اسلام آباد ہائیکورٹ، عمران خان توہین عدالت کیس کا تحریری حکم نامہ جاری

babariaha.jpg


عمران خان نے عدالت پیش ہو کر اپنے الفاظ پر افسوس کا اظہار کیا، خاتون جج کی عدالت بھی معافی مانگنے گئے، کنڈکٹ پر شک کا فائدہ نہ دینے کی کوئی وجہ نہیں، اسلام آباد ہائیکورٹ نے توہین عدالت کیس کا تفصیلی فیصلہ جاری کر دیا۔

تحریری فیصلہ کے مطابق عمران خان کے الفاظ اور لہجہ مناسب نہیں تھا،سابق وزیراعظم اور سیاسی لیڈر سے ایسی زبان کی توقع نہیں کی جا سکتی

فیصلے میں مزید کہا گیا کہ عمران خان کی جانب سے ڈسٹرکٹ جج کا نام لے کر مخاطب کرنا حیران کن تھا، عمران خان عدالت پیش ہوئے اور اپنے الفاظ پر افسوس کا اظہار کیا، فیصلہ

تحریری فیصلہ عمران خان خاتون جج کی عدالت بھی معافی مانگنے کیلئے گئے، عمران خان کے کنڈکٹ پر شک کا فائدہ نہ دینے کی کوئی وجہ نہیں

جسٹس محسن اختر کیانی نے فیصلے میں شک کا فائدہ دینے والے پیراگراف سے اختلاف اور اپنے نوٹ میں لکھا کہ عمران خان پر فرد جرم عائد ہی نہیں ہوئی تھی، عمران خان کو معاف کیا گیا کہنا ہی عین انصاف ہے۔

جسٹس محسن کیانی نے نوٹ کے مطابق عمران خان نے توہین کو تسلیم کر کے معافی کے عمل سے ختم کیا۔

جسٹس بابر ستار نے بھی شک کا فائدہ دینے والے پیراگراف کی حد تک اختلاف کیا
 

Citizen X

President (40k+ posts)
In BC'don ko sirf apni touheeno ki pardi rehti hai, mulk aur awaam ki jo rozanna tazleel aur touheen hoti hai us ki koi fikr nai.

Haramiyon assay kaam na karo na ke tumhari bizti ki jaaye. Agar sahi waqt per insaaf karo to kissi ko kya zarurat hai tumhari bizti kerne ki, kabhi yeh bhi soocha hai?
 
Sponsored Link