شہبازشریف کی صرف 2ہفتوں کی حکومت میں پُرامید شہریوں کی تعداد بڑھ گئی،مریم

1marymkarkardipost.jpg

مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر بیان جاری کرتے ہوئے کہا کہ ملک کی معاشی سمت سے پر امید پاکستانیوں کی شرح کا جنوری 2022 سے اپریل 2022 کا موازنہ بھی پیش کیا۔

ان کی ٹوئٹ میں دکھایا گیا ہے کہ جنوری 2022 میں 26فیصد حکومتی اقدامات درست سمت میں جب کہ 70 فیصد اقدامات غلط سمت میں تھے۔ جب کہ اپریل 2022 میں 33 فیصد حکومتی اقدامات درست جبکہ 56 فیصد اقدامات کو عوام غلط سمجھتے ہیں۔


دوسری جانب مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ دو ہفتے میں کر کے دکھایا ہے، روئیں، پیٹیں نہیں۔ آٹا چینی گھی کے ستائے عوام کو سستی اشیاء کی فراہمی شروع ہو چکی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم شہباز شریف نے چینی 85 سے 70 روپے، 10 کلو آٹا 550 سے 400 کردیا ہے۔ 4 سال میں جو مہنگائی تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچا دی گئی تھی، اس میں بتدریج واپسی کا آغاز کر دیا گیا ہے۔


انہوں نے کہا کہ وزیراعظم شہباز شریف نے دو ہفتے میں وہ کام کر دکھائے جو عمران صاحب چار سال میں سوچ بھی نہیں پائے

انہوں نے بتایا کہ ہماری حکومت نے یکم مئی سے لوڈ شیڈنگ کے خاتمے کا حکم دیا، دو ہفتے میں بجلی کے 27 میں سے 20 پیداواری یونٹس چلا دئیے ۔ بجلی کے کارخانے چلانے کے لئے تیل اور گیس کی فراہمی کے ریکارڈ مدت میں اقدامات کئے گئے اور ایک سال سے تکنیکی خرابیوں سے بند پڑے کارخانے پھر سے زندہ ہونے لگے ہیں۔

مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ 4 سال سے بند اسلام آباد میٹرو کا منصوبہ چار دن میں چلا دیا، موٹر وے پر میٹرو کا سٹیشن بنانے کا اقدام کیا دیامیر بھاشا ڈیم کی تعمیر کی رفتار بڑھائی۔ بلوچستان کے غریب ترین 5 لاکھ لوگوں کو بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام سے امداد دینے کا اعلان کیا۔

سابقہ حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے ان کا مزید کہنا تھا کہ ’عمران خان صاحب اسے کہتے ہیں عملی خدمت، پاکستان اسپیڈ کے ساتھ۔
 
Advertisement

miafridi

Prime Minister (20k+ posts)
1marymkarkardipost.jpg

مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر بیان جاری کرتے ہوئے کہا کہ ملک کی معاشی سمت سے پر امید پاکستانیوں کی شرح کا جنوری 2022 سے اپریل 2022 کا موازنہ بھی پیش کیا۔

ان کی ٹوئٹ میں دکھایا گیا ہے کہ جنوری 2022 میں 26فیصد حکومتی اقدامات درست سمت میں جب کہ 70 فیصد اقدامات غلط سمت میں تھے۔ جب کہ اپریل 2022 میں 33 فیصد حکومتی اقدامات درست جبکہ 56 فیصد اقدامات کو عوام غلط سمجھتے ہیں۔


دوسری جانب مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ دو ہفتے میں کر کے دکھایا ہے، روئیں، پیٹیں نہیں۔ آٹا چینی گھی کے ستائے عوام کو سستی اشیاء کی فراہمی شروع ہو چکی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم شہباز شریف نے چینی 85 سے 70 روپے، 10 کلو آٹا 550 سے 400 کردیا ہے۔ 4 سال میں جو مہنگائی تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچا دی گئی تھی، اس میں بتدریج واپسی کا آغاز کر دیا گیا ہے۔


انہوں نے کہا کہ وزیراعظم شہباز شریف نے دو ہفتے میں وہ کام کر دکھائے جو عمران صاحب چار سال میں سوچ بھی نہیں پائے

انہوں نے بتایا کہ ہماری حکومت نے یکم مئی سے لوڈ شیڈنگ کے خاتمے کا حکم دیا، دو ہفتے میں بجلی کے 27 میں سے 20 پیداواری یونٹس چلا دئیے ۔ بجلی کے کارخانے چلانے کے لئے تیل اور گیس کی فراہمی کے ریکارڈ مدت میں اقدامات کئے گئے اور ایک سال سے تکنیکی خرابیوں سے بند پڑے کارخانے پھر سے زندہ ہونے لگے ہیں۔

مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ 4 سال سے بند اسلام آباد میٹرو کا منصوبہ چار دن میں چلا دیا، موٹر وے پر میٹرو کا سٹیشن بنانے کا اقدام کیا دیامیر بھاشا ڈیم کی تعمیر کی رفتار بڑھائی۔ بلوچستان کے غریب ترین 5 لاکھ لوگوں کو بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام سے امداد دینے کا اعلان کیا۔

سابقہ حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے ان کا مزید کہنا تھا کہ ’عمران خان صاحب اسے کہتے ہیں عملی خدمت، پاکستان اسپیڈ کے ساتھ۔

An unknown survey presented by Calibri jhooti. You be the judge of it's authenticity.

امپورٹڈ_حکومت_نامنظور
 
Sponsored Link