آخر چین ہی کیوں؟

M

Murshad Jee

Guest

سرکار دو عالم حضرت محمد مصطفیٰ صلی الله علیھ و آلہ وسلم نے ارشاد پاک فرمایا ہے کہ علم حاصل کرو چاہے تمھیں چین ہی کیوں نہ جانا پڑے

میرا خیال ہے کہ پیارے آقا صلی الله علیھ و آلہ و سلم نے ہمیں کوئی پیغام دیا ہے خاص طور پر چین کا کہ کر اور اگر سرکار دو عالم صلی الله علیھ و آلہ وسلم نے کسی دور کے علاقے کا ہی کہنا تھا اس لئے کہ ہم علم کے حصول کے لئے دور دراز علاقوں میں جائیں اور سفر کو اپنے علم کے حصول میں آڑے نہ آنے دیں تو آپ صلی الله عالیہ وآلہ وسلم کسی اور ملک کا بھی فرما سکتے تھے لیکن صرف چین ہی کیوں ؟

آپ دیکھیں تو آنے والے وقت میں چین دنیا میں ایک نئی سپر پاور بن رہا ہے اور پاکستان کے چین کے ساتھ جو دوستانہ تعلّقات ہیں اس سب کے پیچھے کوئی خاص وجہ ضرور ہے

یہ میری خام خیالی یا بچگانہ پن بھی ہو سکتا ہے لیکن یہ سوال مجھے بہت تنگ کرتا ہے اور مجھے لگتا ہے کہ اس میں ہمارے لئے کوئی خاص پیغام ہے

آپ کا کیا خیال ہے ؟ اور اگر کسی دوست کے پاس کسی قسم کا اس ٹاپک سے متعلقہ کوئی مواد ہے تو مہربانی فرما کر شئیر کریں

 

sharjeel

Politcal Worker (100+ posts)
I don't have further material to support this Apostle pbuh saying but i agreed which you have shared
 
Last edited by a moderator:

Raaz

(50k+ posts) بابائے فورم
this is not hadees anyway. Following is hadees regarding knowledge. Ilm hasil karo, qabar sey laikar lehad tak.

What is this time span?
Classes will start in Qabar? Astagfar--

No rest in Qabar?
 

Knowledge Seeker

Senator (1k+ posts)
Spread of Islam in China, India, Spain - Some Misconceptions about History!


????? ?? ???? ???? ???? ?????? ??? ???? ???? ? ??? ???? ?? ????? ??? ?????? ?? ?? ??? ???? ??? ???? ????? ??? ?? ???? ?? ???? ???

??? ??? ??? ???? ?? ??? ??? ??? ?? ?? ???? ?? ?????? ???? ???? ?? ?? ??????? ???? ? ???? ????


 

adnan78692

MPA (400+ posts)
i think " Maan Ki Ghod Se Lai Kar Qabar Tak Ilam Hasil Karo" is tarha ka Quote to sunna hai but "ilam hasil karo .Qabar se laikar lahad tak" ka nahi suna maine...
 

adnan78692

MPA (400+ posts)
this is not hadees anyway. Following is hadees regarding knowledge. Ilm hasil karo, qabar sey laikar lehad tak.
i think in say likhnay main galti ho gai hai... lahad or qabar aik he meaning main use hotay hain... so i think "@reliable" se likhnay main kehnay main mistake hoi hai... otherwise lahad or qabar ka koi relation nahi banta... its my opinion
 

adnan78692

MPA (400+ posts)

سرکار دو عالم حضرت محمد مصطفیٰ صلی الله علیھ و آلہ وسلم نے ارشاد پاک فرمایا ہے کہ علم حاصل کرو چاہے تمھیں چین ہی کیوں نہ جانا پڑے

میرا خیال ہے کہ پیارے آقا صلی الله علیھ و آلہ و سلم نے ہمیں کوئی پیغام دیا ہے خاص طور پر چین کا کہ کر اور اگر سرکار دو عالم صلی الله علیھ و آلہ وسلم نے کسی دور کے علاقے کا ہی کہنا تھا اس لئے کہ ہم علم کے حصول کے لئے دور دراز علاقوں میں جائیں اور سفر کو اپنے علم کے حصول میں آڑے نہ آنے دیں تو آپ صلی الله عالیہ وآلہ وسلم کسی اور ملک کا بھی فرما سکتے تھے لیکن صرف چین ہی کیوں ؟

آپ دیکھیں تو آنے والے وقت میں چین دنیا میں ایک نئی سپر پاور بن رہا ہے اور پاکستان کے چین کے ساتھ جو دوستانہ تعلّقات ہیں اس سب کے پیچھے کوئی خاص وجہ ضرور ہے

یہ میری خام خیالی یا بچگانہ پن بھی ہو سکتا ہے لیکن یہ سوال مجھے بہت تنگ کرتا ہے اور مجھے لگتا ہے کہ اس میں ہمارے لئے کوئی خاص پیغام ہے

آپ کا کیا خیال ہے ؟ اور اگر کسی دوست کے پاس کسی قسم کا اس ٹاپک سے متعلقہ کوئی مواد ہے تو مہربانی فرما کر شئیر کریں


good question.... there may be some reason behind this reference... it should be clear...
 

Malik495

Chief Minister (5k+ posts)
If there is one so-claimed hadith (Prophetic saying) that has gotten extensive coinage, I have to say it is this one. And though the message of seeking knowledge is consistent with the Prophetic teachings, unfortunately this hadith is likely not Prophetic. It is also somewhat amusing that some of the leading opponents of hadith still love to quote this one I would call this an ironic form of poetic justice, because it really says a lot about how much these opponents actually know about the sciences of hadith!
The chain of sanad in this hadith is not prominent and most of the muhaddeseen-e-kiram rejected its authenticity. Wallah-o-aalam I think brother pakistan1947 can produce research work on this topic.
 

Mujahid

MPA (400+ posts)
سرکار دو عالم حضرت محمد مصطفیٰ صلی الله علیھ و آلہ وسلم نے ارشاد پاک فرمایا ہے کہ علم حاصل کرو چاہے تمھیں چین ہی کیوں نہ جانا پڑے

میرا خیال ہے کہ پیارے آقا صلی الله علیھ و آلہ و سلم نے ہمیں کوئی پیغام دیا ہے خاص طور پر چین کا کہ کر اور اگر سرکار دو عالم صلی الله علیھ و آلہ وسلم نے کسی دور کے علاقے کا ہی کہنا تھا اس لئے کہ ہم علم کے حصول کے لئے دور دراز علاقوں میں جائیں اور سفر کو اپنے علم کے حصول میں آڑے نہ آنے دیں تو آپ صلی الله عالیہ وآلہ وسلم کسی اور ملک کا بھی فرما سکتے تھے لیکن صرف چین ہی کیوں ؟

آپ دیکھیں تو آنے والے وقت میں چین دنیا میں ایک نئی سپر پاور بن رہا ہے اور پاکستان کے چین کے ساتھ جو دوستانہ تعلّقات ہیں اس سب کے پیچھے کوئی خاص وجہ ضرور ہے

یہ میری خام خیالی یا بچگانہ پن بھی ہو سکتا ہے لیکن یہ سوال مجھے بہت تنگ کرتا ہے اور مجھے لگتا ہے کہ اس میں ہمارے لئے کوئی خاص پیغام ہے

آپ کا کیا خیال ہے ؟ اور اگر کسی دوست کے پاس کسی قسم کا اس ٹاپک سے متعلقہ کوئی مواد ہے تو مہربانی فرما کر شئیر کریں
مر شد جی کیا اس حدیث کا کوی حوالہ مل سکتا ہے
 

abduttawwab

MPA (400+ posts)

سرکار دو عالم حضرت محمد مصطفیٰ صلی الله علیھ و آلہ وسلم نے ارشاد پاک فرمایا ہے کہ علم حاصل کرو چاہے تمھیں چین ہی کیوں نہ جانا پڑے

محدثین نے اس روایت کو من گھڑت اور موضوع قرار دیا ہے اسلیے اسے حدیث کے طور پر پیش کرنا درست نہیں
اس روایت کے درج ذیل الفاظ ہیں۔ اس سے ملتے جلتے الفاظ سے دیگر روایات بھی موجود ہیں اور ان سب کو علمائۓ حدیث نے موضوع کہا ہے


اطلبوا العلم ولو بالصين
رواه جماعة عن الحسن بن عطية عن أبي عاتكة عن أنس
قال ابن حبان هذا باطل
 

Knowledge Seeker

Senator (1k+ posts)
محدثین نے اس روایت کو من گھڑت اور موضوع قرار دیا ہے اسلیے اسے حدیث کے طور پر پیش کرنا درست نہیں
اس روایت کے درج ذیل الفاظ ہیں۔ اس سے ملتے جلتے الفاظ سے دیگر روایات بھی موجود ہیں اور ان سب کو علمائۓ حدیث نے موضوع کہا ہے


اطلبوا العلم ولو بالصين
رواه جماعة عن الحسن بن عطية عن أبي عاتكة عن أنس
قال ابن حبان هذا باطل

Many Muhadditheen have refuted those scholars who classed this hadith as Mawdoo and they graded this hadith as Hasan. Following are some of the references:

Imam Jalal uddin al-Suyuti in al-La'ali' [Vol 01: Page 193;Dar Al-Fikr, Syria ]
Imam Al-Dhahabi in Talkhis al-Wahiyat
Imam Ibn Abd-al-Barr in Jmi` Bayn al-`Ilmi wa-Fadlihi wam Yanbagh f Riwyatihi wa Hamlih ("Compendium Exposing the Nature of Knowledge and Its Immense Merit, and What is Required in the Process of Narrating it and Conveying it")
Sheikh Shams al-Din al-Qawuqji in al-Lu'lu' al-Marsu`
 

abduttawwab

MPA (400+ posts)
Many Muhadditheen have refuted those scholars who classed this hadith as Mawdoo and they graded this hadith as Hasan. Following are some of the references:

Imam Jalal uddin al-Suyuti in al-La'ali' [Vol 01: Page 193;Dar Al-Fikr, Syria ]
Imam Al-Dhahabi in Talkhis al-Wahiyat
Imam Ibn Abd-al-Barr in Jmi` Bayn al-`Ilmi wa-Fadlihi wam Yanbagh f Riwyatihi wa Hamlih ("Compendium Exposing the Nature of Knowledge and Its Immense Merit, and What is Required in the Process of Narrating it and Conveying it")
Sheikh Shams al-Din al-Qawuqji in al-Lu'lu' al-Marsu`

والله اعلم

Brother,
I've listened from some very learned scholars that this narration is fabricated one. You've mentioned Imam Al-Dhahabi, in his book 'الموضوعات' he categorized it as fabricated.

اطلبوا العلم ولو بالصين
الراوي: أبو العاتكة المحدث: البزار - المصدر: البحر الزخار - الصفحة أو الرقم: 1/175
خلاصة حكم المحدث: [فيه] أبو العاتكة لا يعرف، وليس لهذا الحديث أصل

اطلبوا العلم ولو بالصين
الراوي: أنس بن مالك المحدث: ابن حبان - المصدر: المجروحين - الصفحة أو الرقم: 1/489
خلاصة حكم المحدث: باطل لا أصل له

اطلبوا العلم ولو بالصين فإن طلبه فريضة على كل مسلم
الراوي: أبو هريرة المحدث: ابن عدي - المصدر: الكامل في الضعفاء - الصفحة أو الرقم: 1/292
خلاصة حكم المحدث: بهذا الإسناد باطل ، فيه أحمد الجويباري كان يضع الحديث

اطلبوا العلم ولو بالصين ، فإن طلب العلم فريضة على كل مسلم
الراوي: أنس بن مالك المحدث: البيهقي - المصدر: شعب الإيمان - الصفحة أو الرقم: 2/724
خلاصة حكم المحدث: متنه مشهور وإسناده ضعيف وروي من أوجه كلها ضعيفة

اطلبوا العلم ولو بالصين فإن طلب العلم فريضة على كل مسلم
الراوي: أنس بن مالك المحدث: البيهقي - المصدر: المدخل إلى السنن الكبرى - الصفحة أو الرقم: 1/292
خلاصة حكم المحدث: متنه مشهور وأسانيده ضعيفة لا أعرف له إسنادا يثبت بمثله الحديث

Anyways I'll try to further investigate. Jkk
 

gazoomartian

Prime Minister (20k+ posts)

سرکار دو عالم حضرت محمد مصطفیٰ صلی الله علیھ و آلہ وسلم نے ارشاد پاک فرمایا ہے کہ علم حاصل کرو چاہے تمھیں چین ہی کیوں نہ جانا پڑے

میرا خیال ہے کہ پیارے آقا صلی الله علیھ و آلہ و سلم نے ہمیں کوئی پیغام دیا ہے خاص طور پر چین کا کہ کر اور اگر سرکار دو عالم صلی الله علیھ و آلہ وسلم نے کسی دور کے علاقے کا ہی کہنا تھا اس لئے کہ ہم علم کے حصول کے لئے دور دراز علاقوں میں جائیں اور سفر کو اپنے علم کے حصول میں آڑے نہ آنے دیں تو آپ صلی الله عالیہ وآلہ وسلم کسی اور ملک کا بھی فرما سکتے تھے لیکن صرف چین ہی کیوں ؟

آپ دیکھیں تو آنے والے وقت میں چین دنیا میں ایک نئی سپر پاور بن رہا ہے اور پاکستان کے چین کے ساتھ جو دوستانہ تعلّقات ہیں اس سب کے پیچھے کوئی خاص وجہ ضرور ہے

یہ میری خام خیالی یا بچگانہ پن بھی ہو سکتا ہے لیکن یہ سوال مجھے بہت تنگ کرتا ہے اور مجھے لگتا ہے کہ اس میں ہمارے لئے کوئی خاص پیغام ہے

آپ کا کیا خیال ہے ؟ اور اگر کسی دوست کے پاس کسی قسم کا اس ٹاپک سے متعلقہ کوئی مواد ہے تو مہربانی فرما کر شئیر کریں



Its in human nature that we relate to a thing or a geography in order to emphasize on some point . For example, your dad needs a bottle of pure honey which is not available every where. If he needs that desperately, he would say 'Please get the honey even if you have to go to Clifton', Clifton being the farthest point from you home. In his sentence he is emphasizing the need of getting that bottle even if you have to suffer some hardship but you must get it.

The modern American saying ' Love conquers distance' should be replaced with 'Ilm conquers distance'.


Since aqa
pbuh had not been informed about other continents, and since China and Hind (ustan) were closer and no waters (oceans) in between, He pbuh knew about China only which was the farthest point from Mecca. My guess is that these words about going to China for ilm may have been uttered BEFORE Allah (swt) shrunk the earth and showed Him pbuh east and west, north and south.

To conclude, its my opinion that mentioning of China may also have been a subtle hint towards something, as it is quiet evident that China has been a supporter of Muslim countries since 1949, her independence. But the main thrust of His
pbuh saying was to emphasize the distance and hardship to obtain ilm even if there is any.

I hope you all agree with me
 
Sponsored Link