فیصلے پارلیمنٹ میں ہونے چاہیے جی ایچ کیو میں نہیں. مریم نواز

Moula Jutt

Minister (2k+ posts)
اگر اس سے پہلےفیصلے پارلمنٹ میں ہوتے تو یہ لوہار ابھی تک اپنی فونڈری پر لوہا کوٹ رہےہوتے۔ اس لوہارن کو شالیمار باغ اور مینار پاکستان کے علاوہ۔گھنٹے کا پتہ نہ ھوتا۔ اور نہ ھی پاکستان کو پھدو پٹواریوں جیسی جنس نصیب ہوتی۔
 

sensible

Chief Minister (5k+ posts)
اس کے باپ کو وزیر اعظم بنایا جائے ہمیشہ یہ فیصلہ جی ایچ قیو میں ہونا چاہئے انھیں ڈیل دے کر ملک سے فرار کرایا جآئے یہ بھی ،بھلا ایسے فیصلے ہیں جو پارلیمنٹ کر سکتی ہے ؟
یہ پارلیمنٹ میں ہونے لگے توسوچ لے بی بی کتنی بے عزتی ہو گی
 

ranaji

Prime Minister (20k+ posts)
ایک طواؤف نسل حرامُخور فراڈیا قطریوں کا سپلائر اور بے غیرت پمپٗ کیپٹن صفدر اور گشتی فراری اور ماں کے کالے کرتوت حرام کاریاں بدکاریوں اور شادی کے چار مہینے بعد بچہ نکالنے کے فیصلے بھی شاید پارلیمنٹ میں ہوئے تھے اس گشتی فراری بد بودار عورت نانی چار سو بیس حرام کار بد کار ڈبل شفٹ والی جاہل گامی ماجھی کی
 

Truthstands

Minister (2k+ posts)
آپے تُو گیراج دے وچ فیصلے کرینی ہیں
سانوں پارلیمینٹ دا راہ دسدھیں ہیں

یہ ننگی عورت ہے اور اب یہ سرے راہ دوسروں کے کپڑے اتارنا چاہتی ہے
 

amber123

Minister (2k+ posts)
بڑی دیر کی مہربان آتے آتے۔۔۔۔۔ ویسے یہ بھی ڈرامہ کا حصہ ہے
 

Fawad Javed

Minister (2k+ posts)
Establishment can fix the country within 6 months but wo be chor hain Patwari league ke terah so they will not fix anything sirf joor toor main lagay rehangay aur is mulk to tabah ker kay chorain gay
 
Sponsored Link

Featured Discussion Latest Blogs اردوخبریں