ایم کیو ایم نے ن لیگ سے اتحاد کے بدلے کیا مانگا؟ تفصیلات سامنے آگئیں

mati11hi1ss.jpg

متحدہ قومی موومنٹ کی جانب سے ن لیگ سے اتحاد کے بدلے کیے گئے مطالبات کی تفصیلات سامنے آگئی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق وفاق میں حکومت سازی کیلئے مسلم لیگ ن اور پیپلزپارٹی کے درمیان معاملات طے پاگئے ہیں جس کے بعد ایم کیو ایم کی جانب ڈے بھی اپنے مطالبات ن لیگ کے سامنے رکھ دیئے گئے ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ایم کیو ایم نے ن لیگ سے وفاق میں تین سے چار وزارتیں دینے کا مطالبہ کیا ہے، اس جے ساتھ ساتھ ایم کیو ایم نے گورنر سندھ کے حوالے سے بھی اپنے مطالبات ن لیگ کے سامنے رکھ دیئے ہیں، ایم کیو ایم کامران ٹیسوری کو گورنر سندھ برقرار رکھنا چاہتی ہے۔

ایم کیو ایم نے ابتدائی طور پر ن لیگ سے ڈپٹی اسپیکر قومی اسمبلی کے عہدے کا بھی مطالبہ کیا تھا تاہم ن لیگ اس عہدے کیلئے پیپلزپارٹی کو حامی بھر چکی تھی جس کے بعد ایم کیو ایم نے قانون سازی کے تحت بلدیاتی اداروں کو بااختیسر بنانے وفاق میں 4 وزارتیں اور گورنر سندھ کا عہدہ دینے کے مطالبات سامنے رکھ دیئے ہیں۔

ایم کیو ایم پنجاب کے رہنما محمد زاہد نے اس حوالے سے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ ن لیگ بھی موجودہ گورنر سندھ کامران ٹیسوری کا برقرار رکھنے پر رضامند ہے۔
 

ranaji

President (40k+ posts)
سب نے اپنے لئے وزارتیں اور گورنر شپ لیکن کراچی کے عام عوام کے لئے امب مانگا ہے مگر یحئئ خان کی بدروح نے بینگن دینے کی حامی بھری ہے کراچی کے عوام کے لئے صرف بتوؤں اور ان دھاندلے والے گروپ کے لئے وزارتیں اور گورنر شپ اور نقد اربوں روپے اب تو ان کے مونہہ سے کوٹا سسٹم ختم کرانے کی چوں بھی نہیں نکلے گی اگر نکلی تو پھر وزارتیں گورنر شپ اربوں روپے فی بندہ نہیں ملیں گے