Ex-Captain Misbah-ul-Haq to perform dual role of chief selector & head coach

digitalzygot1

Senator (1k+ posts)
Excellent decision being a pro cricketer myself he's the best man. I hate to read comments from keyboard warriors or people who either just watch or play gale muhala cricket. They have no fucking idea what it means to play at top level. Ridiculous to say misbah isnt the right guy or player cant be good coaches. He raised the bar....had shit team given to team under dodgy circumstances and he took that team to top. Yes at times in ODI cricket he used to be defensive but not his fault that we used to be 30 or 40 for 4. He's selfless highly educated dedicated hardworking true professional and excellent person in general no bs guy. Keeps his head down and gets the job done. Ex players and media used to say loads of rubbish and personal attacks buy he never engaged in mud slinging or war of words. A 'thorough gentleman', thats what the english named him.
 

ramdev

Councller (250+ posts)


لاہور: (روزنامہ دنیا) قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان مصباح الحق ہیڈکوچ کیساتھ ساتھ چیف سلیکٹر کا عہدہ سنبھالنے کیلئے بھی تیار ہیں اور پاکستان کرکٹ بورڈ کی جانب سے اس کا باقاعدہ اعلان جلد کر دیا جائیگا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ معاملات طے کرنے کے بعد ہی پی سی بی کی جانب سے قومی ٹیم کے کنڈیشننگ کیمپ کیلئے مصباح الحق کو نگران مقرر کیا گیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان کرکٹ کے کامیاب ترین کپتان مصباح الحق کو پاکستان کرکٹ بورڈ کی جانب سے متعارف کردہ نئے ماڈل کے تحت چیف سلیکٹر اور ہیڈ کوچ کے دونوں عہدوں کیلئے مضبوط ترین امیدوار قرار دیا جا رہا ہے، اس حوالے سے پی سی بی اور مصباح الحق کے معاملات طے پاگئے ہیں اور جلد اس کا باقاعدہ اعلان بھی متوقع ہے۔ ذرائع کے مطابق مصباح الحق نے کنڈیشننگ کیمپ کیلئے کھلاڑیوں کا انتخاب بھی خود کیا اور اب وہ ہی ان کی کوچنگ بھی کریں گے۔

واضح رہے کہ پی سی بی کے منیجنگ ڈائریکٹر وسیم خان نے گزشہ دنوں میڈیا سے گفتگو میں انکشاف کیا تھا کہ بورڈ سینئر ٹیم کے سلیکشن پینل کیلئے تین ماڈلز پر غور کر رہا ہے جس میں پہلا ماڈل سلیکشن کمیٹی کے چیئرمین اور تین سے چار ارکان پر مشتمل ہے، دوسرے ماڈل کے تحت صرف چیف سلیکٹر کو تعینات کر کے ڈومیسٹک سیزن میں چھ صوبائی ٹیموں کے ہیڈ کوچز کو اضافی ذمے داریاں دی جائیں اور ان سے کہا جائے کہ وہ سلیکٹرز کا کردار ادا کرتے ہوئے باصلاحیت کھلاڑیوں کے نام چیف سلیکٹر کو تجویز کریں۔ تیسرے ماڈل کے تحت صرف ایک ہی شخص کو چیف سلیکٹر اور ہیڈ کوچ کے عہدے دئیے جائیں جسے ڈومیسٹک سیزن کی تمام چھ صوبائی ٹیموں کے ہیڈ کوچ رپورٹ کریں اور باصلاحیت کھلاڑیوں کے نام تجویز کریں۔

ذرائع کے مطابق پی سی بی نے تیسرے ماڈل کو اپنانے کا فیصلہ کیا ہے کیونکہ اس کی بدولت قومی ٹیم کی شکست کی صورت میں کسی ایک فرد کا احتساب کرنا آسان ہو گا۔ اطلاعات کے مطابق مصباح الحق نے معاملات طے ہونے کے بعد ہی کنڈیشننگ کیمپ میں ذمہ داری سنبھالنے کیلئے حامی بھری اور باقاعدہ اعلان کے بعد وہ انہیں ہیڈ کوچ اور چیف سلیکٹر کہہ کر پکارا جاسکے گا۔

ab iska bura haal hoga inzmam ki tarah..... 😂 😂 😂
 

Salazar67

Minister (2k+ posts)
Whatever the case, fitness should not be overlooked for any player for selection. Days of players making it to team who are "talented" should be gone if they cannot complete a fitness and stamina test. I bet half of them will fail because they follow biryani sri paye diets.
No yawning picture of any future captain period. If it happens again shoot him.
 
Sponsored Link

Latest Blogs Featured Discussion