امریکا کا ارشد شریف کے قتل کی شفاف تحقیقات کا مطالبہ

arshad-sharif-ned-price-usa-qt.jpg


امریکا نے معروف صحافی ارشد شریف کے قتل کی شفاف تحقیقات کا مطالبہ کردیا، پریس بریفنگ میں امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان نیڈ پرائس نے ارشد شریف کے لواحقین سے اظہار تعزیت کیا اور کہا کہ ارشد شریف کا تحقیقاتی کام پوری دنیا کے سامنے تھا۔

نیڈ پرائس نے مزید کہا کہ پاکستانی حکام اظہار رائے کی آزادی یقینی بنانے کیلیے اقدامات کریں،ارشد شریف کی موت کی مکمل معلومات منظرعام پر ابھی تک نہیں آئیں،حق آزادی رائے دبانے والی حکومتوں کے خلاف ایکشن لئے گئے ہیں،نیڈ پرائس نے عمران خان کی نااہلی کے سوال پر تبصرے سے گریز کرتے ہوئے کہا پاکستان کی اندرونی سیاست میں خود کو شامل نہیں کریں گے۔

ارشد شریف کی میت کینیا سے پاکستان کیلیے روانہ کردی گئی ہے، ارشد شریف کو کینیا میں پولیس نے فائرنگ کرکے قتل کردیا تھا، وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب نے کہا کہ پاکستان ہائی کمیشن نے میت روانگی کے تمام مراحل کی خود نگرانی کی، ارشد شریف کا جسد خاکی نجی پرواز کے ذریعے براستہ دوحہ رات ایک بجے تک اسلام آباد پہنچے گا،تدفین جمعرات کو ایچ الیون قبرستان میں کی جائے گی۔

دوسری جانب وزیراعظم شہباز شریف نے کینیا کے صدر ولیم روٹو کو ٹیلی فون کرکے ارشد شریف کے قتل کے واقعے پر بات کی۔ کینیا کے صدر نے واقعے کی تحقیقاتی رپورٹ جلد دینے کی یقین دہائی کروائی۔

وزیراعظم نے کینیا کے صدر سے ارشد شریف کے جاں بحق ہونے کے واقعے پر بات کی، شہباز شریف نے واقعے کی غیر جانبدارانہ اور شفاف تحقیقات پر زور دیا۔
 

Nazimshah

MPA (400+ posts)
Not sure about patriotism definition is the one, Dawar, Pashteen, Zardari, Nawaz and Fazal follow, or the One like Shaheed Arshad and Imran khan.
 

israr0333

Minister (2k+ posts)
میں نے اب تک تمھارے قصیدے لکھے
اورآج اپنے نغموں سے شرمندہ ہوں
اپنے شعروں کی حرمت سے ہوں منفعل
اپنے فن کے تقاضوں سے شرمندہ ہوں
اپنےدل گیر پیاروں سےشرمندہ ہوں
جب کبھی مری دل ذرہ خاک پر
سایہ غیر یا دست دشمن پڑا
جب بھی قاتل مقابل صف آرا ہوئے
سرحدوں پر میری جب کبھی رن پڑا
میراخون جگر تھا کہ حرف ہنر
نذر میں نے کیا مجھ سے جو بن پڑا
آنسوؤں سے تمھیں الوداعیں کہیں
رزم گاہوں نے جب بھی پکارا تمھیں
تم ظفر مند تو خیر کیا لوٹتے
ہار نے بھی نہ جی سے اتارا تمھیں
تم نے جاں کے عوض آبرو بیچ دی
ہم نے پھر بھی کیا ہےگوارا تمھیں
سینہ چاکان مشرق بھی اپنے ہی تھے
جن کا خوں منہ پہ ملنے کو تم آئے تھے
مامتاؤں کی تقدیس کو لوٹنے
یا بغاوت کچلنے کو تم آئے تھے
ان کی تقدیر تم کیا بدلتے مگر
ان کی نسلیں بدلنے کو تم آئے تھے
اس کا انجام جو کچھ ہوا سو ہوا
شب گئی خواب تم سے پریشاں گئے
کس جلال و رعونت سے وارد ہوئے
کس خجالت سے تم سوئے زنداں گئے
تیغ در دست و کف در وہاں آئے تھے
طوق در گردن و پابجولاں گئے
جیسے برطانوی راج میں گورکھے
وحشتوں کے چلن عام ان کے بھی تھے
جیسے سفاک گورے تھے ویت نام میں
حق پرستوں پہ الزام ان کے بھی تھے
تم بھی آج ان سے کچھ مختلف تو نہیں
رائفلیں وردیاں نام ان کے بھی تھے
پھر بھی میں نے تمھیں بے خطا ہی کہا
خلقت شہر کی دل دہی کےلیئے
گو میرے شعر زخموں کے مرہم نہ تھے
پھر بھی ایک سعی چارہ گری کیلئے
اپنے بے آس لوگوں کے جی کیلئے
یاد ہوں گے تمھیں پھر وہ ایام بھی
تم اسیری سے جب لوٹ کر آئے تھے
ہم دریدہ جگر راستوں میں کھڑے
اپنے دل اپنی آنکھوں میں بھر لائے تھے
اپنی تحقیر کی تلخیاں بھول کر
تم پہ توقیر کے پھول برسائے تھے
جنکے جبڑوں کو اپنوں کا خوں لگ گیا
ظلم کی سب حدیں پاٹنے آگئے
مرگ بنگال کے بعد بولان میں
شہریوں کے گلے کاٹنے آگئے
ٓاج سرحد سے پنجاب و مہران تک
تم نے مقتل سجائے ہیں کیوں غازیو
اتنی غارتگری کس کی ایما پہ ہے
کس کے آگے ہو تم سر نگوں غازیو
کس شہنشاہ عالی کا فرمان ہے
کس کی خاطر ہے یہ کشت و خوں غازیو
کیا خبر تھی کہ اے شپرک زادگاں
تم ملامت بنو گے شب تار کی
کل بھی غا صب کے تم تخت پردار تھے
آج بھی پاسداری ہے دربار کی
ایک آمر کی دستار کے واسطے
سب کی شہ رگ پہ ہے نوک تلوار کی
تم نے دیکھے ہیں جمہور کے قافلے
ان کے ہاتھوں میں پرچم بغاوت کے ہیں
پپڑیوں پر جمی پپڑیاں خون کی
کہ رہی ہیں یہ منظر قیامت کے ہیں
کل تمھارے لیئے پیار سینوں میں تھا
اب جو شعلے اٹھے ہیں وہ نفرت کے ہیں
آج شاعر پہ بھی قرض مٹی کا ہے
اب قلم میں لہو ہے سیاہی نہیں
خون اترا تمھاراتو ثابت ہوا
پیشہ ور قاتلوں تم سپاہی نہیں
اب سبھی بے ضمیروں کے سر چاہیئے
اب فقط مسئلہ تاج شاہی نہیں
 

tahirkheli74

MPA (400+ posts)
arshad-sharif-ned-price-usa-qt.jpg


امریکا نے معروف صحافی ارشد شریف کے قتل کی شفاف تحقیقات کا مطالبہ کردیا، پریس بریفنگ میں امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان نیڈ پرائس نے ارشد شریف کے لواحقین سے اظہار تعزیت کیا اور کہا کہ ارشد شریف کا تحقیقاتی کام پوری دنیا کے سامنے تھا۔

نیڈ پرائس نے مزید کہا کہ پاکستانی حکام اظہار رائے کی آزادی یقینی بنانے کیلیے اقدامات کریں،ارشد شریف کی موت کی مکمل معلومات منظرعام پر ابھی تک نہیں آئیں،حق آزادی رائے دبانے والی حکومتوں کے خلاف ایکشن لئے گئے ہیں،نیڈ پرائس نے عمران خان کی نااہلی کے سوال پر تبصرے سے گریز کرتے ہوئے کہا پاکستان کی اندرونی سیاست میں خود کو شامل نہیں کریں گے۔

ارشد شریف کی میت کینیا سے پاکستان کیلیے روانہ کردی گئی ہے، ارشد شریف کو کینیا میں پولیس نے فائرنگ کرکے قتل کردیا تھا، وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب نے کہا کہ پاکستان ہائی کمیشن نے میت روانگی کے تمام مراحل کی خود نگرانی کی، ارشد شریف کا جسد خاکی نجی پرواز کے ذریعے براستہ دوحہ رات ایک بجے تک اسلام آباد پہنچے گا،تدفین جمعرات کو ایچ الیون قبرستان میں کی جائے گی۔

دوسری جانب وزیراعظم شہباز شریف نے کینیا کے صدر ولیم روٹو کو ٹیلی فون کرکے ارشد شریف کے قتل کے واقعے پر بات کی۔ کینیا کے صدر نے واقعے کی تحقیقاتی رپورٹ جلد دینے کی یقین دہائی کروائی۔

وزیراعظم نے کینیا کے صدر سے ارشد شریف کے جاں بحق ہونے کے واقعے پر بات کی، شہباز شریف نے واقعے کی غیر جانبدارانہ اور شفاف تحقیقات پر زور دیا۔
Hypocrisy at its pinnacle. Managers are now demanding to investigate their pets.
 

abidbutt

Senator (1k+ posts)
They, foreign masters, imported government and their handlers, have shelved all the evidence and proof rather disposed of it completely and so they are now demanding for the probe as they are certain no body will be able to find even petty traces.
 
Sponsored Link