PM Imran khan controversial statement on Ghazwa e Badr o Uhud - Tahir Ashrafi Reply to Imran Khan

Messag Islamictv Pakistan

Politcal Worker (100+ posts)
Be careful on religious issues ! Request to PM Imran khan by Maulana Zahid ur Rashdi - IK Statement


وزیراعظم عمران خان نے اپنے خطاب کے دوران غزوہ بدر اور غزوہ احد کا ذکر کرتے ہوئےصحابہ کرام رضی اللہ عنہم کے حوالے سے متنازعہ گفتگو کی , مذہبی معاملات میں اعلیٰ وعہدوں پر فائز لوگ اس طرح کی گفتگو کیوں کرتے ہیں ؟ اس پر مولانا زاہد الراشدی کا بہترین تجزیہ اور تجاویز
 

Citizen X

Chief Minister (5k+ posts)
Bus issi cheez ki kammi thi, mullahon ko mirchay lagney ki dair thi. Bus duniya mein moulvi hazrat Islam ki baat ker sakthe hai baki har shaqs pe ban honi chaiye in ka bus chale tho. Hamesha apni rozi roti ki fikr pardi rehte hai.

Agar har aadmi ne apna deen seekh liya to phir inko koi lift nahi karaye ga, is liye awaam kojahil rakho kissi aur ko baat na kerne do aur apni rozi roti mehfooz karo.
 

Ayaz Ahmed

MPA (400+ posts)
شکر ہے عمران کی 33 منٹوں کی تقریر میں اسلام کے ٹھیکیداروں کو اپنے دل کی بھڑاس نکالنے کے لیے کچھ مرچ مصالحہ تو مل گیا۔۔۔باقی تو نماز بھی نہیں پڑھنی، روزے بھی نہیں رکھنے لیکن دین کا علم 'سربلند' رکھنے کے لیے ہر وقت تیار رہتے ہیں۔

سب جانتے ہیں کہ عمران کی اردو کمزور ہے اور شائد اسلامی کتابیں بھی انگریزی میں پڑھتا ہو۔۔۔وہ اکثر بولتا ہے 'مجھے اللہ میں ایمان ہے' حالانکہ صحیح فقرہ یہ ہونا چاہیے کہ مجھے اللہ پر ایمان لیکن چونکہ انگریزی میں لکھا جاتا ہے کہ
I believe in Allah

اس لیے اردو میں بھی ایسا ہی ترجمہ کر دیتا ہے۔ جیسے قائد اعظم اگر کہتے کہ 'مجھے بہت فخر ہے' تو کہتے 'میں بہت مغرور ہوں' کیونکہ انگریزی میں بولا جاتا ہے کہ
I feel very proud.

تو یہ 'لوٹ مار' والی بات بھی ترجمے کی غلطی کا شاخسانہ لگتی ہے۔۔۔.۔۔۔

انگریزی لفظ
Booty

کا ترجمہ اردو دان تو مال غنیمت کر لیتے ہیں لیکن صحیح ترجمہ جنگ کے دوران 'لوٹ مار' ہی بنتا ہے۔

اور ڈرنے والی بات منافقین کے بارے میں تھی۔ منافقین جنگ سے ڈرتے تھے جسکا ذکر قرآن میں بھی آیا ہے۔

اور غزوہ احد کے دوران وہ راستے سے واپس بھی ہوگئے تھے۔

یہ بھی پڑھے۔

اسی آیت میں اُن صحابہ کا ذکر ہے جو جنگ کے حق میں نہیں تھے یعنی ابوجہل کی لشکر کا سُن کر ڈر گئے تھے جنگ بدر۔
سورہ انفال۔
کَمَاۤ اَخۡرَجَکَ رَبُّکَ مِنۡۢ بَیۡتِکَ بِالۡحَقِّ ۪ وَ اِنَّ فَرِیۡقًا مِّنَ الۡمُؤۡمِنِیۡنَ لَکٰرِہُوۡنَ ۙ﴿۵﴾
جیسا کہ آپ کے رب نے آپ کے گھر سے حق کے ساتھ آپ کو روانہ کیا اور مسلمانوں کی ایک جماعت اس کو گراں سمجھتی تھی ۔

تفسیر مفتی تقی عثمانی۔
جن لوگوں نے مالِ غنیمت جمع کیا تھا، ان کی خواہش یہ تھی کہ یہ مال انہی کے پاس رہے، لیکن فیصلہ اس کے برعکس ہوا، اب ان کو تسلی دی جارہی ہے کہ اِنسان کی ہر خواہش انجام کے اعتبار سے درست نہیں ہوتی۔ اسے بعد میں پتہ چلتا ہے کہ جو واقعہ اس کی خواہش کے خلاف ہوا، بہتری اسی میں تھی۔ اور ایسا ہی ہے جیسے ابوجہل سے جنگ کرنے کا معاملہ میں ہوا، مدینہ منوَّرہ سے نکلتے وقت چونکہ صرف ابوسفیان کے قافلے پر حملہ کرنا پیش نظر تھا، اور کوئی باقاعدہ لشکر تیار نہیں کیا گیا تھا، اس لئے جب یہ بات سامنے آئی کہ ابوجہل ایک بڑا لشکر لے کر مقابلے پر آگیا ہے تو بعض صحابہؓ کی خواہش یہ تھی کہ ابوجہل سے جنگ کرنے کے بجائے فی الحال واپس چلے جائیں، کیونکہ اس بے سروسامانی کی حالت میں ایک مسلح فوج کا مقابلہ موت کے منہ میں جانے کے مرادف ہوگا۔

جنگ احد ۔۔
جنگ احد میں بعض صحابہ کرام سے غلطی ہوئی تھی اور وہ مال غنیمت کی لالچ میں اپنا مورچہ جس کے بارے میں پیارے نبی ص نے کہا تھا کہ یہ مورچہ نہیں چھوڑنا جب تک میں نہ کہوں لیکن اُنہوں نے خلاف حکم مورچہ چھوڑ کر لوٹ مار میں مصروف ہوگئے

'' اور خدا نے اپنا وعدہ سچا کر دکھایا ، یعنی اس وقت جب کہ تم کافروں کو اس کے حکم سے قتل کر رہے تھے ، یہاں تک کہ جو تم چاہتے تھے ، خدا نے تم کو دکھایا ، اس کے بعد تم نے ہمت ہار دی ، اور حکم پیغمبر ع میں جھگڑا کرنے لگے اور اس کی نافرمانی کی ، بعض تو تم میں سے دنیا کے خواستگار تھے ، بعض آخرت کے طالب ، اس وقت خدا نے تم کو ان کے مقابلہ میں پھیر ( کر بھگا) دیا تا کہ تمہاری آزمائش کرے ، اور اس نے تمہارا قصور معاف کردیا ، اور خدا مؤمنوں پر بڑا فضل کرنے والا ہے ۔''
( آل عمران : 152 )

جب تم (افراتفری کی حالت میں) بھاگے جا رہے تھے اور کسی کو مڑ کر نہیں دیکھتے تھے اور رسول (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) اس جماعت میں (کھڑے) جو تمہارے پیچھے (ثابت قدم) رہی تھی تمہیں پکار رہے تھے پھر اس نے تمہیں غم پر غم دیا (یہ نصیحت و تربیت تھی) تاکہ تم اس پر جو تمہارے ہاتھ سے جاتا رہا اور اس مصیبت پر جو تم پر آن پڑی رنج نہ کرو اور اللہ تمہارے کاموں سے خبردار ہے۔
سورۃ آل عمران آیت 153

خدارہ کسی پر گستاخی کا الزام لگانے سے پہلے کچھ پڑھ لیا کریں۔


اللہ آپکو بھی ہدایت عطا فرمائے اور آپکے خان کو بھی۔
 

Ayaz Ahmed

MPA (400+ posts)
اگر کسی کو یاد ہو کہ فیاض الحسن چوہان کی چھٹی ایک صحیح بات کرنے پر ہوئی، صرف اس لئے کہ مذہب کے بارے میں اس طرح بات کرنا بلکل مناسب نہیں،

لیکن دین اسلام کے حوالے سے کوئی بھی کچھ بھی بات کردے تو اسکوکیا صرف غلطی کہہ کر خاموشی اختیار کر لی جائے، اور خان صاحب جو مدینہ کی ریاست کے دعویدار ہیں انکو تو بہت ہی زیادہ احتیاط سے بات کرنی چاہیے دینی معاملات میں، غلطی سے غلطی کی معافی ہو سکتی ہے، لیکن جان بوجھ کر بار بار غلطی؟؟؟؟
 

Husaink

Chief Minister (5k+ posts)
PM Imran khan controversial statement on Ghazwa e Badr o Uhud - Tahir Ashrafi Reply to Imran Khan


وزیراعظم عمران خان نے اپنے خطاب کے دوران غزوہ بدر اور غزوہ احد کے حوالے سے متنازعہ گفتگو کی جس پر مسلمانوں میں تشویش پائی جارہی ہے اسی حوالے سے پاکستان علماء کونسل کے چیئرمین حافظ طاہر محمود اشرفی گفتگو کررہے ہیں
سارے مکتبہ فکر کے علماء کو ایک جگہ بٹھا کر صرف وضو کرنے کا طریقے پوچھ لیں وہ جوتیوں میں دال بٹے گی کہ خدا کی پناہ
 

Zaidi Qasim

Chief Minister (5k+ posts)
شکر ہے عمران کی 33 منٹوں کی تقریر میں اسلام کے ٹھیکیداروں کو اپنے دل کی بھڑاس نکالنے کے لیے کچھ مرچ مصالحہ تو مل گیا۔۔۔باقی تو نماز بھی نہیں پڑھنی، روزے بھی نہیں رکھنے لیکن دین کا علم 'سربلند' رکھنے کے لیے ہر وقت تیار رہتے ہیں۔

سب جانتے ہیں کہ عمران کی اردو کمزور ہے اور شائد اسلامی کتابیں بھی انگریزی میں پڑھتا ہو۔۔۔وہ اکثر بولتا ہے 'مجھے اللہ میں ایمان ہے' حالانکہ صحیح فقرہ یہ ہونا چاہیے کہ مجھے اللہ پر ایمان لیکن چونکہ انگریزی میں لکھا جاتا ہے کہ
I believe in Allah

اس لیے اردو میں بھی ایسا ہی ترجمہ کر دیتا ہے۔ جیسے قائد اعظم اگر کہتے کہ 'مجھے بہت فخر ہے' تو کہتے 'میں بہت مغرور ہوں' کیونکہ انگریزی میں بولا جاتا ہے کہ
I feel very proud.

تو یہ 'لوٹ مار' والی بات بھی ترجمے کی غلطی کا شاخسانہ لگتی ہے۔۔۔.۔۔۔

انگریزی لفظ
Booty

کا ترجمہ اردو دان تو مال غنیمت کر لیتے ہیں لیکن صحیح ترجمہ جنگ کے دوران 'لوٹ مار' ہی بنتا ہے۔

اور ڈرنے والی بات منافقین کے بارے میں تھی۔ منافقین جنگ سے ڈرتے تھے جسکا ذکر قرآن میں بھی آیا ہے۔

اور غزوہ احد کے دوران وہ راستے سے واپس بھی ہوگئے تھے۔

یہ بھی پڑھے۔

اسی آیت میں اُن صحابہ کا ذکر ہے جو جنگ کے حق میں نہیں تھے یعنی ابوجہل کی لشکر کا سُن کر ڈر گئے تھے جنگ بدر۔
سورہ انفال۔
کَمَاۤ اَخۡرَجَکَ رَبُّکَ مِنۡۢ بَیۡتِکَ بِالۡحَقِّ ۪ وَ اِنَّ فَرِیۡقًا مِّنَ الۡمُؤۡمِنِیۡنَ لَکٰرِہُوۡنَ ۙ﴿۵﴾
جیسا کہ آپ کے رب نے آپ کے گھر سے حق کے ساتھ آپ کو روانہ کیا اور مسلمانوں کی ایک جماعت اس کو گراں سمجھتی تھی ۔

تفسیر مفتی تقی عثمانی۔
جن لوگوں نے مالِ غنیمت جمع کیا تھا، ان کی خواہش یہ تھی کہ یہ مال انہی کے پاس رہے، لیکن فیصلہ اس کے برعکس ہوا، اب ان کو تسلی دی جارہی ہے کہ اِنسان کی ہر خواہش انجام کے اعتبار سے درست نہیں ہوتی۔ اسے بعد میں پتہ چلتا ہے کہ جو واقعہ اس کی خواہش کے خلاف ہوا، بہتری اسی میں تھی۔ اور ایسا ہی ہے جیسے ابوجہل سے جنگ کرنے کا معاملہ میں ہوا، مدینہ منوَّرہ سے نکلتے وقت چونکہ صرف ابوسفیان کے قافلے پر حملہ کرنا پیش نظر تھا، اور کوئی باقاعدہ لشکر تیار نہیں کیا گیا تھا، اس لئے جب یہ بات سامنے آئی کہ ابوجہل ایک بڑا لشکر لے کر مقابلے پر آگیا ہے تو بعض صحابہؓ کی خواہش یہ تھی کہ ابوجہل سے جنگ کرنے کے بجائے فی الحال واپس چلے جائیں، کیونکہ اس بے سروسامانی کی حالت میں ایک مسلح فوج کا مقابلہ موت کے منہ میں جانے کے مرادف ہوگا۔

جنگ احد ۔۔
جنگ احد میں بعض صحابہ کرام سے غلطی ہوئی تھی اور وہ مال غنیمت کی لالچ میں اپنا مورچہ جس کے بارے میں پیارے نبی ص نے کہا تھا کہ یہ مورچہ نہیں چھوڑنا جب تک میں نہ کہوں لیکن اُنہوں نے خلاف حکم مورچہ چھوڑ کر لوٹ مار میں مصروف ہوگئے

'' اور خدا نے اپنا وعدہ سچا کر دکھایا ، یعنی اس وقت جب کہ تم کافروں کو اس کے حکم سے قتل کر رہے تھے ، یہاں تک کہ جو تم چاہتے تھے ، خدا نے تم کو دکھایا ، اس کے بعد تم نے ہمت ہار دی ، اور حکم پیغمبر ع میں جھگڑا کرنے لگے اور اس کی نافرمانی کی ، بعض تو تم میں سے دنیا کے خواستگار تھے ، بعض آخرت کے طالب ، اس وقت خدا نے تم کو ان کے مقابلہ میں پھیر ( کر بھگا) دیا تا کہ تمہاری آزمائش کرے ، اور اس نے تمہارا قصور معاف کردیا ، اور خدا مؤمنوں پر بڑا فضل کرنے والا ہے ۔''
( آل عمران : 152 )

جب تم (افراتفری کی حالت میں) بھاگے جا رہے تھے اور کسی کو مڑ کر نہیں دیکھتے تھے اور رسول (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) اس جماعت میں (کھڑے) جو تمہارے پیچھے (ثابت قدم) رہی تھی تمہیں پکار رہے تھے پھر اس نے تمہیں غم پر غم دیا (یہ نصیحت و تربیت تھی) تاکہ تم اس پر جو تمہارے ہاتھ سے جاتا رہا اور اس مصیبت پر جو تم پر آن پڑی رنج نہ کرو اور اللہ تمہارے کاموں سے خبردار ہے۔
سورۃ آل عمران آیت 153

خدارہ کسی پر گستاخی کا الزام لگانے سے پہلے کچھ پڑھ لیا کریں۔

کون کہہ رہا ہے کہ بونگی خان عالم دین ہے ، عمران کی اردو نہیں زبان بے قابو ہے ۔ لوگ کہتے ہیں کہ سوچو اور پھر بولو ۔ یہ بولتا پہلے ہے اور سوچتا ہے نہیں اور پھر تم جیسے ترجمان آکر وضاحت دینا شروع کر دیتے ہیں ۔ یہ بونگے خان کی ایک اور بونگی ہے ، جس طرح اسے بونگیوں کی عادت ہے ، یہی سمجھ کر آگے بڑھ جانا چاہیے ۔ لوٹ مار اور ڈاکو جیسے لفظ تو اسکی زبان پہ رٹے ہوئے ہیں ۔ نہ وقت دیکھتا ہے اور نہ مقام ، کنٹینر کی زبان آسانی سے چھٹتی نہیں ۔


 

karachiwala

Chief Minister (5k+ posts)
شکر ہے عمران کی 33 منٹوں کی تقریر میں اسلام کے ٹھیکیداروں کو اپنے دل کی بھڑاس نکالنے کے لیے کچھ مرچ مصالحہ تو مل گیا۔۔۔باقی تو نماز بھی نہیں پڑھنی، روزے بھی نہیں رکھنے لیکن دین کا علم 'سربلند' رکھنے کے لیے ہر وقت تیار رہتے ہیں۔

سب جانتے ہیں کہ عمران کی اردو کمزور ہے اور شائد اسلامی کتابیں بھی انگریزی میں پڑھتا ہو۔۔۔وہ اکثر بولتا ہے 'مجھے اللہ میں ایمان ہے' حالانکہ صحیح فقرہ یہ ہونا چاہیے کہ مجھے اللہ پر ایمان لیکن چونکہ انگریزی میں لکھا جاتا ہے کہ
I believe in Allah

اس لیے اردو میں بھی ایسا ہی ترجمہ کر دیتا ہے۔ جیسے قائد اعظم اگر کہتے کہ 'مجھے بہت فخر ہے' تو کہتے 'میں بہت مغرور ہوں' کیونکہ انگریزی میں بولا جاتا ہے کہ
I feel very proud.

تو یہ 'لوٹ مار' والی بات بھی ترجمے کی غلطی کا شاخسانہ لگتی ہے۔۔۔.۔۔۔

انگریزی لفظ
Booty

کا ترجمہ اردو دان تو مال غنیمت کر لیتے ہیں لیکن صحیح ترجمہ جنگ کے دوران 'لوٹ مار' ہی بنتا ہے۔

اور ڈرنے والی بات منافقین کے بارے میں تھی۔ منافقین جنگ سے ڈرتے تھے جسکا ذکر قرآن میں بھی آیا ہے۔

اور غزوہ احد کے دوران وہ راستے سے واپس بھی ہوگئے تھے۔

یہ بھی پڑھے۔

اسی آیت میں اُن صحابہ کا ذکر ہے جو جنگ کے حق میں نہیں تھے یعنی ابوجہل کی لشکر کا سُن کر ڈر گئے تھے جنگ بدر۔
سورہ انفال۔
کَمَاۤ اَخۡرَجَکَ رَبُّکَ مِنۡۢ بَیۡتِکَ بِالۡحَقِّ ۪ وَ اِنَّ فَرِیۡقًا مِّنَ الۡمُؤۡمِنِیۡنَ لَکٰرِہُوۡنَ ۙ﴿۵﴾
جیسا کہ آپ کے رب نے آپ کے گھر سے حق کے ساتھ آپ کو روانہ کیا اور مسلمانوں کی ایک جماعت اس کو گراں سمجھتی تھی ۔

تفسیر مفتی تقی عثمانی۔
جن لوگوں نے مالِ غنیمت جمع کیا تھا، ان کی خواہش یہ تھی کہ یہ مال انہی کے پاس رہے، لیکن فیصلہ اس کے برعکس ہوا، اب ان کو تسلی دی جارہی ہے کہ اِنسان کی ہر خواہش انجام کے اعتبار سے درست نہیں ہوتی۔ اسے بعد میں پتہ چلتا ہے کہ جو واقعہ اس کی خواہش کے خلاف ہوا، بہتری اسی میں تھی۔ اور ایسا ہی ہے جیسے ابوجہل سے جنگ کرنے کا معاملہ میں ہوا، مدینہ منوَّرہ سے نکلتے وقت چونکہ صرف ابوسفیان کے قافلے پر حملہ کرنا پیش نظر تھا، اور کوئی باقاعدہ لشکر تیار نہیں کیا گیا تھا، اس لئے جب یہ بات سامنے آئی کہ ابوجہل ایک بڑا لشکر لے کر مقابلے پر آگیا ہے تو بعض صحابہؓ کی خواہش یہ تھی کہ ابوجہل سے جنگ کرنے کے بجائے فی الحال واپس چلے جائیں، کیونکہ اس بے سروسامانی کی حالت میں ایک مسلح فوج کا مقابلہ موت کے منہ میں جانے کے مرادف ہوگا۔

جنگ احد ۔۔
جنگ احد میں بعض صحابہ کرام سے غلطی ہوئی تھی اور وہ مال غنیمت کی لالچ میں اپنا مورچہ جس کے بارے میں پیارے نبی ص نے کہا تھا کہ یہ مورچہ نہیں چھوڑنا جب تک میں نہ کہوں لیکن اُنہوں نے خلاف حکم مورچہ چھوڑ کر لوٹ مار میں مصروف ہوگئے

'' اور خدا نے اپنا وعدہ سچا کر دکھایا ، یعنی اس وقت جب کہ تم کافروں کو اس کے حکم سے قتل کر رہے تھے ، یہاں تک کہ جو تم چاہتے تھے ، خدا نے تم کو دکھایا ، اس کے بعد تم نے ہمت ہار دی ، اور حکم پیغمبر ع میں جھگڑا کرنے لگے اور اس کی نافرمانی کی ، بعض تو تم میں سے دنیا کے خواستگار تھے ، بعض آخرت کے طالب ، اس وقت خدا نے تم کو ان کے مقابلہ میں پھیر ( کر بھگا) دیا تا کہ تمہاری آزمائش کرے ، اور اس نے تمہارا قصور معاف کردیا ، اور خدا مؤمنوں پر بڑا فضل کرنے والا ہے ۔''
( آل عمران : 152 )

جب تم (افراتفری کی حالت میں) بھاگے جا رہے تھے اور کسی کو مڑ کر نہیں دیکھتے تھے اور رسول (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) اس جماعت میں (کھڑے) جو تمہارے پیچھے (ثابت قدم) رہی تھی تمہیں پکار رہے تھے پھر اس نے تمہیں غم پر غم دیا (یہ نصیحت و تربیت تھی) تاکہ تم اس پر جو تمہارے ہاتھ سے جاتا رہا اور اس مصیبت پر جو تم پر آن پڑی رنج نہ کرو اور اللہ تمہارے کاموں سے خبردار ہے۔
سورۃ آل عمران آیت 153

خدارہ کسی پر گستاخی کا الزام لگانے سے پہلے کچھ پڑھ لیا کریں۔
I understand Imran has poor grasp of Urdu but when it comes to matters of DEEN it is always better to get some directions before making statements. I accept he made a mistake but should we ignore mistakes and NOT say anything? I am rooting for Imran to succeed but should I ignore suich mistakes? when it comes to matters of Faith then our only relationship should be with Allah and His Prophet SAW and not political affiliations
 

Wake up Pak

Minister (2k+ posts)
Be careful on religious issues ! Request to PM Imran khan by Maulana Zahid ur Rashdi - IK Statement


وزیراعظم عمران خان نے اپنے خطاب کے دوران غزوہ بدر اور غزوہ احد کا ذکر کرتے ہوئےصحابہ کرام رضی اللہ عنہم کے حوالے سے متنازعہ گفتگو کی , مذہبی معاملات میں اعلیٰ وعہدوں پر فائز لوگ اس طرح کی گفتگو کیوں کرتے ہیں ؟ اس پر مولانا زاہد الراشدی کا بہترین تجزیہ اور تجاویز
Yeh mullah deen ka thaikhedar hay kiya
 

ranaji

Prime Minister (20k+ posts)
Kuppi fame sharab kaa Drum moulana genni sahab aap konsay brand ki Islamic peetay hain aap ko yahan UK saay bhaijnay kaa intzam kiya jaiey takeh aap ko peenay aur apna Quota lainay Embassies mai jhakk naa maarni praay , No worries aap ko quota aap ko brabar milta rahay gaa , waisay sharab saay itnaa motapaa nahi hotaa lagtaa hai Beer kaa kamal hai yaa Lager , Shandy waghera kaa ( molana sahab please be English mai ashrafi ko Ginni kehtay hain) good day molana Ginni
 
Sponsored Link

Featured Discussions