خیبرپختونخوا کا انصاف فوڈ کارڈ سے لاکھوں گھرانوں کو مفت راشن

insaaf-food-card-imran.jpg


پشاور کم آمدنی والے خاندانوں کیلئےخوشخبری، خیبرپختونخوا حکومت نے کم آمدنی والے گھرانوں کو مفت راشن کی فراہمی کے لئے فوڈ کارڈ اسکیم کا اجراء کر دیا۔

25 ہزار سے کم ماہانہ آمدنی والے گھرانوں کو اشیائے خورونوش کی خریداری کیلئے نقد رقم دی جائیگی،انصاف فوڈ کارڈ اسکیم کے ذریعے مستحق خاندانوں کو ماہانہ 2100 روپے دئیے جائیں گے۔

اسکیم سے 50 لاکھ افراد اور 10 لاکھ خاندان مستفید ہوں گے،اس پراجیکٹ پر سالانہ26 ارب لاگت آئیگی،اسکیم پر عملدرآمد کیلئے محکمہ خوراک اور بینک آف خیبر کے درمیان مفاہمت کی یادداشت پر دستخط ہوئے۔

وزیراعلیٰ محمود خان نے کہا کہ فوڈ کارڈ اسکیم پی ٹی آئی حکومت کا ایک اور تاریخی اور غریب پرور منصوبہ ہے، صوبائی حکومت نے مستحق لوگوں کو سپورٹ فراہم کرنے کا ایک اور وعدہ پورا کیا۔

اسکیم کے تحت ابتدائی طور پر کم آمدنی والے 10 لاکھ گھرانوں کو مدد فراہم کی جائے گی، اگلے مرحلے میں مزید خاندانوں کو اسکیم میں شامل کیا جائے گا جبکہ یکم جولائی سے اسکیم کا باقاعدہ آغاز کیا جائے گا۔

دوسری جانب خیبر پختونخوا حکومت صحت کارڈ پروگرام کو مستقل چلانے کے لیے قانون میں ترامیم کی منظوری دے چکی ہے،وزیر صحت تیمور سلیم جھگڑا نے صحت کارڈ پروگرام کو مستقل چلانے کے لیے قانون میں ترامیم کی منظوری دے دی۔

وزیرصحت نے کہا کہ صحت کارڈ پروگرام کو مستقل چلانے کے لیے قانون صوبائی کابینہ اجلاس میں پاس کیا گیا،قانون سازی کے تحت صحت کارڈ پروگرام کو کوئی ختم نہیں کر سکے گا، رمضان المبارک کے بعد یہ قانون اسمبلی سے بھی پاس کیا جائے گی۔

ان کا کہنا تھا کہ صوبے میں صحت کارڈ پروگرام کا تحفظ دیا جائےگا، صحت کارڈ سیاسی پروگرام نہیں، نہ اسےعمران خان کے نام سے منسوب کیا گیا۔
 
Advertisement

Eyeaan

Chief Minister (5k+ posts)
کے پی حکومت سے درخواست ہے کہ احساس کا سکالر شپ پروگرام بھی صوبائی سطح پر شروع کریں ۔وہ ضروری ٹارگٹیڈ سبسیڈی بھی تھی اور مستقبل پر اہم سرمایہ کاری بھی۔
 
Sponsored Link