اے آر وائی نشاط گروپ کے مالک میاں محمد منشا کو 2 لاکھ 75 ہزار پاؤنڈ جرمانے کے طور پر ادا کرے گا

mhafeez

Chief Minister (5k+ posts)
پاکستان کا نامور نجی ٹی وی نیٹ ورک اے آر وائی نشاط گروپ کے مالک میاں محمد منشا کو 2 لاکھ 75 ہزار پاؤنڈ جرمانے کے طور پر ادا کرے گا۔

ڈان اخبار کی رپورٹ کے مطابق ایک عوامی نوٹس میں کارٹر رک نامی وکلا کمپنی نے کہا ہے کہ لندن ہائی کورٹ کے جسٹس نکلن نے ایک رضامندی کے حکم کی منظوری دے دی جس کے تحت اے آر وائی نیٹ ورک لمیٹڈ میاں منشا کو 2 لاکھ پاؤنڈ قانونی اخراجات اور 75 ہزار پاؤنڈ حقیقی نقصانات کی مد میں بطور جرمانہ ادا کرے گا۔

عوامی نوٹس کے مطابق یہ کیس میاں منشا کی جانب سے دائر کیا گیا تھا جس میں انہوں نے الزام عائد کیا تھا کہ اے آر وائی نے نومبر 2015 میں اپنے پروگرام ’کب تک‘ میں ان کے خلاف جھوٹی خبر چلائی تھی۔

میاں منشا کا اپنے کیس میں کہنا تھا کہ اے آر وائی نیٹ ورک نے سینٹ جیمز ہوٹل اور کلب لمیٹڈ کی خریداری کے حوالے سے نشاط گروپ کے مالک پر منی لانڈرنگ کا جھوٹا الزام عائد کیا تھا۔

بعدِ ازاں ٹی وی چینل نے ایک ماہ بعد میاں منشا کے سینٹ جیمز ہوٹل میں قیام کے حوالے سے ایسی ہی ایک خبر نشر کی۔

سینٹ جیمز ہوٹل نشاط گروپ نے 2010 میں ممکنہ طور پر 6 کروڑ امریکی ڈالر کے عوض خریدا تھا، جولائی 2015 میں سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ نے اسٹیٹ بینک آف پاکستان (ایس بی پی) سے اس معاملے کی تفصیلات طلب کرتے ہوئے سوال کیا کہ یہ بتایا جائے کہ اس خریداری کی رقم بیرونِ ملک کیسے منتقل ہوئی۔

تاہم اس حوالے سے مرکزی بینک نے اپنا جواب جمع کرایا اور بتایا کہ اس نے ترسیلات کے حوالے سے کارروائی کے اجازت نامے پر پیش رفت نہیں کی۔

یہ بھی پڑھیں: نشاط گروپ کا برقی، ہائبرڈ گاڑیاں متعارف کرانے کا منصوبہ

بعدِ ازاں اس مبینہ منی لانڈرنگ کی خبریں پاکستان کے ذرائع ابلاغ میں گردش کرتی نظر آئیں، جن کی میاں منشا کے وکلا کی جانب سے تردید بھی کی گئی۔

اسلام آباد ہائی کورٹ نے فروری 2016 میں اس معاملے کو اٹھاتے ہوئے قومی احتساب بیورو (نیب)، وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) اور فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) سے اس ہوٹل کی خریداری کیلئے لندن منتقل ہونے والی رقم کے حوالے سے جواب طلب کیا تھا۔

میاں منشا کے اہلِ خانہ نے اپنا موقف پیش کرتے ہوئے کہا تھا کہ انہوں نے یہ رقم قانونی طور پر پاکستان میں ہی کمائی تھی اور اس کا ٹیکس بھی ادا کیا تھا اور بعد میں قانونی تقاضے پورے کرتے ہوئے اسے ہوٹل کی خریداری کے لیے لندن منتقل کیا گیا تھا۔
Dawn
 

Landmark

Minister (2k+ posts)
پاکستان کا نامور نجی ٹی وی نیٹ ورک اے آر وائی نشاط گروپ کے مالک میاں محمد منشا کو 2 لاکھ 75 ہزار پاؤنڈ جرمانے کے طور پر ادا کرے گا۔

ڈان اخبار کی رپورٹ کے مطابق ایک عوامی نوٹس میں کارٹر رک نامی وکلا کمپنی نے کہا ہے کہ لندن ہائی کورٹ کے جسٹس نکلن نے ایک رضامندی کے حکم کی منظوری دے دی جس کے تحت اے آر وائی نیٹ ورک لمیٹڈ میاں منشا کو 2 لاکھ پاؤنڈ قانونی اخراجات اور 75 ہزار پاؤنڈ حقیقی نقصانات کی مد میں بطور جرمانہ ادا کرے گا۔

عوامی نوٹس کے مطابق یہ کیس میاں منشا کی جانب سے دائر کیا گیا تھا جس میں انہوں نے الزام عائد کیا تھا کہ اے آر وائی نے نومبر 2015 میں اپنے پروگرام ’کب تک‘ میں ان کے خلاف جھوٹی خبر چلائی تھی۔

میاں منشا کا اپنے کیس میں کہنا تھا کہ اے آر وائی نیٹ ورک نے سینٹ جیمز ہوٹل اور کلب لمیٹڈ کی خریداری کے حوالے سے نشاط گروپ کے مالک پر منی لانڈرنگ کا جھوٹا الزام عائد کیا تھا۔

بعدِ ازاں ٹی وی چینل نے ایک ماہ بعد میاں منشا کے سینٹ جیمز ہوٹل میں قیام کے حوالے سے ایسی ہی ایک خبر نشر کی۔

سینٹ جیمز ہوٹل نشاط گروپ نے 2010 میں ممکنہ طور پر 6 کروڑ امریکی ڈالر کے عوض خریدا تھا، جولائی 2015 میں سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ نے اسٹیٹ بینک آف پاکستان (ایس بی پی) سے اس معاملے کی تفصیلات طلب کرتے ہوئے سوال کیا کہ یہ بتایا جائے کہ اس خریداری کی رقم بیرونِ ملک کیسے منتقل ہوئی۔

تاہم اس حوالے سے مرکزی بینک نے اپنا جواب جمع کرایا اور بتایا کہ اس نے ترسیلات کے حوالے سے کارروائی کے اجازت نامے پر پیش رفت نہیں کی۔

یہ بھی پڑھیں: نشاط گروپ کا برقی، ہائبرڈ گاڑیاں متعارف کرانے کا منصوبہ

بعدِ ازاں اس مبینہ منی لانڈرنگ کی خبریں پاکستان کے ذرائع ابلاغ میں گردش کرتی نظر آئیں، جن کی میاں منشا کے وکلا کی جانب سے تردید بھی کی گئی۔

اسلام آباد ہائی کورٹ نے فروری 2016 میں اس معاملے کو اٹھاتے ہوئے قومی احتساب بیورو (نیب)، وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) اور فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) سے اس ہوٹل کی خریداری کیلئے لندن منتقل ہونے والی رقم کے حوالے سے جواب طلب کیا تھا۔

میاں منشا کے اہلِ خانہ نے اپنا موقف پیش کرتے ہوئے کہا تھا کہ انہوں نے یہ رقم قانونی طور پر پاکستان میں ہی کمائی تھی اور اس کا ٹیکس بھی ادا کیا تھا اور بعد میں قانونی تقاضے پورے کرتے ہوئے اسے ہوٹل کی خریداری کے لیے لندن منتقل کیا گیا تھا۔
Dawn

hahah
PTI MEDIA MOUTH
KICKED ON ASS
 

Uns Sheikh

Politcal Worker (100+ posts)
سارے میڈیا ہاؤس اول نمبر کی کرپشن میں ملوث ہیں۔ صرف سیاستدانوں کو کیا روئیں؟؟؟​
 

karachii

Minister (2k+ posts)
Very Good, Ab jo media UK aur USA mei galat khabar chalayee kam az kam us per tou libel kerdayna chahiye.

ARY waisay bhi auqat se bahar hogaya tha
 

thinking

Prime Minister (20k+ posts)
Mian Mansha should also be under investigation from NAB.. This group is affiliated from decades to Nawaz Mafias..
 

miafridi

Prime Minister (20k+ posts)
Nawaz Sharif bhi Dailymail k khilaf Case kar k billions of Rupees kama sakta hai..:)

Magar woh aesa karayga nahi Q k woh chor hai aur janta hai k DailyMail ne sach kaha hai...

Yad Rahay k Pakistan main Nawaz Sharif par sirf 4 properties ka case chal raha hai, Lakin DailyMails ne Nawaz Sharif ki 21 properties ka naam bata kar osay Sharif family ki malkiyat kaha hai, aur sath main yeh bhi kaha hai k yeh Properties Sharif families ki total properties ka bas aek chota sa hissa hai..
 

SahirShah

Minister (2k+ posts)
چلو یہ تو اچھی بات ہے
اس سے ثابت ہو گیا کہ کوئی دیسی چینل بھی برطانیہ میں جھوٹی خبر چلا کر بچ نہیں سکتا چاہے معامله دو پونڈ کا ہی کیوں نہ ہو

تم اگر مریم کے ٹکڑوں پر پلنے والے کیڑے مکوڑے نہ ہوتے تو شرم کے مارے کبھی بھی یہ تھریڈ پوسٹ نہ کرتے....کیونکہ کوئی پوچھے نہ پوچھے عوام تو پوچھے گی....کہ حضرت بابا جمہوریت جناب نواز شریف نے ڈیلی میل لندن کے خلاف کوئی مقدمہ کیوں نہ کیا ؟ جبکہ ڈیلی میل نے تصویروں کے ساتھ شریفوں کی نا صرف جائیدادیں شائع کیں بلکہ نواز شریف کو سیدھا سیدھا بحری قزاق لکھا

ہے کوئی جواب راتب خور گھٹیا پٹواری ؟
http://www.dailymail.co.uk/news/art...hed-millions-Londons-swankiest-addresses.html
 

nasik

Voter (50+ posts)
Tell me one thing guys.. Do you think that Nawaz is any good to discuss and wast time? We should stop living in the past. ARY lost the case not for the first time. We should stop mentioning Nawaz on such posts where he is not relevant. Nawaz is corrupt no doubt about it . But tell me why we keep talking about him on every post which is not relevant to him.
One more thing.. do you guys think that we can attract other parties voters by abusing them?
 
Sponsored Link