی ٹی آئی کی اہلیہ بشریٰ بی بی کے سابق شوہر خاور مانیکا کو اسلام آباد کی عدالت میں آمد کے موقع پر پی ٹی آئی وکلا کی جانب سے تشدد کا نشانہ بنایا گیا تھا۔

اسلام آباد کی ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹ میں عدت میں نکاح کیس کی سماعت ہوئی جس سلسلے میں بشریٰ بی بی کے سابق شوہر خاور مانیکا عدالت میں پیش ہونے کیلئے آئے جہاں عدالتی احاطے میں موجود وکلا نے ان پر تشدد کیا اور تھپڑ مارے۔

خاور مانیکا پر وکیل کے تشدد کے بعد ان کے ساتھ موجود وکلا نے انہیں بچایا اور عدالت میں لے گئے۔عدالت میں جج کے چیمبر میں جانے کے بعد وکلا نے کمرہ عدالت میں خاور مانیکا کو بوتلیں ماریں۔