U.K. Parliament Suspension Ruled Unlawful by the Court

Geek

Chief Minister (5k+ posts)

برطانوی وزیراعظم کے لیے یہ فیصلہ بہت بڑا دھچکا ہے — فائل فوٹو/ رائٹرز
اسکاٹ لینڈ کی سپریم سول کورٹ نے برطانوی وزیراعظم بورس جانسن کی جانب سے پارلیمنٹ معطل کرنے کے فیصلے کو غیر قانونی قرار دیا جو برطانوی حکومت کے لیے بہت بڑا دھچکا ہے۔

فرانسیسی خبررساں ادارے ’ اے ایف پی‘ کی رپورٹ کے مطابق برطانیہ کے 78 قانون سازوں نے بورس جانسن کی جانب سے ملکہ الزبتھ دوم کو بریگزٹ پر غور کرنے کے لیے پارلیمنٹ معطل کرنے کی درخواسے دینے کو غیر قانونی قرار دینے سے متعلق عدالت میں اپیل کی تھی۔
تاہم 4 ستمبر کو سیشن کورٹ کے جج لارڈ ڈوہرتی نے بورس جانسن کے فیصلے کو غیرقانونی قرار دینے کی اپیل مسترد کردی تھی اور کہا تھا کہ یہ فیصلہ سیاست دان کرتے ہیں عدالتیں نہیں کرتیں۔

2 روز قبل اسکاٹ لینڈ میں واقع سول سپریم کورٹ کے انر ہاؤس کے 3 ججز نے لارڈ ڈوہرتی کے فیصلے سے اختلاف کیا تھا۔


دوران سماعت جج لارڈ کارلوے نے بتایا کہ ’ ہم سمجھتے ہیں کہ وزیراعظم بورس جانسن کی جانب سے ملکہ الزبتھ دوم کو پارلیمنٹ معطلی کی درخواست کرنا غیر قانونی ہے اور پارلیمنٹ معطل کرنا بھی غیر قانونی ہے‘۔

اس حوالے سے بورس جانسن کی حکومت کے ترجمان نے کہا کہ وہ عدالت کے فیصلے سے مایوس ہوئے ہیں اور سپریم کورٹ میں اس کے خلاف اپیل دائر کریں گے ۔
انہوں نے کہا کہ’ برطانوی حکومت کو مضبوط قانونی لائحہ عمل پیش کرنے کی ضرورت ہے، ایسا کرنے کے لیے پارلیمنٹ معطل کرنا قانونی اور ضروری راستہ ہے‘۔
گزشتہ ہفتے لندن کی ہائی کورٹ میں پارلیمنٹ معطل کرنے کے فیصلے کو چیلنج کیا گیا تھا جسے عدالت نے مسترد کردیا تھا۔

برطانوی حکومت نے عدالت کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ میں اپیل دائر کردی جو 17 ستمبر کو سماعت کے لیے مقرر کی گئی ہے۔

تاہم اس دوران عدالت کی جانب سے معطلی کو غیرقانونی قرار دینے کے باوجود برطانوی پارلیمنٹ معطل رہے گی۔

بورس جانسن کا کہنا ہے کہ 14 اکتوبر تک پارلیمنٹ معطل کرنے کا فیصلہ حکومت کو آئندہ کا نیا لائحہ عمل تیار کرنے کے تناظر میں معمول کا اقدام ہے۔
دوسری جانب ناقدین بورس جانسن کے اس اقدام کو 31 اکتوبر کو یورپی یونین سے علیحدہ ہونے کے منصوبے پر اپوزیشن کو خاموش کروانے کی کوشش قرار دے رہے ہیں کیونکہ برطانوی وزیراعظم برسلز کی جانب سے بریگزٹ کی شرائط پر متفق نہیں ہیں۔

بورس جانسن کا کہنا ہے کہ وہ معاہدے کی کوشش کررہے لیکن برطانیہ کو کسی معاہدے کے بغیر یورپی یونین سے الگ ہوجانا چاہیے تاہم ارکان پارلیمنٹ کو خدشہ ہے کہ بے قاعدہ علیحدگی سے بڑے پیمانے پر تباہی ہوگی۔

6 ستمبر کو برطانیہ کے ایوانِ بالا نے وزیراعظم بورس جانسن کو بریگزٹ میں تاخیر کرنے پر مجبور کرنے کے لیے قانون کو حتمی منظوری تھی۔
اس قانون کے مطابق اگر برطانوی وزیر اعظم یورپی یونین کے ساتھ بریگزٹ معاہدہ کرنے میں ناکام ہوگئے تو یورپی یونین سے برطانیہ کے اخراج کی حالیہ حتمی مدت 31 اکتوبر سے آگے بڑھا دی جائے گی۔

تاہم باقاعدہ حکم جاری ہونے کے بعد اپوزیشن جماعت لیبر پارٹی نے وزیراعظم سے ارکان اسمبلی کو واپس آنے کی اجازت دینے کا مطالبہ کیا تھا۔
بریگزٹ ترجمان کائر اسٹارمر نے کہا تھا کہ ’ میں وزیراعظم پر زور دیتا ہے کہ فوری طور پر پارلیمںٹ دوبارہ طلب کی جائے تاکہ اس فیصلے پر بحث کی جائے اور آئندہ لائحہ عمل طے کیا جائے‘۔

تاہم حکومتی ذرائع نے بتایا کہ کیس کا فیصلہ ہونے تک کچھ بھی تبدیل نہیں ہوگا۔
مختلف جماعتوں کے ارکان پارلیمنٹ نے آج دارالعوام کے باہر احتجاج کیا اور کہا کہ وہ اپنی نشستیں واپس لینے کے لیے تیار ہیں۔
خیال رہے کہ اگست کے اواخر میں برطانیہ کی ملکہ الزبتھ دوم نے یورپی یونین سے علیحدگی (بریگزٹ) کے معاملے پر وزیراعظم بورس جونسن کی درخواست پر پارلیمنٹ معطل کرنے کی منظوری دی تھی۔

بورس جونسن بطور وزیراعظم

واضح رہے کہ بورس جونسن نے وزارت عظمیٰ کا عہدہ سنبھالنے کے بعد کہا تھا کہ ’ ہم ملک کو متحرک کرنے جارہے ہیں، ہم 31 اکتوبر تک یورپی یونین سے علیحدہ ہوجائیں گے اور اس سلسلے میں ہم ایک تمام مواقع سے فائدہ اٹھائیں گے‘۔

بورس جانسن نے کہا تھا کہ ہم بہتر تعلیم، بہتر انفراسٹرکچر، مزید پولیس کے ذریعے خود اعتمادی کے فقدان اور منفی تاثر کا خاتمہ کریں گے۔


ان کا کہنا تھا کہ ہم اس حیرت انگیز ملک کو متحد کرنے جارہے ہیں اور ہم اسے مزید آگے لے کر جائیں گے۔
یاد رہے کہ سابق برطانوی وزیراعظم تھریسامے نے 24 مئی کو انتہائی جذباتی انداز میں اعلان کیا تھا کہ وہ 7 جون کو وزیراعظم اور حکمراں جماعت کنزرویٹو اور یونینسٹ پارٹی کی رہنما کے عہدے سے
مستعفی ہوجائیں


 
Advertisement
Last edited by a moderator:

Dr Adam

Chief Minister (5k+ posts)
عدالت نے برطانوی پارلیمنٹ معطل کرنے کا فیصلہ غیر قانونی قرار دے دیا


برطانوی وزیراعظم کے لیے یہ فیصلہ بہت بڑا دھچکا ہے — فائل فوٹو/ رائٹرز
اسکاٹ لینڈ کی سپریم سول کورٹ نے برطانوی وزیراعظم بورس جانسن کی جانب سے پارلیمنٹ معطل کرنے کے فیصلے کو غیر قانونی قرار دیا جو برطانوی حکومت کے لیے بہت بڑا دھچکا ہے۔

فرانسیسی خبررساں ادارے ’ اے ایف پی‘ کی رپورٹ کے مطابق برطانیہ کے 78 قانون سازوں نے بورس جانسن کی جانب سے ملکہ الزبتھ دوم کو بریگزٹ پر غور کرنے کے لیے پارلیمنٹ معطل کرنے کی درخواسے دینے کو غیر قانونی قرار دینے سے متعلق عدالت میں اپیل کی تھی۔
تاہم 4 ستمبر کو سیشن کورٹ کے جج لارڈ ڈوہرتی نے بورس جانسن کے فیصلے کو غیرقانونی قرار دینے کی اپیل مسترد کردی تھی اور کہا تھا کہ یہ فیصلہ سیاست دان کرتے ہیں عدالتیں نہیں کرتیں۔

2 روز قبل اسکاٹ لینڈ میں واقع سول سپریم کورٹ کے انر ہاؤس کے 3 ججز نے لارڈ ڈوہرتی کے فیصلے سے اختلاف کیا تھا۔


دوران سماعت جج لارڈ کارلوے نے بتایا کہ ’ ہم سمجھتے ہیں کہ وزیراعظم بورس جانسن کی جانب سے ملکہ الزبتھ دوم کو پارلیمنٹ معطلی کی درخواست کرنا غیر قانونی ہے اور پارلیمنٹ معطل کرنا بھی غیر قانونی ہے‘۔

اس حوالے سے بورس جانسن کی حکومت کے ترجمان نے کہا کہ وہ عدالت کے فیصلے سے مایوس ہوئے ہیں اور سپریم کورٹ میں اس کے خلاف اپیل دائر کریں گے ۔
انہوں نے کہا کہ’ برطانوی حکومت کو مضبوط قانونی لائحہ عمل پیش کرنے کی ضرورت ہے، ایسا کرنے کے لیے پارلیمنٹ معطل کرنا قانونی اور ضروری راستہ ہے‘۔
گزشتہ ہفتے لندن کی ہائی کورٹ میں پارلیمنٹ معطل کرنے کے فیصلے کو چیلنج کیا گیا تھا جسے عدالت نے مسترد کردیا تھا۔

برطانوی حکومت نے عدالت کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ میں اپیل دائر کردی جو 17 ستمبر کو سماعت کے لیے مقرر کی گئی ہے۔

تاہم اس دوران عدالت کی جانب سے معطلی کو غیرقانونی قرار دینے کے باوجود برطانوی پارلیمنٹ معطل رہے گی۔

بورس جانسن کا کہنا ہے کہ 14 اکتوبر تک پارلیمنٹ معطل کرنے کا فیصلہ حکومت کو آئندہ کا نیا لائحہ عمل تیار کرنے کے تناظر میں معمول کا اقدام ہے۔
دوسری جانب ناقدین بورس جانسن کے اس اقدام کو 31 اکتوبر کو یورپی یونین سے علیحدہ ہونے کے منصوبے پر اپوزیشن کو خاموش کروانے کی کوشش قرار دے رہے ہیں کیونکہ برطانوی وزیراعظم برسلز کی جانب سے بریگزٹ کی شرائط پر متفق نہیں ہیں۔

بورس جانسن کا کہنا ہے کہ وہ معاہدے کی کوشش کررہے لیکن برطانیہ کو کسی معاہدے کے بغیر یورپی یونین سے الگ ہوجانا چاہیے تاہم ارکان پارلیمنٹ کو خدشہ ہے کہ بے قاعدہ علیحدگی سے بڑے پیمانے پر تباہی ہوگی۔

6 ستمبر کو برطانیہ کے ایوانِ بالا نے وزیراعظم بورس جانسن کو بریگزٹ میں تاخیر کرنے پر مجبور کرنے کے لیے قانون کو حتمی منظوری تھی۔
اس قانون کے مطابق اگر برطانوی وزیر اعظم یورپی یونین کے ساتھ بریگزٹ معاہدہ کرنے میں ناکام ہوگئے تو یورپی یونین سے برطانیہ کے اخراج کی حالیہ حتمی مدت 31 اکتوبر سے آگے بڑھا دی جائے گی۔

تاہم باقاعدہ حکم جاری ہونے کے بعد اپوزیشن جماعت لیبر پارٹی نے وزیراعظم سے ارکان اسمبلی کو واپس آنے کی اجازت دینے کا مطالبہ کیا تھا۔
بریگزٹ ترجمان کائر اسٹارمر نے کہا تھا کہ ’ میں وزیراعظم پر زور دیتا ہے کہ فوری طور پر پارلیمںٹ دوبارہ طلب کی جائے تاکہ اس فیصلے پر بحث کی جائے اور آئندہ لائحہ عمل طے کیا جائے‘۔

تاہم حکومتی ذرائع نے بتایا کہ کیس کا فیصلہ ہونے تک کچھ بھی تبدیل نہیں ہوگا۔
مختلف جماعتوں کے ارکان پارلیمنٹ نے آج دارالعوام کے باہر احتجاج کیا اور کہا کہ وہ اپنی نشستیں واپس لینے کے لیے تیار ہیں۔
خیال رہے کہ اگست کے اواخر میں برطانیہ کی ملکہ الزبتھ دوم نے یورپی یونین سے علیحدگی (بریگزٹ) کے معاملے پر وزیراعظم بورس جونسن کی درخواست پر پارلیمنٹ معطل کرنے کی منظوری دی تھی۔

بورس جونسن بطور وزیراعظم

واضح رہے کہ بورس جونسن نے وزارت عظمیٰ کا عہدہ سنبھالنے کے بعد کہا تھا کہ ’ ہم ملک کو متحرک کرنے جارہے ہیں، ہم 31 اکتوبر تک یورپی یونین سے علیحدہ ہوجائیں گے اور اس سلسلے میں ہم ایک تمام مواقع سے فائدہ اٹھائیں گے‘۔

بورس جانسن نے کہا تھا کہ ہم بہتر تعلیم، بہتر انفراسٹرکچر، مزید پولیس کے ذریعے خود اعتمادی کے فقدان اور منفی تاثر کا خاتمہ کریں گے۔


ان کا کہنا تھا کہ ہم اس حیرت انگیز ملک کو متحد کرنے جارہے ہیں اور ہم اسے مزید آگے لے کر جائیں گے۔
یاد رہے کہ سابق برطانوی وزیراعظم تھریسامے نے 24 مئی کو انتہائی جذباتی انداز میں اعلان کیا تھا کہ وہ 7 جون کو وزیراعظم اور حکمراں جماعت کنزرویٹو اور یونینسٹ پارٹی کی رہنما کے عہدے سے مستعفی ہوجائیں




Off late this country Britain has also become a Banana Republic.
 

Zaidi Qasim

Chief Minister (5k+ posts)
Seems like the British Judiciary is not sold out contrary to what Pakistani Khota justice is busy doing .
 

Imran the legend

Chief Minister (5k+ posts)
Seems like the British Judiciary is not sold out contrary to what Pakistani Khota justice is busy doing .
ITS fault of corrupt 3 times Prime Minister Thief’s nawaz sharif made judges corrupt media corrupt also zardari corrupt both rules 35 Years no human development just corruption A To Z because the rulers were corrupt and then dog eating Patwaris blindly worship them. It’s not your fault your parents fault didn’t send you school properly so you became Dungar pmln animal
 

Zaidi Qasim

Chief Minister (5k+ posts)
ITS fault of corrupt 3 times Prime Minister Thief’s nawaz sharif made judges corrupt media corrupt also zardari corrupt both rules 35 Years no human development just corruption A To Z because the rulers were corrupt and then dog eating Patwaris blindly worship them. It’s not your fault your parents fault didn’t send you school properly so you became Dungar pmln animal
Its fault of your biological father Pasha and your grandfather Musharraf who not only screwed up the Judges but also continue to screw the Judiciary and the Constitution .

The kind of human development during their dictatorship produced somewhat of a ripe Kuddo like you who will continue to suck their private parts even after their retirement . Now, your new Chacha Ejaz Shah rejuvenated again and screwing the rest of the country after getting a post from Bongi Khan . Obviously , a filth like you have many fathers otherwise you wouldn't be spending your precious time defending your bastard daddies everyday .
 

Imran the legend

Chief Minister (5k+ posts)
Its fault of your biological father Pasha and your grandfather Musharraf who not only screwed up the Judges but also continue to screw the Judiciary and the Constitution .

The kind of human development during their dictatorship produced somewhat of a ripe Kuddo like you who will continue to suck their private parts even after their retirement . Now, your new Chacha Ejaz Shah rejuvenated again and screwing the rest of the country after getting a post from Bongi Khan . Obviously , a filth like you have many fathers otherwise you wouldn't be spending your precious time defending your bastard daddies everyday .
It’s fault of your Haraam kor leaders for looting the country and making you blind followers fools you guys are so stupid they go abroad for there health and you still willing to lick there dirty corrupt arses like Hungary dogs slave brains. Can only be 2 reasons no educations and so stupid and brain dead that you don’t understand right and wrong. What ever the corrupt mafia feeds in your tiny brains you blindly follow it
 

Zaidi Qasim

Chief Minister (5k+ posts)
It’s fault of your Haraam kor leaders for looting the country and making you blind followers fools you guys are so stupid they go abroad for there health and you stick willing to lick there dirty corrupt arses like Hungary dogs slave brains
It is fault of your grand grand Father Yehya and Ayub who screwed not only the nation but also Fatima Jinnah by rigging the election as same as they rigged it for Bongi Khan . As the saying goes in Urdu , Mar Gaye Murdood aur pochay choor gaye chailay like you who are still screwing the country with many Yehyas and Ayubs.
 

Xiggs

Chief Minister (5k+ posts)
100 jootay 100 piyaz khanay ke baad bhi UK EU ka member hi rehnay wala hai.
 

aamirza44

Voter (50+ posts)
It is fault of your grand grand Father Yehya and Ayub who screwed not only the nation but also Fatima Jinnah by rigging the election as same as they rigged it for Bongi Khan . As the saying goes in Urdu , Mar Gaye Murdood aur pochay choor gaye chailay like you who are still screwing the country with many Yehyas and Ayubs.
زیدی کتا ہا
 
Sponsored Link

Latest Blogs Featured Discussion