پیسے لندن میں ،سیاست پاکستان میں، اکاؤنٹ چپڑاسیوں کے،فوادچوہدری

fawiii1i1i21.jpg


نوازشریف کے پیسے لندن میں سیاست پاکستان میں، اکاؤنٹ چپڑاسیوں کے اور بیٹے انگلستان میں، فواد چودھری

شہراقتدار میں میڈیا سے گفتگو کرتتے ہوئے وفاقی وزیر اطلاعات فوادچودھری نے کہا کہ نواز شریف کے اپنے پیسے لندن میں ہیں اور وہ سیاست پاکستان میں کر رہے ہیں ان کے اکاؤنٹ چپڑاسیوں کے نام پر ہیں اور اپنے بیٹے انگلستان بیٹھے ہیں۔


انہوں نے کہا کہ اللہ کی شان ہے کہ ن لیگ اور فضل الرحمان جیسے لوگ بھی عمران خان کی حکومت کو کرپٹ کہہ رہے ہیں۔ آسمان پر تھوکنا اسے کہتے ہیں۔ نوازشریف کے اپارٹمنٹس لندن میں بیٹی کے نام پر ہیں۔


وفاقی وزیر نے کہا کہ ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کی رپورٹ کہتی ہے پاکستان میں قانون کی حکمرانی میں تنزلی ہوئی ہے، کسی کو نہیں پتا وہ یہ کیوں کہ رہے ہیں، رپورٹ میں مالیاتی کرپشن کا تذکرہ بھی نہیں ہے لیکن پریس ریلیز میں ایسے قصے جوڑے گئے کہ کرپٹ اپوزیشن کی بھی یہ جرات ہوئی کہ حکومت پر تنقید کر سکیں۔


فواد چوہدری کا کہنا تھا ہم کس قدر منظم مافیا کا سامنا کر رہے ہیں کہ ایسے وقت میں جب عالمی بینک نے پاکستان کی 5.37 فیصد سے ترقی کی تصدیق کر رہا ہے، کورونا سے نمٹنے کی حکومتی پالیسیوں کی تعریف عالمی سطح پر ہو رہی ہے۔


جبکہ ایک ایسی بے سروپا رپورٹ آتی ہے جس کا سر ہے نہ پیر، اور ایک پریس ریلیز پر ہیڈ لائنیں لگ جاتی ہیں۔ اپوزیشن کا حکومت پر تنقید کرنا آسمان پر تھوکنے کے مترادف ہے۔
 
Advertisement

Ratan

Chief Minister (5k+ posts)
Pakistan is one of the safest havens for all Fake entities.
We have Renegade Politicians, Corrupt Beaurocrates, Immoral ignorant Media selling Fake News-defending thieves, Unethical religious Mullahs using fatwa for personal gains, a Putrid Judicial system, Rotten policing with dishonest officers & their rank & file, Pilots flying with Fake licenses risking the lives of thousands, Intelectuales sold to the enemies & promoting enemy narratives against its own country.
People occupying the topmost positions without any meritocracy only quality they have is loyalty to the corrupt politicians.
It was not an easy task...it took long 30 years of hard work for Noora, Zardari & Co to make it to this stage.

But fortunately, that is not the end of the story.
A reverse countdown has been initiated already since 2018 & would continue till at least the end of 2028, Inshallah.
Now things are heading in the right direction, with each passing year improvements are being visible. So nothing to worry about ... just chill.
 
Sponsored Link