کپتان فراڈیا بے نقاب ہو گیا

Shah Shatranj

Chief Minister (5k+ posts)
یہ وہ ہی انسان ہے جو امنیسٹی سکیم کی مخالفت کرتا تھا آج خود فراڈیوں کا کالا دھن سفید کر رہا ہے . یہ شخص خود ایک فراڈیا ہے . اس کی طبعیت میں فلرٹ ہے . پہلے یہ عورتوں کے ساتھ فلرٹ کرتا تھا آج پوری قوم اس کے فلرٹ کا شکار ہو چکی ہے . ہم بھی لوگوں کو سمجھاتے سمجھاتے تھک گۓ تھے کہ یہ ایک جاہل اور فراڈیا انسان ہے یہ اس قوم کو بھگو بھگو کے مارے گا لیکن ہر بندہ ایک چانس چانس کی رٹ پر لگا تھا . اب اسے تو ایک چانس مل گیا لیکن قوم کو دوسرا چانس نہیں ملنے والا. اب کون کہ سکتا ہے کہ میرا کپتان کرپٹ نہیں جو کھربوں کی کرپشن جائز کروانے کی سکیمیں لاۓ کیا وہ خود کرپٹ نہیں . اصل میں تو اس نے اپنی ہمشیرہ کو بچانا ہے جس کی وجہ سے کالا دھندہ سفید سکیم لایا ہے . یہ ہے اس کی اصلیت اور یہ ہے اس کی تبدیلی
آج لوگ اس کے ماضی کا ایک ایک انقلابی کلپ چلا کر اس کی یوتھ کو شرم دلانے کی کوشش کر رہے ہیں لیکن مجال ہے جو کسی میں رتی برابر شرم حیا ہو . پاکستان کیا دنیا کی تاریخ میں ایسا حکمران نہ ہو گا جس کے قول و فعل کا تضاد اس قدر ہو گا . جو کہنا اس کے الٹ کرنا . ابھی تو اس کی حکومت کا پہلا سال ہے اگلا سال اس سے بھی زیادہ خطرناک ہو گا . اس جاہل کو کیا پتا گھر چلانا کیا ہے اس کے بچے اس کی بیوی پالتی ہے . یہ ساری زندگی کھیل کود و عیاشی میں گزرتا رہا . اور ایک عظیم لیڈر کا لبادہ اوڑھ کر لوگوں کو بیوقوف بناتا رہا . اب کوئی اس سے پوچھے اس ملک کا کیا کرنا ہے اسے کیا معلوم ملک چلانا کیا ہے . یہ کہتا ہے حکومت چلانا بہت آسان ہے . ایسے شخص کے لیے بہت آسان ہے جس کے پلے کچھ نہ ہو نہ کوئی عقل نہ کوئی سمجھ
اس کے اپنے معیشت دان وزیر کہتے ہیں آج سے نو مہینے پہلے اگر درست سمت جاتے تو ملکی حالات اتنے خراب نہ ہوتے . لیکن یہ شخص وقت ضایع کرتا رہا اور قوم کو آسمان اور کھجور کے بیچ اٹکا دیا . اس کے پاس کوئی معاشی پلان نہیں تھا اسی وجہ سے ملک کی معیشت تباہ ہو گئی . لاکھوں لوگ بیروزگار ہو گۓ لیکن اس کو کوئی شرم حیا محسوس نہ ہوئی. اس نے سو دن میں دودھ شہد کی نہریں بہانے کے دعوے کیے تھے لیکن سو دنوں میں نا اہلی کے سونامی میں قوم کو غرق کر دیا
اس کالا دھن سفید سکیم کے بعد بھی کوئی شخص اگر اسے کرپٹ نہیں سمجھتا تو اس کی عقل کا ماتم ہی کیا جا سکتا ہے . اس کا مکروہ چہرہ عوام کے سامنے آ چکا ہے . یہ لوگوں کو سبز باغ دکھاتا رہا اور گمراہ کرتا رہا جب حکومت ملی تو عوام پر مہنگائی کے پھاڑ توڑ دئیے . چاہے کسی نے ڈاکہ مارا یا چوری کی یا کرپشن کی کوئی بھی غیر قانونی طریقے سے جائیداد بنائی وہ عمران خان کی لانڈری میں اشنان کر کے پاک ہو سکتا ہے . اس نے ایماندار پاکستانی کے منہ پر تماچہ مارا ہے اور یہ ثابت کر دیا ہے کہ پاکستان کرپٹ لوگوں کی جنت ہے اس کے ساتھ ساتھ معیشت کی بربادی کی ابھی ابتدا ہوئی ہے ابھی آگے عوام کس بھاؤ بکے گی الله ہی جانتا ہے .لیکن عوام کو ائی ایم ایف کے ہاتھ بیچنے والے نے اس کی بہت ہی کم قیمت لگائی ہے . یہ وہ شخص تھا جو خود کشی کے دعوے کرتا تھا آج عوام کو خود کشی پر مجبور کر چکا ہے
 
Advertisement

smartmax1

MPA (400+ posts)
یہ وہ ہی انسان ہے جو امنیسٹی سکیم کی مخالفت کرتا تھا آج خود فراڈیوں کا کالا دھن سفید کر رہا ہے . یہ شخص خود ایک فراڈیا ہے . اس کی طبعیت میں فلرٹ ہے . پہلے یہ عورتوں کے ساتھ فلرٹ کرتا تھا آج پوری قوم اس کے فلرٹ کا شکار ہو چکی ہے . ہم بھی لوگوں کو سمجھاتے سمجھاتے تھک گۓ تھے کہ یہ ایک جاہل اور فراڈیا انسان ہے یہ اس قوم کو بھگو بھگو کے مارے گا لیکن ہر بندہ ایک چانس چانس کی رٹ پر لگا تھا . اب اسے تو ایک چانس مل گیا لیکن قوم کو دوسرا چانس نہیں ملنے والا. اب کون کہ سکتا ہے کہ میرا کپتان کرپٹ نہیں جو کھربوں کی کرپشن جائز کروانے کی سکیمیں لاۓ کیا وہ خود کرپٹ نہیں . اصل میں تو اس نے اپنی ہمشیرہ کو بچانا ہے جس کی وجہ سے کالا دھندہ سفید سکیم لایا ہے . یہ ہے اس کی اصلیت اور یہ ہے اس کی تبدیلی
آج لوگ اس کے ماضی کا ایک ایک انقلابی کلپ چلا کر اس کی یوتھ کو شرم دلانے کی کوشش کر رہے ہیں لیکن مجال ہے جو کسی میں رتی برابر شرم حیا ہو . پاکستان کیا دنیا کی تاریخ میں ایسا حکمران نہ ہو گا جس کے قول و فعل کا تضاد اس قدر ہو گا . جو کہنا اس کے الٹ کرنا . ابھی تو اس کی حکومت کا پہلا سال ہے اگلا سال اس سے بھی زیادہ خطرناک ہو گا . اس جاہل کو کیا پتا گھر چلانا کیا ہے اس کے بچے اس کی بیوی پالتی ہے . یہ ساری زندگی کھیل کود و عیاشی میں گزرتا رہا . اور ایک عظیم لیڈر کا لبادہ اوڑھ کر لوگوں کو بیوقوف بناتا رہا . اب کوئی اس سے پوچھے اس ملک کا کیا کرنا ہے اسے کیا معلوم ملک چلانا کیا ہے . یہ کہتا ہے حکومت چلانا بہت آسان ہے . ایسے شخص کے لیے بہت آسان ہے جس کے پلے کچھ نہ ہو نہ کوئی عقل نہ کوئی سمجھ
اس کے اپنے معیشت دان وزیر کہتے ہیں آج سے نو مہینے پہلے اگر درست سمت جاتے تو ملکی حالات اتنے خراب نہ ہوتے . لیکن یہ شخص وقت ضایع کرتا رہا اور قوم کو آسمان اور کھجور کے بیچ اٹکا دیا . اس کے پاس کوئی معاشی پلان نہیں تھا اسی وجہ سے ملک کی معیشت تباہ ہو گئی . لاکھوں لوگ بیروزگار ہو گۓ لیکن اس کو کوئی شرم حیا محسوس نہ ہوئی. اس نے سو دن میں دودھ شہد کی نہریں بہانے کے دعوے کیے تھے لیکن سو دنوں میں نا اہلی کے سونامی میں قوم کو غرق کر دیا
اس کالا دھن سفید سکیم کے بعد بھی کوئی شخص اگر اسے کرپٹ نہیں سمجھتا تو اس کی عقل کا ماتم ہی کیا جا سکتا ہے . اس کا مکروہ چہرہ عوام کے سامنے آ چکا ہے . یہ لوگوں کو سبز باغ دکھاتا رہا اور گمراہ کرتا رہا جب حکومت ملی تو عوام پر مہنگائی کے پھاڑ توڑ دئیے . چاہے کسی نے ڈاکہ مارا یا چوری کی یا کرپشن کی کوئی بھی غیر قانونی طریقے سے جائیداد بنائی وہ عمران خان کی لانڈری میں اشنان کر کے پاک ہو سکتا ہے . اس نے ایماندار پاکستانی کے منہ پر تماچہ مارا ہے اور یہ ثابت کر دیا ہے کہ پاکستان کرپٹ لوگوں کی جنت ہے اس کے ساتھ ساتھ معیشت کی بربادی کی ابھی ابتدا ہوئی ہے ابھی آگے عوام کس بھاؤ بکے گی الله ہی جانتا ہے .لیکن عوام کو ائی ایم ایف کے ہاتھ بیچنے والے نے اس کی بہت ہی کم قیمت لگائی ہے . یہ وہ شخص تھا جو خود کشی کے دعوے کرتا تھا آج عوام کو خود کشی پر مجبور کر چکا ہے
jahalat tumhari sochon mein hai, aur afsoos, doctors ney bhi jawab dey diya hai, tum patwari la-ilaaj beemari mein ho.
 
Last edited:

MainBaghiHon

Senator (1k+ posts)
یہ وہ ہی انسان ہے جو امنیسٹی سکیم کی مخالفت کرتا تھا آج خود فراڈیوں کا کالا دھن سفید کر رہا ہے . یہ شخص خود ایک فراڈیا ہے . اس کی طبعیت میں فلرٹ ہے . پہلے یہ عورتوں کے ساتھ فلرٹ کرتا تھا آج پوری قوم اس کے فلرٹ کا شکار ہو چکی ہے . ہم بھی لوگوں کو سمجھاتے سمجھاتے تھک گۓ تھے کہ یہ ایک جاہل اور فراڈیا انسان ہے یہ اس قوم کو بھگو بھگو کے مارے گا لیکن ہر بندہ ایک چانس چانس کی رٹ پر لگا تھا . اب اسے تو ایک چانس مل گیا لیکن قوم کو دوسرا چانس نہیں ملنے والا. اب کون کہ سکتا ہے کہ میرا کپتان کرپٹ نہیں جو کھربوں کی کرپشن جائز کروانے کی سکیمیں لاۓ کیا وہ خود کرپٹ نہیں . اصل میں تو اس نے اپنی ہمشیرہ کو بچانا ہے جس کی وجہ سے کالا دھندہ سفید سکیم لایا ہے . یہ ہے اس کی اصلیت اور یہ ہے اس کی تبدیلی
آج لوگ اس کے ماضی کا ایک ایک انقلابی کلپ چلا کر اس کی یوتھ کو شرم دلانے کی کوشش کر رہے ہیں لیکن مجال ہے جو کسی میں رتی برابر شرم حیا ہو . پاکستان کیا دنیا کی تاریخ میں ایسا حکمران نہ ہو گا جس کے قول و فعل کا تضاد اس قدر ہو گا . جو کہنا اس کے الٹ کرنا . ابھی تو اس کی حکومت کا پہلا سال ہے اگلا سال اس سے بھی زیادہ خطرناک ہو گا . اس جاہل کو کیا پتا گھر چلانا کیا ہے اس کے بچے اس کی بیوی پالتی ہے . یہ ساری زندگی کھیل کود و عیاشی میں گزرتا رہا . اور ایک عظیم لیڈر کا لبادہ اوڑھ کر لوگوں کو بیوقوف بناتا رہا . اب کوئی اس سے پوچھے اس ملک کا کیا کرنا ہے اسے کیا معلوم ملک چلانا کیا ہے . یہ کہتا ہے حکومت چلانا بہت آسان ہے . ایسے شخص کے لیے بہت آسان ہے جس کے پلے کچھ نہ ہو نہ کوئی عقل نہ کوئی سمجھ
اس کے اپنے معیشت دان وزیر کہتے ہیں آج سے نو مہینے پہلے اگر درست سمت جاتے تو ملکی حالات اتنے خراب نہ ہوتے . لیکن یہ شخص وقت ضایع کرتا رہا اور قوم کو آسمان اور کھجور کے بیچ اٹکا دیا . اس کے پاس کوئی معاشی پلان نہیں تھا اسی وجہ سے ملک کی معیشت تباہ ہو گئی . لاکھوں لوگ بیروزگار ہو گۓ لیکن اس کو کوئی شرم حیا محسوس نہ ہوئی. اس نے سو دن میں دودھ شہد کی نہریں بہانے کے دعوے کیے تھے لیکن سو دنوں میں نا اہلی کے سونامی میں قوم کو غرق کر دیا
اس کالا دھن سفید سکیم کے بعد بھی کوئی شخص اگر اسے کرپٹ نہیں سمجھتا تو اس کی عقل کا ماتم ہی کیا جا سکتا ہے . اس کا مکروہ چہرہ عوام کے سامنے آ چکا ہے . یہ لوگوں کو سبز باغ دکھاتا رہا اور گمراہ کرتا رہا جب حکومت ملی تو عوام پر مہنگائی کے پھاڑ توڑ دئیے . چاہے کسی نے ڈاکہ مارا یا چوری کی یا کرپشن کی کوئی بھی غیر قانونی طریقے سے جائیداد بنائی وہ عمران خان کی لانڈری میں اشنان کر کے پاک ہو سکتا ہے . اس نے ایماندار پاکستانی کے منہ پر تماچہ مارا ہے اور یہ ثابت کر دیا ہے کہ پاکستان کرپٹ لوگوں کی جنت ہے اس کے ساتھ ساتھ معیشت کی بربادی کی ابھی ابتدا ہوئی ہے ابھی آگے عوام کس بھاؤ بکے گی الله ہی جانتا ہے .لیکن عوام کو ائی ایم ایف کے ہاتھ بیچنے والے نے اس کی بہت ہی کم قیمت لگائی ہے . یہ وہ شخص تھا جو خود کشی کے دعوے کرتا تھا آج عوام کو خود کشی پر مجبور کر چکا ہے
Pehaly Aap Kalma Sunao.
 

aminm62

Politcal Worker (100+ posts)
یہ وہ ہی انسان ہے جو امنیسٹی سکیم کی مخالفت کرتا تھا آج خود فراڈیوں کا کالا دھن سفید کر رہا ہے . یہ شخص خود ایک فراڈیا ہے . اس کی طبعیت میں فلرٹ ہے . پہلے یہ عورتوں کے ساتھ فلرٹ کرتا تھا آج پوری قوم اس کے فلرٹ کا شکار ہو چکی ہے . ہم بھی لوگوں کو سمجھاتے سمجھاتے تھک گۓ تھے کہ یہ ایک جاہل اور فراڈیا انسان ہے یہ اس قوم کو بھگو بھگو کے مارے گا لیکن ہر بندہ ایک چانس چانس کی رٹ پر لگا تھا . اب اسے تو ایک چانس مل گیا لیکن قوم کو دوسرا چانس نہیں ملنے والا. اب کون کہ سکتا ہے کہ میرا کپتان کرپٹ نہیں جو کھربوں کی کرپشن جائز کروانے کی سکیمیں لاۓ کیا وہ خود کرپٹ نہیں . اصل میں تو اس نے اپنی ہمشیرہ کو بچانا ہے جس کی وجہ سے کالا دھندہ سفید سکیم لایا ہے . یہ ہے اس کی اصلیت اور یہ ہے اس کی تبدیلی
آج لوگ اس کے ماضی کا ایک ایک انقلابی کلپ چلا کر اس کی یوتھ کو شرم دلانے کی کوشش کر رہے ہیں لیکن مجال ہے جو کسی میں رتی برابر شرم حیا ہو . پاکستان کیا دنیا کی تاریخ میں ایسا حکمران نہ ہو گا جس کے قول و فعل کا تضاد اس قدر ہو گا . جو کہنا اس کے الٹ کرنا . ابھی تو اس کی حکومت کا پہلا سال ہے اگلا سال اس سے بھی زیادہ خطرناک ہو گا . اس جاہل کو کیا پتا گھر چلانا کیا ہے اس کے بچے اس کی بیوی پالتی ہے . یہ ساری زندگی کھیل کود و عیاشی میں گزرتا رہا . اور ایک عظیم لیڈر کا لبادہ اوڑھ کر لوگوں کو بیوقوف بناتا رہا . اب کوئی اس سے پوچھے اس ملک کا کیا کرنا ہے اسے کیا معلوم ملک چلانا کیا ہے . یہ کہتا ہے حکومت چلانا بہت آسان ہے . ایسے شخص کے لیے بہت آسان ہے جس کے پلے کچھ نہ ہو نہ کوئی عقل نہ کوئی سمجھ
اس کے اپنے معیشت دان وزیر کہتے ہیں آج سے نو مہینے پہلے اگر درست سمت جاتے تو ملکی حالات اتنے خراب نہ ہوتے . لیکن یہ شخص وقت ضایع کرتا رہا اور قوم کو آسمان اور کھجور کے بیچ اٹکا دیا . اس کے پاس کوئی معاشی پلان نہیں تھا اسی وجہ سے ملک کی معیشت تباہ ہو گئی . لاکھوں لوگ بیروزگار ہو گۓ لیکن اس کو کوئی شرم حیا محسوس نہ ہوئی. اس نے سو دن میں دودھ شہد کی نہریں بہانے کے دعوے کیے تھے لیکن سو دنوں میں نا اہلی کے سونامی میں قوم کو غرق کر دیا
اس کالا دھن سفید سکیم کے بعد بھی کوئی شخص اگر اسے کرپٹ نہیں سمجھتا تو اس کی عقل کا ماتم ہی کیا جا سکتا ہے . اس کا مکروہ چہرہ عوام کے سامنے آ چکا ہے . یہ لوگوں کو سبز باغ دکھاتا رہا اور گمراہ کرتا رہا جب حکومت ملی تو عوام پر مہنگائی کے پھاڑ توڑ دئیے . چاہے کسی نے ڈاکہ مارا یا چوری کی یا کرپشن کی کوئی بھی غیر قانونی طریقے سے جائیداد بنائی وہ عمران خان کی لانڈری میں اشنان کر کے پاک ہو سکتا ہے . اس نے ایماندار پاکستانی کے منہ پر تماچہ مارا ہے اور یہ ثابت کر دیا ہے کہ پاکستان کرپٹ لوگوں کی جنت ہے اس کے ساتھ ساتھ معیشت کی بربادی کی ابھی ابتدا ہوئی ہے ابھی آگے عوام کس بھاؤ بکے گی الله ہی جانتا ہے .لیکن عوام کو ائی ایم ایف کے ہاتھ بیچنے والے نے اس کی بہت ہی کم قیمت لگائی ہے . یہ وہ شخص تھا جو خود کشی کے دعوے کرتا تھا آج عوام کو خود کشی پر مجبور کر چکا ہے
نواز شریف کی جمہوریت کی لئے جدوجہد بے مثل ہے۔ ناکردہ گناہوں میں پیشیاں بھگتنا ، پورے خاندان کی تضحیک برداشت کرنا ، بنا کسی جرم کے جیل کاٹنا اور اس کے باوجود اپنے بیانیے پر قائم رہنا بڑی قربانی ہے جیل میں نواز شریف کا گزرا ہر دن اس بیانئے کو مضبوط کر رہا ہے کہ ووٹ کو عزت دو
 

FahadBhatti

Minister (2k+ posts)
This amnesty scheme is NOT for public office holders , their relatives or friends.

Those already facing cases can not benefit from the scheme.


So lets see what the problem is for patwaris and pee pee pee ke dhamalis.

Nawaz teeenda cant make use of the scheme and so cant zardari and cronies.
 

FahadBhatti

Minister (2k+ posts)
We were aware of the financial situation , pakistan have to pay 28 billion dollars in next 3 years and thats all because of the borrowing in the last 10 years and pakistans major assets were kept as collateral by the previous governments.

The government has done very well to reduce current account deficit and trade deficit in such a small period of time. Imran khan came into power and said it will take two three years to bring economy into forward gear and I would believe him rathar than someone with a grudge and a supporter of pee pee pee or nawaz.
 

aminm62

Politcal Worker (100+ posts)
We were aware of the financial situation , pakistan have to pay 28 billion dollars in next 3 years and thats all because of the borrowing in the last 10 years and pakistans major assets were kept as collateral by the previous governments.

The government has done very well to reduce current account deficit and trade deficit in such a small period of time. Imran khan came into power and said it will take two three years to bring economy into forward gear and I would believe him rathar than someone with a grudge and a supporter of pee pee pee or nawaz.
IMF or no IMF - the incompetent rulers were not sure. Finally when it does come, it’s a complete sell out of our sovereignty and rightly REJECTED by stock market. After just 9 months, country is on the brink of economic disaster- Utter shame for the country
 
Sponsored Link

Featured Discussions