ایک پریس کانفرنس نے کیسے مرادراس اور فیض اللہ کموکا کو پاک صاف کردیا؟

prhiaahsia.jpg

ڈاکٹر مراد راس اور فیض اللہ کموکا ایک پریس کانفرنس کرکے بری۔۔ماریہ میمن نے 9 مئی کے حوالے سےانتہائی اہم سوالات اُٹھا دیے

ماریہ میمن کا کہنا تھا کہ مراد راس اور فیض اللہ کموکا کا نام پی ٹی آئی کے ان رہنماؤں میں تھا جو مبینہ طور پر 9 مئی کے واقعات میں ملوث تھے ، مراد راس نے چار ٹی وی شوز میں شرکت کی لیکن انہیں گرفتار نہیں کیا گیا شاید اس کی وجہ پریس کانفرنس ہو

ماریہ میمن نے مزید کہا کہ آئی جی پنجاب کی پریس کانفرنس کے مطابق مراد راس صاحب کا نام بھی ملزمان لسٹ میں شامل ہے۔۔23 فون کالز کے باوجود مراد راس صاحب نہ تو گرفتار ہوئے بلکہ پریس کانفرنس کرنے بعد بطور آزاد شہری مختلف ٹیلیویژن شوز پر دکھائی دیتے ہیں۔۔

انہوں نے سوال اٹھایا کہ کیا باقی ملزمان کے لئیے بھی مطلوبہ سہولت میسر ہونے کے امکانات ہیں؟

ماریہ میمن نے مزید کہا کہ فیض کموکہ صاحب بھی 54 کالز کے باوجود پریس کانفرنس کرنے کے بعد قانون کے شکنجے سے آزاد ہیں۔
 

Kavalier

Chief Minister (5k+ posts)

چارٹ تو ایسے بنایا ہوا ہے جیسے یہ پرامن سیاسی راہنما نہیں بلکہ کوئی غیر ملکی دہشت گرد ہیں
What a shame!
Chart pehlay bhi aisy hi bantay thay, bus hamayn takleef islaye nhi hoti thi kiyonkay tab usmayn Manzoor Pashteen type pathan ya, Baloch ya Karacho walay dikhaye jatay thay, tab hamaray liye hawaldaro ka propaganda theek tha kiyonkay tab hamaray one pagers bhi most democratic army/general k sath thay, ya youn keh layn k wardi walay tab hamayn support krehay thay. Tab on principle bat ki hoti tou aj shayad itni takleef na uthani parti, 2/4 ko corruption mayn pakar k ander kiya hota lakiin kahaan ji, yahan tou batayn horehi theen k hum nay check karliya hay, Asim bajwa nay koi corruption nhi ki, uskay pass 2 chor, 3 state portfolios honay chayey
 
Sponsored Link