Civil awards announced for 91 resident, non-resident Pakistanis for their services to the country

Kashif Rafiq

Chief Minister (5k+ posts)

اسلام آباد(اے پی پی) صدرمملکت کی جانب سے یوم آزادی کے موقع پر مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے پاکستانی اور غیرملکی شہریوں کو پاکستانی سول ایوارڈ دینے کا اعلان کیا۔ ایوارڈ دینے کی تقریب 23 مارچ 2020ء کو یوم پاکستان کے موقع پر ہوگی جس میں مندرجہ بالا 91 شخصیات کو ایوارڈ دیئے جائیں گے ۔

صدرپاکستان نے پاکستان کیلئے خدمات پر چین کے سانگ ٹائو ، چین کے ژونگ شان، مس زائو بیگ،عرب امارات کے شیخ منصور بن زاید النہیان، امریکہ کی شیلا جیکسن لی کو ہلال پاکستان سے نوازا ۔ پاکستان کے لئے خدمات پر امریکہ کے سینیٹر لنڈسے گراہم کو ہلال قائداعظم ،سابق برطانوی وزیرسعیدہ وارثی، چین کے گینگ ژانگ،قازقستان کے باختیبک شابربیوو کو ستارہ پاکستان دیا گیا ۔ سندھ سے ڈاکٹر عبدالقدوس شیخ کو بہادری میں ہلال شجاعت ، پنجاب کے خالد داد خان کوالیکٹرانکس، میجر (ر) اعظم سلمان خان کو قومی سلامتی کیلئے ،قاری سید صداقت علی (پنجاب) کوعوامی خدمات کیلئے ہلال امتیاز سے نوازا گیا ۔

بہادری میں ملک خادن شہید ، ملک فضل الرحمان شہید (جنوبی وزیرستان)، ملک گل شامد خان عرف میٹورکی شہید (شمالی وزیرستان)، میاں شاہ جہان شہید (کے پی کے )، ملک محمد ایاز شہید (باجوڑ ایجنسی)، ڈاکٹر مظہر الحق کاکا خیل (کے پی کے ) کو ستارہ شجاعت سے نوازا گیا ۔ پاکستان کے لئے خدمات پر سنگاپورکے ڈاکٹر شہزاد نسیم ، اردن کے ڈاکٹر زید احمد المہاسین،پنجاب کے پروفیسر جاوید اقبال ، ڈاکٹر آصف محمود (امریکہ)، نجیب اللہ غوری (امریکہ)، ڈاکٹر پاویل بیم (جمہوریہ چیک)، ڈاکٹر سیلامک کلک (ترکی)، ڈاکٹر بریسلیوگاسو (کروشیا) کو ستارہ امتیاز سے نوازا گیا ،

ضیاء آفتاب (پنجاب) کو انجینئرنگ (الیکٹرانکس)، صفدر معاویہ (پنجاب)، انجینئرنگ (مکینیکل)، ریحان ماجد (سندھ) انجینئرنگ (مکینیکل، ایئر سپیس)، ڈاکٹر رضوان حسین (پنجاب) سائنس (کیمسٹری)، عبدالقیوم (پنجاب) انجینئرنگ (مکیینکل)، محمد الیاس (پنجاب) انجینئرنگ (کان کنی)، پروفیسر ڈاکٹر ارشد سلیم بھٹی (پنجاب) سائنس (فزکس، نینو سائنس اور نینو ٹیکنالوجی)، پروفیسر ڈاکٹر ایوب صابر (کے پی کے ) تعلیم، ڈاکٹر کامران واسفی (میڈیسن)، اسرار احمد (ابن صفی مرحوم)، ادب، مفتی محمد تقی عثمانی (سندھ) ، عالم راضی جعفر حقوی (سندھ) ، محمد جاوید آفریدی (کے پی کے ) ، احمد اللہ ،ریحان حسن، جسٹس (ر) ناصرہ اقبال کو عوامی خدمات پر ستارہ امتیاز سے نوازا گیا ہے ۔

سید فرمان حسین (کے پی) سائنس، کیمسٹری، محمد ہارون (کے پی) انجینئرنگ (کان کنی)، محمد فاروق (پنجاب) سائنس (فزکس)، ڈاکٹر لیاقت علی (پنجاب) نیوکلیئر انجینئرنگ، ڈاکٹر شبانہ وسیم (پنجاب) کیمسٹری سائنس، نثار حسین چغتائی (پنجاب) کیمیکل انجینئرنگ، ڈاکٹر محمد حماد اصغر (پنجاب) فزکس سائنس، جاوید احمد صدیقی (سندھ) الیکٹرانکس سائنس، مرزا رضوان بیگ (پنجاب) فزکس سائنس، ڈاکٹر سارہ قیصر (پنجاب) کیمسٹری سائنس،جاوید احمد (پنجاب) مکینیکل، طاہر محمود حیات سول انجینئرنگ، نسیم اختر (پنجاب) آرٹس، ڈاکٹر ذوالفقار علی قریشی (سندھ) میوزک، فضل عباس جٹ (پنجاب) گائیکی، غلام عباس (پنجاب) موسیقی، وارث بیگ (پنجاب) گائیکی، سائیں ظہور احمد (پنجاب) گائیکی، راحیلہ خانم عرف دیبا خانم (پنجاب) اداکاری، ڈاکٹر مسرت حسن (پنجاب) کوپینٹنگ، استاد خورشید حسین (سندھ) طبلہ نواز، استاد ابو محمد قوال (سندھ) قوالی، غلام محی الدین (پنجاب) کو اداکاری، ساحر علی بگا (گائیکی)، حسن سدپارہ (مرحوم) (گلگت بلتستان) کو کوہ پیمائی، ماسٹر ایوب کو عوامی خدمات کے بدلے تمغہ حسن کارکردگی صدارتی ایوارڈ سے نوازا گیا ۔

لی ریانون (آسٹریلیا)، کیرن زئوٹر (بیلجیئم)، یاسمین قریشی (یو کے )، رحمان چشتی (یوکے ) علی ساحین (ترکی)، محمد بلتا (ترکی)، لارڈ قربان حسین (یوکے )،عبداللہ سعید الغفیلی (یو اے ای) کو پاکستان کیلئے خدمات کے شعبہ میں ستارہ قائد اعظم سے نوازا گیا۔ شاہ گل حیات، محمد زکریا (گلگت بلتستان)،محمد آصف بھٹی، زاہد اللہ، محمد نوید اختر، امجد حسین، رانا طارق محمود چوہان (پنجاب)، صلاح احمد (بلوچستان)، احمد رضا (پنجاب) ، ثاقب حسن (سندھ) اور محمد طاہر (کے پی کے ) کو شجاعت و بہادری کا مظاہرہ کرنے پر تمغہ شجاعت عطا کیا گیا۔خالد محبوب (پنجاب)، پروفیسر ڈاکٹر ابراہیم محمد ابراہیم السید (مصر) کو پاکستان کے لئے خدمات پر اور ڈاکٹر فائزہ امتیاز (پنجاب) کو کیمسٹری (سائنس) کے شعبوں میں کارہائے نمایاں انجام دینے پر تمغہ امتیاز سے نوازا گیا۔


 
Advertisement

sawan1

Senator (1k+ posts)
اس سال وینا ملک نے نیازی اور اس کی قوم یوتھ کی بہت خدمت کی ہے اس کے لیے بھی ایک ایوارڈ ہونا چاہیے
 

greatmeer

Politcal Worker (100+ posts)
فوجیوں کے بعد قطریوں کے بستر رنگین کرنے پر ٹوئیٹر رانی کے لیے بھی کوئی تمغہ بیغیرتی ہونا چاہیے تھا
 

greatmeer

Politcal Worker (100+ posts)
Hai na ek tamgha and it's called "tamgha e 4 mahinay mai bacha-janayee"
اس جاہل عورت نے "جمہوریت" کی خاطر وصول بھی کر لینا ہے اور پٹواریوں نے اس پر بھی فخر کرنا ہے
 
Sponsored Link

Latest Blogs Featured Discussion