Linking to Social Media with Siasat.pk - Haroon ur Rasheed facing Social Media's stiff Questions

BrotherKantu

Chief Minister (5k+ posts)
اس کی

egotistic

دم پر پاؤں رکھو اور اس کی چاؤں چاؤں بند ہی نہیں ہوتی
 

Liaqat Hussain

Chief Minister (5k+ posts)
Solid answers by Haroon sahib

PTI needs to learn to take the criticism and fix their mistakes
Thats the only way to go forward
 
Last edited by a moderator:

sherkhan314

Minister (2k+ posts)
اس کی

egotistic

دم پر پاؤں رکھو اور اس کی چاؤں چاؤں بند ہی نہیں ہوتی

Sold answers by Haroon sahib

PTI needs to learn to take the criticism and fix their mistakes
Thats the only way to go forward

One word
Baba egotistic

I am sure you have never taken a real part in any party politics..once you get the experience of the practical politics you will not give such shallow statements.

ہارون الرشید کا مسئلہ یہ ہے کہ یہ خود کو اکیسویں صدی کا بقراط سمجھتا ہے، اپنی ہر بات کو حرفِ آخر سمجھتا ہے، جنرل کیانی کو دورِ حاضر کا صلاح الدین ایوبی سمجھتا ہے۔ ضروری نہیں کہ تحریک انصاف کے بارے میں اس کا ہر اعتراض درست ہواور نہ ہی ہر اعتراض غلط ہوسکتا ہے، مگر اپنی بات کو حتمی سمجھنا اس کی سب سے بڑی غلطی ہے۔ اسد عمر کی قابلیت پر اعتراض اٹھانے کی کوئی خاص وجہ نہیں بتا سکا۔ اگر وہ تیس اکتوبر کے بعد تحریک انصاف میں آیا تو کیااس کو تحریک انصاف میں نہیں لینا چاہئے تھا، حالانکہ عمران خان بڑے اصرار کے ساتھ اسد عمر کو تحریک انصاف میں لایا۔ نئی جماعت ہونے کے سبب غلطیاں ہونا فطری بات ہے، مگر اس بات کے جھنڈے لہرا دینا کہ تحریک انصاف ایک خوردبرد پارٹی بن چکی ہے اور ہر کالم میں اسی تاثر کو تقویت دینا کہاں کی دانشمندی ہے۔ ایسے نادان دوستوں سے دانا دشمن ہی بہتر ہیں۔ اس بات میں کوئی شک نہیں کہ ہارون الرشید نے بڑے خلوص کے ساتھ تحریک انصاف کا ساتھ نبھایا ، مگر کیا ضروری ہے کہ آپ کی ہر بات کو پارٹی کی پالیسی بنایا جائے۔ آپ کی خواہش پر چلا جائے تو پھر تو عمران خان کو ہٹا کر صلاح الدین ایوبی یعنی کہ جنرل کیانی کو تحریک انصاف کا سربراہ ہونا چاہئے۔
ہارون الرشید صاحب! آپ کا شکریہ کہ آپ نے باضابطہ طور پر اپنے گراں قیمت مشوروں کی پوٹلی کو ہر گھنٹے کی بنیاد پر عمران خان کو بھیجنے کا سلسلہ ترک کردیا۔ اسی میں تحریک انصاف کی بھلائی ہے۔

For me the following observations of Mr Haroon Rasheed are critical for PTI, I hope and pray that PTI makes some timely recommended corrections.
1- Electioneering in Pakistan is never a clean business and every booth and polling station should be maned diligently and any foul play should be highlighted as early and as loudly as possible. With no polling staff present in around 80% of the stations was a gross mistake that has given a big setback to PTI.
2- Sincere and competent leadership at the top is not present in PTI. Had there been a strong central leadership excluding Imran Khan the party would not have suffered as much as it did during the crucial time when Imran Khan was bed ridden.
3- Reorganization of the party is needed especially at the top, power hungry, greedy people no matter how much influential or rich have to be thrown out. Organization has to be run cohesively so that the collective potential of all members, position holders and leadership comes into play and renders a greater and more potent effect on the political map of Pakistan.

its easier said than done .. i respect Haroon sahab but I dont agree to him when he says that Imran Khan knows nothing about politics. Its better Khan is not a traditional politician. But I think Khan must bring clean people on top of his team and also shouldn't trust the same old team to run in the next elections. I am sure there are people within PTI who are not sincere with the party and the Khan himself. Lastly Haroon sahab should also question Pak Army who brought people like Nawaz Sharif into politics. They created a lot of mess and they should also be held accountable along with all political leaders who looted and destroyed Pakistan.

Koi hal nhi iss taklu ka........daor-e-hazir ka arestu samjhta hai apny app ko, sala notanki

he seems more of an army spokesperson to me. wouldnt trust him over Imran Khan




چند بہت ضروری نقات۔۔


اگر تحریکِ انصاف کے ورکر اور ٹِکٹ ہولڈر اپنے ووٹ کا دفاع نہ کر سکے اور پولنگ بوتھ چھوڑ گئے، تو آرمی واقعی زمہ دار نہیں دھاندلی رکوانے کے لیئے۔

عمران خان نے کہا تھا امپایئر ساتھ ملا لو پھر بھی نہیں جیت سکتے۔ اُسکو پتا تھا امپایئر ملے ہوئے ہیں مگر اُسنے کچھ نہ کیا۔

بیرونِ مُلک ووٹرز کو کھڈے لایئن لگا دیا۔ اجازت مِلنے کے باوجود سسٹم کو فورس نہ کیا گیا ورنہ یہ سارے ووٹ بھی پی ٹی آئ کے ہوتے۔

تیس اکتوبر کے بعد کھمبا بھی زیادہ ووٹ لے جاتا مگر روایئتی لوگوں کو ساتھ ملایا گیا اور ساری دنیا کی تنقید سر لے لی گئ۔

عمران نے کہا تھا وہ جیتنے والی ٹیم بنانا جانتا ہے۔ اگر یہی ٹیم رہی، تو ورلڈ کپ کے لیئے کوالیفایئ بھی نہیں کریں گے۔

وہ بیشک بستر میں تھا اور چلنے پھرنے کی حالت میں نہیں تھا، مگر اسی لیئے سہی مشیر اور نیچے کے لوگ لگائے جاتے ہیں تاکہ لیڈر کی غیر موجودگی میں وہ لیڈ کریں۔ الیکشن کے بعد کِس نے لیڈ کیا یہ ہمارے سامنے ہے۔ ووٹر بیچارے خود سڑک پر آ گئے۔



آخری بات۔ مُجھے بہت برا لگتا ہے جب کرائے کے ٹٹو اینکر بلا وجہ تحریکِ انصاف پر تنقید کرتے ہیں۔ اُن کے نام ہیں طلعت حسین جو اپنی انا کے ہاتھوں مارا گیا اور شایئد ہی کوئ اب اُسے دیکھتا ہو۔

شاہزیب خانزادہ جو خانزادہ کم اور ففّے کُٹنی حرامزادہ زیادہ ہے۔

حامِد میر، سلیم سافی، ثنا بُچّا ، کامران خان اور نجم سیٹھی کو تو ویسے ہی ایک طرف رکھ دیں۔ یہ مُلک دشمن جیو کا ٹولا ہے۔

کاشف عبّاسی جو اکثر لوگوں کے جملے توڑ موڑ کر بدلنے کی کوشش کرتا ہے تاکہ تنقید آسانی سے کی جا سکے۔

محمد مالک تو انعام پا گیا۔ اُسکی کرپشن کے قصے بھی آج کل ہر جگہ نظر آرہے ہیں۔ ایف بی آر کی سٹیٹمنٹس دیکھ لیں۔ ارشد شریف جو باقیوں کی طرح ریٹنگ کے لیئے مہمان کی بات کا مطلب بدلنے کی کوشش کرتا ہے۔ فریحہ ادریس جو حکومت کے آگے سوال کرنے کی ہمت نہیں رکھتی، نجم سیٹھی سے حلوہ سوالات کرکے اُسکو کلیں چِٹ دے دیتی ہے اور ساری تنقید تحریکِ انصاف پر رکھتی ہے۔


اِس ساری اینکروں اور انکلی نسلوں کی چولہے میں ڈالیں، مگر ہارون رشید کی تنقید اِن تمام لوگوں کے مُقابلے بجا ہے۔ اور اُسکی وجہ بھی نظر آتی ہے۔ یہ بات صرف ایک دو ٹِکٹس کی نہیں، الیکشن میں سپورٹ ہونے کے باوجود ہارنے کی ہے۔ ہم لوگ اکثر ہار کر بہانے بناتے ہیں۔ مگر ہمارا ہی قصور ہے غلط لوگوں پر بھروسہ بھی کرتے ہیں۔ میں افتخار چودھری کے بارے میں کچھ نہیں جانتا اگر، تو میں کیوں اُسے کلین چِٹ دے دوں؟ عمران خان نے اُسکی ایمانداری کے قصیدے پڑھے، اور اب اُسی کے خلاف ہے۔ کیوں لوگوں پر ایسے بھروسہ کرتا ہے؟ میں لکھ کے دے دوں کل کو شفقت محمور بھی اصلیت دکھاے گا تو عمران اُسے بھی رگڑے گا۔

جب ایک بات صاف نظر آ رہی ہے، تو بقول عمران خان کے میں ہمیشہ لوگوں میں اچھائ ڈھونڈھنے کی کوشش کرتا ہوں۔ او بھائ یہ کوئ پڑھے لکھے انصاف پسند لوگوں کا مُلک نہیں ہے۔ یہاں ایک اچھا بندہ ہے تو ہزار بُرے۔ قصور تمہارا ہے جو لوگوں پر بھروسہ کرتے ہو۔

سپورٹرز سے عرض ہے باقی لوگوں کو جو بھی کہیں، ہارون رشید کی تمام باتیں سو فیصد درست ہیں۔ اپنی غلطیوں کو پہچانیں بجائے آیئنے کو بُرا بھلا کہنے کے۔ ورنہ اگلے الیکشن میں دوبارہ رونا پڑے گا۔ کسی پر بھی اندھا اعتماد اچھی بات نہیں۔ خاص طور پر ایک سیدھے سادھے بندے پر جو مگر مچھوں کو قید کرنے کا خواہشمند ہو۔ چالاکی اور ہوشیاری ضروری ہے
 
Last edited:

MHAMZA

Minister (2k+ posts)
ہارون الرشید کا مسئلہ یہ ہے کہ یہ خود کو اکیسویں صدی کا بقراط سمجھتا ہے، اپنی ہر بات کو حرفِ آخر سمجھتا ہے، جنرل کیانی کو دورِ حاضر کا صلاح الدین ایوبی سمجھتا ہے۔ ضروری نہیں کہ تحریک انصاف کے بارے میں اس کا ہر اعتراض درست ہواور نہ ہی ہر اعتراض غلط ہوسکتا ہے، مگر اپنی بات کو حتمی سمجھنا اس کی سب سے بڑی غلطی ہے۔ اسد عمر کی قابلیت پر اعتراض اٹھانے کی کوئی خاص وجہ نہیں بتا سکا۔ اگر وہ تیس اکتوبر کے بعد تحریک انصاف میں آیا تو کیااس کو تحریک انصاف میں نہیں لینا چاہئے تھا، حالانکہ عمران خان بڑے اصرار کے ساتھ اسد عمر کو تحریک انصاف میں لایا۔ نئی جماعت ہونے کے سبب غلطیاں ہونا فطری بات ہے، مگر اس بات کے جھنڈے لہرا دینا کہ تحریک انصاف ایک خوردبرد پارٹی بن چکی ہے اور ہر کالم میں اسی تاثر کو تقویت دینا کہاں کی دانشمندی ہے۔ ایسے نادان دوستوں سے دانا دشمن ہی بہتر ہیں۔ اس بات میں کوئی شک نہیں کہ ہارون الرشید نے بڑے خلوص کے ساتھ تحریک انصاف کا ساتھ نبھایا ، مگر کیا ضروری ہے کہ آپ کی ہر بات کو پارٹی کی پالیسی بنایا جائے۔ آپ کی خواہش پر چلا جائے تو پھر تو عمران خان کو ہٹا کر صلاح الدین ایوبی یعنی کہ جنرل کیانی کو تحریک انصاف کا سربراہ ہونا چاہئے۔
ہارون الرشید صاحب! آپ کا شکریہ کہ آپ نے باضابطہ طور پر اپنے گراں قیمت مشوروں کی پوٹلی کو ہر گھنٹے کی بنیاد پر عمران خان کو بھیجنے کا سلسلہ ترک کردیا۔ اسی میں تحریک انصاف کی بھلائی ہے۔

Brother Rashidfarooq,
No one has the ultimate wisdom in this world of mortals.
What I have understood from Mr Haroon Rasheed is that collective wisdom of PTI is not at play, due to a number of reasons some of which he pointed out.
Otherwise what explanation can you think off for the big blunders that PTI has made.
80% absence of polling agents at the polling stations and less than trained polling agents was one of the biggest cause of rigging. In Pakistan polling violence was anticipated by many including Sheikh Rasheed, they thought that PTI will not let rigging take place at the stations and many PTI workers would loose their lives as a result. PTI would have won at least 25 more NA seats.
But why was the tabdeli razakars not trained in the art of electioneering. Not all PTI candidates were new to Pakistani politics but still they sat in their houses instead of following the elections in their respective constituencies.
Jhangir Tareen could have easily won had he been present to stop the rigging in his constituency but he was not physically there.
Asad Umar even congratulated the PML-N with out even expressing reservations about countless reports of rigging that had surfaced on the media and in social media at that time.
Waleed Iqbal was declared winner on BBC and later official result was totally opposite, it seemed that they thought that Imran Khan would draw in the voters and they will win, tsunami is not a one man phenomenon it had to be cashed upon on election day, only person on the media who put some resistance was Ibrar Ul Haq, at least he had some allegations, what he should have had was concrete and undeniable proofs that he could not muster even in this age of technology. There was no contingency for any thing.. I am sorry but from what I saw in Lahore in Karachi it was enough to guess what would have happened in the rural areas!!!
Look at the website of PTI and tell me if it is some thing to be proud about, don't compare other parties, compare it with this forum..or many other happening websites..
There is something not right and Imran Khan has to find out what it is and fix it soon before the his supporters run out on him.
 
Last edited:

rashidfarooq

Senator (1k+ posts)


چند بہت ضروری نقات۔۔


اگر تحریکِ انصاف کے ورکر اور ٹِکٹ ہولڈر اپنے ووٹ کا دفاع نہ کر سکے اور پولنگ بوتھ چھوڑ گئے، تو آرمی واقعی زمہ دار نہیں دھاندلی رکوانے کے لیئے۔

عمران خان نے کہا تھا امپایئر ساتھ ملا لو پھر بھی نہیں جیت سکتے۔ اُسکو پتا تھا امپایئر ملے ہوئے ہیں مگر اُسنے کچھ نہ کیا۔

بیرونِ مُلک ووٹرز کو کھڈے لایئن لگا دیا۔ اجازت مِلنے کے باوجود سسٹم کو فورس نہ کیا گیا ورنہ یہ سارے ووٹ بھی پی ٹی آئ کے ہوتے۔

تیس اکتوبر کے بعد کھمبا بھی زیادہ ووٹ لے جاتا مگر روایئتی لوگوں کو ساتھ ملایا گیا اور ساری دنیا کی تنقید سر لے لی گئ۔

عمران نے کہا تھا وہ جیتنے والی ٹیم بنانا جانتا ہے۔ اگر یہی ٹیم رہی، تو ورلڈ کپ کے لیئے کوالیفایئ بھی نہیں کریں گے۔

وہ بیشک بستر میں تھا اور چلنے پھرنے کی حالت میں نہیں تھا، مگر اسی لیئے سہی مشیر اور نیچے کے لوگ لگائے جاتے ہیں تاکہ لیڈر کی غیر موجودگی میں وہ لیڈ کریں۔ الیکشن کے بعد کِس نے لیڈ کیا یہ ہمارے سامنے ہے۔ ووٹر بیچارے خود سڑک پر آ گئے۔



آخری بات۔ مُجھے بہت برا لگتا ہے جب کرائے کے ٹٹو اینکر بلا وجہ تحریکِ انصاف پر تنقید کرتے ہیں۔ اُن کے نام ہیں طلعت حسین جو اپنی انا کے ہاتھوں مارا گیا اور شایئد ہی کوئ اب اُسے دیکھتا ہو۔

شاہزیب خانزادہ جو خانزادہ کم اور ففّے کُٹنی حرامزادہ زیادہ ہے۔

حامِد میر، سلیم سافی، ثنا بُچّا ، کامران خان اور نجم سیٹھی کو تو ویسے ہی ایک طرف رکھ دیں۔ یہ مُلک دشمن جیو کا ٹولا ہے۔

کاشف عبّاسی جو اکثر لوگوں کے جملے توڑ موڑ کر بدلنے کی کوشش کرتا ہے تاکہ تنقید آسانی سے کی جا سکے۔

محمد مالک تو انعام پا گیا۔ اُسکی کرپشن کے قصے بھی آج کل ہر جگہ نظر آرہے ہیں۔ ایف بی آر کی سٹیٹمنٹس دیکھ لیں۔ ارشد شریف جو باقیوں کی طرح ریٹنگ کے لیئے مہمان کی بات کا مطلب بدلنے کی کوشش کرتا ہے۔ فریحہ ادریس جو حکومت کے آگے سوال کرنے کی ہمت نہیں رکھتی، نجم سیٹھی سے حلوہ سوالات کرکے اُسکو کلیں چِٹ دے دیتی ہے اور ساری تنقید تحریکِ انصاف پر رکھتی ہے۔


اِس ساری اینکروں اور انکلی نسلوں کی چولہے میں ڈالیں، مگر ہارون رشید کی تنقید اِن تمام لوگوں کے مُقابلے بجا ہے۔ اور اُسکی وجہ بھی نظر آتی ہے۔ یہ بات صرف ایک دو ٹِکٹس کی نہیں، الیکشن میں سپورٹ ہونے کے باوجود ہارنے کی ہے۔ ہم لوگ اکثر ہار کر بہانے بناتے ہیں۔ مگر ہمارا ہی قصور ہے غلط لوگوں پر بھروسہ بھی کرتے ہیں۔ میں افتخار چودھری کے بارے میں کچھ نہیں جانتا اگر، تو میں کیوں اُسے کلین چِٹ دے دوں؟ عمران خان نے اُسکی ایمانداری کے قصیدے پڑھے، اور اب اُسی کے خلاف ہے۔ کیوں لوگوں پر ایسے بھروسہ کرتا ہے؟ میں لکھ کے دے دوں کل کو شفقت محمور بھی اصلیت دکھاے گا تو عمران اُسے بھی رگڑے گا۔

جب ایک بات صاف نظر آ رہی ہے، تو بقول عمران خان کے میں ہمیشہ لوگوں میں اچھائ ڈھونڈھنے کی کوشش کرتا ہوں۔ او بھائ یہ کوئ پڑھے لکھے انصاف پسند لوگوں کا مُلک نہیں ہے۔ یہاں ایک اچھا بندہ ہے تو ہزار بُرے۔ قصور تمہارا ہے جو لوگوں پر بھروسہ کرتے ہو۔

سپورٹرز سے عرض ہے باقی لوگوں کو جو بھی کہیں، ہارون رشید کی تمام باتیں سو فیصد درست ہیں۔ اپنی غلطیوں کو پہچانیں بجائے آیئنے کو بُرا بھلا کہنے کے۔ ورنہ اگلے الیکشن میں دوبارہ رونا پڑے گا۔ کسی پر بھی اندھا اعتماد اچھی بات نہیں۔ خاص طور پر ایک سیدھے سادھے بندے پر جو مگر مچھوں کو قید کرنے کا خواہشمند ہو۔ چالاکی اور ہوشیاری ضروری ہے

Brother Rashidfarooq,
No one has the ultimate wisdom in this world of mortals.
What I have understood from Mr Haroon Rasheed is that collective wisdom of PTI is not at play, due to a number of reasons some of which he pointed out.
Otherwise what explanation can you think off for the big blunders that PTI has made.
80% absence of polling agents at the polling stations and less than trained polling agents was one of the biggest cause of rigging. In Pakistan polling violence was anticipated by many including Sheikh Rasheed, they thought that PTI will not let rigging take place at the stations and many PTI workers would loose their lives as a result. PTI would have won at least 25 more NA seats.
But why was the tabdeli razakars not trained in the art of electioneering. Not all PTI candidates were new to Pakistani politics but still they sat in their houses instead of following the elections in their respective constituencies.
Jhangir Tareen could have easily won had he been present to stop the rigging in his constituency but he was not physically there.
Asad Umar even congratulated the PML-N with out even expressing reservations about countless reports of rigging that had surfaced on the media and in social media at that time.
Waleed Iqbal was declared winner on BBC and later official result was totally opposite, it seemed that they thought that Imran Khan would draw in the voters and they will win, tsunami is not a one man phenomenon it had to be cashed upon on election day, only person on the media who put some resistance was Ibrar Ul Haq, at least he had some allegations, what he should have had was concrete and undeniable proofs that he could not muster even in this age of technology. There was no contingency for any thing.. I am sorry but from what I saw in Lahore in Karachi it was enough to guess what would have happened in the rural areas!!!
Look at the website of PTI and tell me if it is some thing to be proud about, don't compare other parties, compare it with this forum..or many other happening websites..
There is something not right and Imran Khan has to find out what it is and fix it soon before the his supporters run out on him.


آپ کی بہت سی باتیں بجا ہیں مگر کوئی بھی شخص پرفیکٹ نہیں ہوتا۔ عمران خان سے جو غلطیاں ہوئیں وہ کسی بھی نئی نئی ابھرتی ہوئی جماعت کے لئے متوقع تھیں۔ تحریک انصاف جو صحیح معنوں میں ایک سیاسی جماعت تیس اکتوبر کے جلسے کے بعد بنی اور اس کے بعد لوگوں کا ایک اژدہام تھا جو تحریک انصاف کی طرف امڈپڑا اور اوپر سے الیکشن میں بھی کم وقت تھا۔ تو اتنے تھوڑے عرصے میں پارٹی کو منظم کرنا، پارٹی کے اندر انتخابات کرانا، بیرون ملک پاکستانیوں کے ووٹس کے لئے کوئی جدوجہد کرنا، ٹکٹوں کی درست تقسیم کرنا، یہ سب بہت بڑے مسائل تھے۔ اور ان سب کو ہینڈل کرنا بھی صرف عمران خان نے ہی تھا، کیونکہ پارٹی میں بہت سے ابن الوقت لوگ داخل ہوگئے تھے جو ہمیشہ سے چڑھتے سورج کے پجاری تھے۔ تو ایسی صورت میں غلطیاں ہونا فطری بات تھی۔

جہاں تک بات ہے کہ تیس اکتوبر کے بعد کھمبا بھی تحریک انصاف کے نام پر ووٹ لے سکتا تھا تو شہروں میں تو واقعی عمران خان کے نام پر ووٹ مل جاتے مگر پاکستان کے اکثریتی دیہاتی علاقہ جات میں وہی روایتی صورت حال تھی کہ سیٹ جیتنے کے لئے امیدوار کا سہارا لینا پڑتا ۔اوپر سے یہ عمران خان کے لئے پہلا موقع تھا کہ ملک بھر میں ٹکٹ تقسیم کرنا ۔ اس میں بھی غلطیاں ہوئیں جو کہ عین فطری بات تھی۔

غلطیاں سیکھنے کے لئے ہوتی ہیں اور غلطیوں سے ہی انسان تجربہ حاصل کرتا ہے۔بہت سی باتیں عمران خان کے لئے بالکل پہلا تجربہ تھیں اور امید ہے وہ کہ ان غلطیوں سے سیکھ چکا ہوگا۔ اگر ہارون الرشید یا حسن نثار جیسے کالمسٹ ان غلطیوں کو بنیاد بنا کر عوام کو تحریک انصاف سے متنفر کرنا شروع کردیں تو یہ ان کے خیال میں دانشمندی ہوسکتی ہے مگر حقیقت میں یہ حماقت ہے۔

ہارون الرشید اور حسن نثار جو تحریک انصاف کے پرانے خیر خواہ ہوتے تھے ان کی انا کا مسئلہ ہے، یہ اپنی اپنی اناؤں میں جکڑے ہوئے ہیں۔ اگر یہ صحیح خیر خواہ ہوتے تو آج تنقید کے ساتھ ساتھ عوام کو تحریک انصاف کا روشن چہرہ بھی دکھاتے۔ تحریک انصاف جو اقدامات خیبرپختونخواہ میں کررہی ہے کیا وہ کوئی اور حکومت کررہی ہے۔ جس طرح ایک جنگ زدہ صوبے میں صحت کا انصاف کیمپین چلائی گئی کیا وہ لائقِ تحسین نہیں۔ جس طرح مختلف اوقات میں مختلف ٹی وی اینکرز تک اس بات کی گواہی دے چکے ہیں کہ خیبر پختونخواہ میں پٹواری اور تھانے کا نظام بہت بہتر ہوچکا ہے کہ یہ لائق تعریف کام نہیں۔ اور بہت سے کام تحریک انصاف خیبرپختونخواہ میں کررہی ہے جو بکاؤ میڈیا کبھی بھی عوام کو بتانا پسند نہیں کرتا ،اگر ہارون الرشید اور حسن نثار سچ میں تحریک انصاف کے خیر خواہ ہیں تو یہ سب چیزیں اپنے کالموں کے ذریعے اجاگر کریں۔ تنقید بھی کریں مگر جو اچھا کام ہو اس کی تحسین بھی کریں۔ کم ازکم توازن تو قائم رکھیں۔
 

sherkhan314

Minister (2k+ posts)


آپ کی بہت سی باتیں بجا ہیں مگر کوئی بھی شخص پرفیکٹ نہیں ہوتا۔ عمران خان سے جو غلطیاں ہوئیں وہ کسی بھی نئی نئی ابھرتی ہوئی جماعت کے لئے متوقع تھیں۔ تحریک انصاف جو صحیح معنوں میں ایک سیاسی جماعت تیس اکتوبر کے جلسے کے بعد بنی اور اس کے بعد لوگوں کا ایک اژدہام تھا جو تحریک انصاف کی طرف امڈپڑا اور اوپر سے الیکشن میں بھی کم وقت تھا۔ تو اتنے تھوڑے عرصے میں پارٹی کو منظم کرنا، پارٹی کے اندر انتخابات کرانا، بیرون ملک پاکستانیوں کے ووٹس کے لئے کوئی جدوجہد کرنا، ٹکٹوں کی درست تقسیم کرنا، یہ سب بہت بڑے مسائل تھے۔ اور ان سب کو ہینڈل کرنا بھی صرف عمران خان نے ہی تھا، کیونکہ پارٹی میں بہت سے ابن الوقت لوگ داخل ہوگئے تھے جو ہمیشہ سے چڑھتے سورج کے پجاری تھے۔ تو ایسی صورت میں غلطیاں ہونا فطری بات تھی۔

جہاں تک بات ہے کہ تیس اکتوبر کے بعد کھمبا بھی تحریک انصاف کے نام پر ووٹ لے سکتا تھا تو شہروں میں تو واقعی عمران خان کے نام پر ووٹ مل جاتے مگر پاکستان کے اکثریتی دیہاتی علاقہ جات میں وہی روایتی صورت حال تھی کہ سیٹ جیتنے کے لئے امیدوار کا سہارا لینا پڑتا ۔اوپر سے یہ عمران خان کے لئے پہلا موقع تھا کہ ملک بھر میں ٹکٹ تقسیم کرنا ۔ اس میں بھی غلطیاں ہوئیں جو کہ عین فطری بات تھی۔

غلطیاں سیکھنے کے لئے ہوتی ہیں اور غلطیوں سے ہی انسان تجربہ حاصل کرتا ہے۔بہت سی باتیں عمران خان کے لئے بالکل پہلا تجربہ تھیں اور امید ہے وہ کہ ان غلطیوں سے سیکھ چکا ہوگا۔ اگر ہارون الرشید یا حسن نثار جیسے کالمسٹ ان غلطیوں کو بنیاد بنا کر عوام کو تحریک انصاف سے متنفر کرنا شروع کردیں تو یہ ان کے خیال میں دانشمندی ہوسکتی ہے مگر حقیقت میں یہ حماقت ہے۔

ہارون الرشید اور حسن نثار جو تحریک انصاف کے پرانے خیر خواہ ہوتے تھے ان کی انا کا مسئلہ ہے، یہ اپنی اپنی اناؤں میں جکڑے ہوئے ہیں۔ اگر یہ صحیح خیر خواہ ہوتے تو آج تنقید کے ساتھ ساتھ عوام کو تحریک انصاف کا روشن چہرہ بھی دکھاتے۔ تحریک انصاف جو اقدامات خیبرپختونخواہ میں کررہی ہے کیا وہ کوئی اور حکومت کررہی ہے۔ جس طرح ایک جنگ زدہ صوبے میں صحت کا انصاف کیمپین چلائی گئی کیا وہ لائقِ تحسین نہیں۔ جس طرح مختلف اوقات میں مختلف ٹی وی اینکرز تک اس بات کی گواہی دے چکے ہیں کہ خیبر پختونخواہ میں پٹواری اور تھانے کا نظام بہت بہتر ہوچکا ہے کہ یہ لائق تعریف کام نہیں۔ اور بہت سے کام تحریک انصاف خیبرپختونخواہ میں کررہی ہے جو بکاؤ میڈیا کبھی بھی عوام کو بتانا پسند نہیں کرتا ،اگر ہارون الرشید اور حسن نثار سچ میں تحریک انصاف کے خیر خواہ ہیں تو یہ سب چیزیں اپنے کالموں کے ذریعے اجاگر کریں۔ تنقید بھی کریں مگر جو اچھا کام ہو اس کی تحسین بھی کریں۔ کم ازکم توازن تو قائم رکھیں۔


انٹرویو دوبارہ سنیں۔ ہارون رشید نے کہا اگر یہ اب بھی سدھرنے کا تہیٰ کر لیں تو میں پھر ایڈوایئس شروع کر دوں گا۔ کئ سال تحریک کی وجہ سے ہارون کو اینکروں کی بکواس سننی پڑی۔

ایک انا والا شخص ایسا نہیں ہوتا۔

حسن نثار میں شایئد انا ہے۔ اور غلطی ماننے کی خوبی نہیں ہے۔ مگر ہارون ایک ڈِفرنٹ میٹیریل ہے۔ حالات بہت مشکل ہیں۔ اگر آپ خیر خواہوں اور نوٹنکیوں میں فرق نہ کر سکے تو تحریکِ انصاف وہی روایئتی پارٹی بن جائے گی۔

کے پی کے میں ضرور اچھے کام ہو رہے ہوں گے۔ مگر اُن کو ہای لائیٹ کرنا بھی اُنکا کام ہے۔ اینکروں اور میڈیا سے اُمید رکھی تو اللہ ہی حافظ ہے۔ اپنی کمی اور کمزوری کے لیئے دوسروں کو قصور وار ٹھہرانے کے بجائے خود کو مظبوط کریں۔ یہ نہ ہو کے دیر ہو جائے اور پی ٹی آئ بھی اُسی طرح دوسروں کو بلیم کرے جیسے آج ہم پاکستانی اپنی ہر کمزوری کی وجہ یہود اور امریکہ کو ٹھہراتے ہے۔

آگے آپکی مرضی
 

Adeel

Founder
Staff member
Excellent interview. I believe Haroon Rasheed over Imran Khan!

He has raised some excellent points regarding the party. Imran Khan if you dont listen to this man, your politics is finished. They key words here being "Shaukat khanam aur namal cash ho chukay".

Very strong and truthful words if someone wants to ponder!

haroon rasheed sahab ki main to bohot izzat karta hoon yeh wahid shakhs hain jis ne tv per lahor ke jalse sepehle pti ko saport kia tv per inki nooras ppp mqm anp ne kitnee battamizi ki thi ghar main jhagre hote rehte hain pti main har ek ko bolne ka haqu hai warna ppp nooras mqm anp juf main kia farqu reh jay ga kam se kam inko bore lafzon ka istemal nakaren

Liked the interview. Some valid points. Hope IK will listen...

its easier said than done .. i respect Haroon sahab but I dont agree to him when he says that Imran Khan knows nothing about politics. Its better Khan is not a traditional politician. But I think Khan must bring clean people on top of his team and also shouldn't trust the same old team to run in the next elections. I am sure there are people within PTI who are not sincere with the party and the Khan himself. Lastly Haroon sahab should also question Pak Army who brought people like Nawaz Sharif into politics. They created a lot of mess and they should also be held accountable along with all political leaders who looted and destroyed Pakistan.

very balanced interview!!
You should thank your every guest on the behest of siasat.pk members also!
Also try to get some comments about the Siasat.pk Forum, you can use these comments for your further projection.
My 2.5 cents :P

For me the following observations of Mr Haroon Rasheed are critical for PTI, I hope and pray that PTI makes some timely recommended corrections.
1- Electioneering in Pakistan is never a clean business and every booth and polling station should be maned diligently and any foul play should be highlighted as early and as loudly as possible. With no polling staff present in around 80% of the stations was a gross mistake that has given a big setback to PTI.
2- Sincere and competent leadership at the top is not present in PTI. Had there been a strong central leadership excluding Imran Khan the party would not have suffered as much as it did during the crucial time when Imran Khan was bed ridden.
3- Reorganization of the party is needed especially at the top, power hungry, greedy people no matter how much influential or rich have to be thrown out. Organization has to be run cohesively so that the collective potential of all members, position holders and leadership comes into play and renders a greater and more potent effect on the political map of Pakistan.

​allah hasidon es pervez khatat ko mehfoz rakhe in nooras ko pervez khatak boht khtakta hai

ہارون الرشید کا مسئلہ یہ ہے کہ یہ خود کو اکیسویں صدی کا بقراط سمجھتا ہے، اپنی ہر بات کو حرفِ آخر سمجھتا ہے، جنرل کیانی کو دورِ حاضر کا صلاح الدین ایوبی سمجھتا ہے۔ ضروری نہیں کہ تحریک انصاف کے بارے میں اس کا ہر اعتراض درست ہواور نہ ہی ہر اعتراض غلط ہوسکتا ہے، مگر اپنی بات کو حتمی سمجھنا اس کی سب سے بڑی غلطی ہے۔ اسد عمر کی قابلیت پر اعتراض اٹھانے کی کوئی خاص وجہ نہیں بتا سکا۔ اگر وہ تیس اکتوبر کے بعد تحریک انصاف میں آیا تو کیااس کو تحریک انصاف میں نہیں لینا چاہئے تھا، حالانکہ عمران خان بڑے اصرار کے ساتھ اسد عمر کو تحریک انصاف میں لایا۔ نئی جماعت ہونے کے سبب غلطیاں ہونا فطری بات ہے، مگر اس بات کے جھنڈے لہرا دینا کہ تحریک انصاف ایک خوردبرد پارٹی بن چکی ہے اور ہر کالم میں اسی تاثر کو تقویت دینا کہاں کی دانشمندی ہے۔ ایسے نادان دوستوں سے دانا دشمن ہی بہتر ہیں۔ اس بات میں کوئی شک نہیں کہ ہارون الرشید نے بڑے خلوص کے ساتھ تحریک انصاف کا ساتھ نبھایا ، مگر کیا ضروری ہے کہ آپ کی ہر بات کو پارٹی کی پالیسی بنایا جائے۔ آپ کی خواہش پر چلا جائے تو پھر تو عمران خان کو ہٹا کر صلاح الدین ایوبی یعنی کہ جنرل کیانی کو تحریک انصاف کا سربراہ ہونا چاہئے۔
ہارون الرشید صاحب! آپ کا شکریہ کہ آپ نے باضابطہ طور پر اپنے گراں قیمت مشوروں کی پوٹلی کو ہر گھنٹے کی بنیاد پر عمران خان کو بھیجنے کا سلسلہ ترک کردیا۔ اسی میں تحریک انصاف کی بھلائی ہے۔

I am sure you have never taken a real part in any party politics..once you get the experience of the practical politics you will not give such shallow statements.

اس کی

egotistic

دم پر پاؤں رکھو اور اس کی چاؤں چاؤں بند ہی نہیں ہوتی

میں ہارون رشید صاحب کے پاس تقریبا ایک گھنٹہ بیٹھا رہا۔ اس دوران وہ کسی بھی سوال کا جواب دینے کے لئے رتی بھر نہیں ہچکچائے۔جو مجھے ان سے مل کر انکا اندازہ ہوا ہے وہ یہ کہ وہ کسی کی خوشامد نہیں کرتے، جو ان کے دل میں ہوتا ہے صرف وہی کہتے ہیں چاہے ان سے سارا زمانہ ناراض ہو جائے۔
 

BrotherKantu

Chief Minister (5k+ posts)
میں ہارون رشید صاحب کے پاس تقریبا ایک گھنٹہ بیٹھا رہا۔ اس دوران وہ کسی بھی سوال کا جواب دینے کے لئے رتی بھر نہیں ہچکچائے۔جو مجھے ان سے مل کر انکا اندازہ ہوا ہے وہ یہ کہ وہ کسی کی خوشامد نہیں کرتے، جو ان کے دل میں ہوتا ہے صرف وہی کہتے ہیں چاہے ان سے سارا زمانہ ناراض ہو جائے۔

I believe he was becoming pain is the glass of Imran Khan. He supported Imran khan in bad times, does not means PTI should run the way he likes. Good effort by Siasat pk though. I appreciate that.
 

khalilkhan

MPA (400+ posts)
میں ہارون رشید صاحب کے پاس تقریبا ایک گھنٹہ بیٹھا رہا۔ اس دوران وہ کسی بھی سوال کا جواب دینے کے لئے رتی بھر نہیں ہچکچائے۔جو مجھے ان سے مل کر انکا اندازہ ہوا ہے وہ یہ کہ وہ کسی کی خوشامد نہیں کرتے، جو ان کے دل میں ہوتا ہے صرف وہی کہتے ہیں چاہے ان سے سارا زمانہ ناراض ہو جائے۔
yes haroon sahab mean imran is not pakistani politic0n becouse imran have clean heart ab koi samjhe ke na samjhe he love imran khan he love pti he love change that,s all
 

rashidfarooq

Senator (1k+ posts)
میں ہارون رشید صاحب کے پاس تقریبا ایک گھنٹہ بیٹھا رہا۔ اس دوران وہ کسی بھی سوال کا جواب دینے کے لئے رتی بھر نہیں ہچکچائے۔جو مجھے ان سے مل کر انکا اندازہ ہوا ہے وہ یہ کہ وہ کسی کی خوشامد نہیں کرتے، جو ان کے دل میں ہوتا ہے صرف وہی کہتے ہیں چاہے ان سے سارا زمانہ ناراض ہو جائے۔



یہ جو آپ نے انٹریوز کا سلسلہ شروع کیا ہے، یہ نہایت کارآمد ہے اور سوشل میڈیا میں نئی جہت کو متعارف کروایا ہے۔کسی طرح کسی ن لیگ کے سیاستدان کے ساتھ انٹرویو کا انتظام کریں۔ حمزہ شہباز یا مریم نواز کے ساتھ کرسکیں تو زیادہ بہتر ہوگا۔
 

Adeel

Founder
Staff member
یہ جو آپ نے انٹریوز کا سلسلہ شروع کیا ہے، یہ نہایت کارآمد ہے اور سوشل میڈیا میں نئی جہت کو متعارف کروایا ہے۔کسی طرح کسی ن لیگ کے سیاستدان کے ساتھ انٹرویو کا انتظام کریں۔ حمزہ شہباز یا مریم نواز کے ساتھ کرسکیں تو زیادہ بہتر ہوگا۔

We are trying but no luck so far. We would love to Interview Hamza or Mariam as they represent youth of Pak. Let's see. Fingers crossed!
 

Pakistan1992

Chief Minister (5k+ posts)


آپ کی بہت سی باتیں بجا ہیں مگر کوئی بھی شخص پرفیکٹ نہیں ہوتا۔ عمران خان سے جو غلطیاں ہوئیں وہ کسی بھی نئی نئی ابھرتی ہوئی جماعت کے لئے متوقع تھیں۔ تحریک انصاف جو صحیح معنوں میں ایک سیاسی جماعت تیس اکتوبر کے جلسے کے بعد بنی اور اس کے بعد لوگوں کا ایک اژدہام تھا جو تحریک انصاف کی طرف امڈپڑا اور اوپر سے الیکشن میں بھی کم وقت تھا۔ تو اتنے تھوڑے عرصے میں پارٹی کو منظم کرنا، پارٹی کے اندر انتخابات کرانا، بیرون ملک پاکستانیوں کے ووٹس کے لئے کوئی جدوجہد کرنا، ٹکٹوں کی درست تقسیم کرنا، یہ سب بہت بڑے مسائل تھے۔ اور ان سب کو ہینڈل کرنا بھی صرف عمران خان نے ہی تھا، کیونکہ پارٹی میں بہت سے ابن الوقت لوگ داخل ہوگئے تھے جو ہمیشہ سے چڑھتے سورج کے پجاری تھے۔ تو ایسی صورت میں غلطیاں ہونا فطری بات تھی۔

جہاں تک بات ہے کہ تیس اکتوبر کے بعد کھمبا بھی تحریک انصاف کے نام پر ووٹ لے سکتا تھا تو شہروں میں تو واقعی عمران خان کے نام پر ووٹ مل جاتے مگر پاکستان کے اکثریتی دیہاتی علاقہ جات میں وہی روایتی صورت حال تھی کہ سیٹ جیتنے کے لئے امیدوار کا سہارا لینا پڑتا ۔اوپر سے یہ عمران خان کے لئے پہلا موقع تھا کہ ملک بھر میں ٹکٹ تقسیم کرنا ۔ اس میں بھی غلطیاں ہوئیں جو کہ عین فطری بات تھی۔

غلطیاں سیکھنے کے لئے ہوتی ہیں اور غلطیوں سے ہی انسان تجربہ حاصل کرتا ہے۔بہت سی باتیں عمران خان کے لئے بالکل پہلا تجربہ تھیں اور امید ہے وہ کہ ان غلطیوں سے سیکھ چکا ہوگا۔ اگر ہارون الرشید یا حسن نثار جیسے کالمسٹ ان غلطیوں کو بنیاد بنا کر عوام کو تحریک انصاف سے متنفر کرنا شروع کردیں تو یہ ان کے خیال میں دانشمندی ہوسکتی ہے مگر حقیقت میں یہ حماقت ہے۔

ہارون الرشید اور حسن نثار جو تحریک انصاف کے پرانے خیر خواہ ہوتے تھے ان کی انا کا مسئلہ ہے، یہ اپنی اپنی اناؤں میں جکڑے ہوئے ہیں۔ اگر یہ صحیح خیر خواہ ہوتے تو آج تنقید کے ساتھ ساتھ عوام کو تحریک انصاف کا روشن چہرہ بھی دکھاتے۔ تحریک انصاف جو اقدامات خیبرپختونخواہ میں کررہی ہے کیا وہ کوئی اور حکومت کررہی ہے۔ جس طرح ایک جنگ زدہ صوبے میں صحت کا انصاف کیمپین چلائی گئی کیا وہ لائقِ تحسین نہیں۔ جس طرح مختلف اوقات میں مختلف ٹی وی اینکرز تک اس بات کی گواہی دے چکے ہیں کہ خیبر پختونخواہ میں پٹواری اور تھانے کا نظام بہت بہتر ہوچکا ہے کہ یہ لائق تعریف کام نہیں۔ اور بہت سے کام تحریک انصاف خیبرپختونخواہ میں کررہی ہے جو بکاؤ میڈیا کبھی بھی عوام کو بتانا پسند نہیں کرتا ،اگر ہارون الرشید اور حسن نثار سچ میں تحریک انصاف کے خیر خواہ ہیں تو یہ سب چیزیں اپنے کالموں کے ذریعے اجاگر کریں۔ تنقید بھی کریں مگر جو اچھا کام ہو اس کی تحسین بھی کریں۔ کم ازکم توازن تو قائم رکھیں۔

agar HR mein ego hota tu jub saifull niayzi nay us pay ilzam lagakay is nay paisay lay kay ticket ki sifarish keyi thi, aur IK ki taraf se koi statment nhi ayi, phir bhi woh IK ko rigging ke mamlay mein defend ker raha hai, aur keray gaya. is ko ego kehte hain?
 

Pakistan1992

Chief Minister (5k+ posts)
I believe he was becoming pain is the glass of Imran Khan. He supported Imran khan in bad times, does not means PTI should run the way he likes. Good effort by Siasat pk though. I appreciate that.

acha tum log kush ho jao, celebrate kero ab dekhna if IK doesn't learn from his mistakes what will hapeen in 2018 elec
 

teknikel

Minister (2k+ posts)
@Sherkhan..........kitni umar he batche ap ki?

Believe HR over IK.......u must be joking.

HR helped and supported PTI vey much...i really appricate him for that......

I M from Gujar Khan and i know Professor Rafique Akhtar and know the ticket contrevirsory very well.


Botom line is............HR favour more Professor and army than IK. Thats it
 

Pakistan1992

Chief Minister (5k+ posts)
@Sherkhan..........kitni umar he batche ap ki?

Believe HR over IK.......u must be joking.

HR helped and supported PTI vey much...i really appricate him for that......

I M from Gujar Khan and i know Professor Rafique Akhtar and know the ticket contrevirsory very well.


Botom line is............HR favour more Professor and army than IK. Thats it

but the Gujar Khan ticket thing is true
 

BrotherKantu

Chief Minister (5k+ posts)
acha tum log kush ho jao, celebrate kero ab dekhna if IK doesn't learn from his mistakes what will hapeen in 2018 elec

Imran Khan is athlete and sportsman. Athlete learns from his mistakes,works hard and improve himself. A sportsman does not blame any one else for his defeat and neither cheats. You and every one else need to learn these golden rules. I believe time was not ripe for IK to take government and he knows his weaknesses and deficiencies.

disclamer: I'm with IK as far as he is honest and loyal with Pakistan. The moment I find him corrupt , us ki maan bahn bhi ayse he kroon ga jese dosroon ki.
 

Pakistan1992

Chief Minister (5k+ posts)
Imran Khan is athlete and sportsman. Athlete learns from his mistakes,works hard and improve himself. A sportsman does not blame any one else for his defeat and neither cheats. You and every one else need to learn these golden rules. I believe time was not ripe for IK to take government and he knows his weaknesses and deficiencies.

disclamer: I'm with IK as far as he is honest and loyal with Pakistan. The moment I find him corrupt , us ki maan bahn bhi ayse he kroon ga jese dosroon ki.

he is not corrupt/will be corrupt but he is not leraning from his mistakes he has very corrupt people in his party and not taking any action against them.
 

kwan225

Minister (2k+ posts)
2 over confident Babas.

1. Hasan Nisaar
2. Haroon Rasheed.

In doono ko ulta lita ker panja laganay ki ashad zaroorat hay. aur Panja bi aysa kay poora month qabz rahay.... :biggthumpup:
 
Sponsored Link

Featured Discussion Latest Blogs اردوخبریں